کانگریس نے ایمرجنسی نافذ کرکے جمہوریت کو کچل دیا تھا: مودی

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے ایمرجنسی کے دوران ہندوستانی جمہوریت کی حفاظت کرنے والے ان سبھی ہم وطنوں کو یاد کرتے ہوئے جمعہ کوکہا کہ کانگریس نے ایمرجنسی نافذ کرکے ہندستانی جمہوریت کو کچل دیا تھا۔  مودی نے ٹویٹ کرتے ہوئے اپنے پیغام میں کہا ”کانگریس نے ہماری جمہوریت کو کچل دیا تھا۔ ہم اب تمام عظیم ہستیوں کو یاد کرتے ہیں جنہوں نے ایمرجنسی کی مخالفت کی اور ہندوستانی جمہوریت کا تحفظ کیا۔ ایمرجنسی کے تاریک ایام کو کبھی بھی فراموش نہیں کیا جاسکتا۔ سال 1975 سے 1977 تک کا عرصہ اس بات کا گواہ ہے کہ کس طرح سے اداروں کو مسمار کیا گیا“۔ ایک اور ٹویٹ میں انہوں نے کہا ” آئیے ہم ہندوستان کی جمہوریت کے جذبے کو مستحکم بنانے کے لئے ہر ممکن کوشش کرنے کا عزم کریں اور ہمارے آئین میں مضمر وصف کو اپنی زندگی میں شامل کریں“۔  

ملک میں وبائی صورتحال میں مزید بہتری، 51667نئے کیس،1329اموات

سرینگر//مہلک مورونا وائرس کے کیسوں میں مسلسل کمی دیکھنے کو مل رہی ہے۔جمعہ کومرکزی وزارت صحت کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ملک میں گذشتہ24گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 51667 نئے معاملے سامنے آئے ہیں جبکہ 1329کورونا مریضوں کی موت واقع ہوئی ہے۔  وزارت صحت کے مطابق ملک میں کورونا متاثرین کی کل تعداد 30134445 ہو گئی ہے جبکہ کورونا سے ہلاک ہونے والوں کی مجموعی تعداد 393310 ہوگئی ہے۔ اس دوران ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں 64527 کورونا مریض صحتیاب ہوگئے جبکہ اس وقت کورونا وائرس کے612868 معاملے سرگرم ہیں۔

کورونادورمیں پختہ یقین اورحوصلہ افزائی کے ذریعہ اصلاحات کی گئیں:مودی

نئی دہلی// وزیراعظم نریندرمودی نے کہا کورونا دورمیں مرکزاورریاستوں نے تخلیقی شراکت کی بنیادپر اصلاحات کے ذریعہ کورونا وبا کے چیلنجز سے نمٹنے کی کوشش کی۔مسٹرمودی منگل کو اپنا ایک بلاگ پوسٹ لنکڈن پلیٹ فارم پر شیئر کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ اپنی اس پوسٹ میں انہوں نے کووڈ دورمیں اصلاحات، مرکز-ریاست کی شراکت داری، تخلیقی پالیسی-تعمیر کے بارے میں تفصیل سے ذکر کیاہے ۔زیراعظم نے نے پوسٹ میں لکھا ہے کہ مرکز اورریاستوں نے کوآپریٹو فیڈرلزم کی ایک بہتر مثال قائم کرکے تخلیقی شراکت نبھاتے ہوئے کورونا بحران سے پیداچیلنجز کاسامنا کیا۔ انہوں نے کہا کہ خودکفیل ہندستان پیکج کے تحت ریاستوں کو اضافی قرض لینے کی اجازت دی گئی اورریاستوں نے اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایک لاکھ کروڑ روپے سے زیادہ کا قرض لیا، جس سے وسائل میں نسبتا اضافہ ہوا۔انہوں نے کہا ہے کہ کورونا وبا دنیا بھرکے لئے نیا چیلنج لے کرآئی اورہندستان بھی

حکومت کانگریس کے مشوروں کو سنجیدگی سے لے: سونیا

سرینگر//کانگریس کی جانب سے کووڈ-19 پر مبنی ایک وہائٹ پیپر جاری کیا گیا جس میں کورونا انفیکشن سے پیدا موجودہ حالات اور آئندہ کے تعلق سے پیش خدشات کا تذکرہ کرتے ہوئے مرکز کی مودی حکومت کو کئی اہم مشورے دیئے گئے ہیں۔ تقریباً 150 صفحات پر مبنی اس وہائٹ پیپر میں کانگریس صدر سونیا گاندھی نے بطور دیباچہ کچھ اہم باتیں لکھی ہیں ۔ایک خصوصی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے منگل کو راہل گاندھی نے کہا کہ ان کی پارٹی نے یہ وائٹ پیپر تفصیل سے تیار کیا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ اس وائٹ پیپر کے ذریعہ ان کا مقصد حکومت کی طرف انگلی اٹھانا نہیں ہے ، بلکہ حکومت نے پہلی اور دوسری لہر کو شکست دینے کے دوران جس طرح کی غلطیاں کی ہیں، ممکنہ تیسری لہر میں ان غلطیوں کو سدھارنے اور صحیح اقدامات کرنے کی تجویزیں پیش کی گئیں ہیں۔انہوں نے بتایاکہ "ہم جانتے ہیں کہ ان غلطیوں کو آنے والے وقتوں میں بھی سدھارنا پڑے گا۔ پورا

زراعت شعبے میں تعاون

نئی دہلی// وزیرزراعت نریندر سنگھ تومر اور فجی کے زراعت، آبی گزرگاہ اور ماحولیات کے وزیر ڈاکٹر مہندر ریڈی کے مابین زراعت اور متعلقہ شعبوں میں تعاون کے لئے منگل کو ایک مفاہمت نامہ (ایم او یو) پر دستخط کئے گئے ۔اس موقع پر مسٹر تومر نے کہاکہ وسودیو کٹمبکم کے جذبہ سے ہندستان دنیا کی ہمیشہ مدد کرتا رہا ہے اور وزیراعظم نریندر مودی نے کو رونا وبا کے دور میں اسی جذبہ سے تمام ممالک کو مدد پہنچائی ہے ۔ مسٹر تومر نے کہاکہ وزیراعظم نے شروع سے زراعت اور گاووں کی ترقی پر فوکس کیا ہے ۔ دیہی اور زراعت شعبہ خوشحال ہوگا تو ملک خوشحال ہوگا اور ایسا ہونے پر دنیا کی مدد کرنے کا اپنا کردار ہم مزید اچھی طرح سے ادا کرسکیں گے ۔ اسی سمت میں ایک لاکھ کروڑ روپے کی زراعتی انفراسٹرکچر فنڈ، دس ہزار کسان پیداوار گروپ (ایف پی او) کی اسکیم جیسے کئی اقدامات ملک میں کئے گئے ہیں۔   

بھارت میں 54,069 نئے کیس،1321ہلاکتیں

نئی دہلی //ملک میں کورونا وائرس کے کیسز میں نشیب و فراز کے درمیان اس وبا کو شکست دینے والے مریضوں کی تعداد میں مسلسل اضافے کی وجہ سے شفایابی کی شرح 96.61 فیصد ہوگئی ہے ، جبکہ ایکٹیو کیسز کی شرح میں گراوٹ بڑھ کر 2.08 فیصد ہوگئی ہے دریں اثناء بدھ کے روز 64 لاکھ 89 ہزار 599 افراد کو کورونا کے ٹیکے لگائے گئے۔ ملک میں اب تک 30 کروڑ 16 لاکھ 26 ہزار 28 افراد کو کورونا کے ٹیکے لگائے جا چکے ہیں۔ جمعرات کی صبح مرکزی وزارت صحت کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 54،069 نئے کیسز کی رپورٹ کے ساتھ ہی ملک میں کورونا متاثرین کی تعداد بڑھ کر تین کروڑ 82 ہزار 778 ہوگئی ہے۔ اسی عرصہ کے دوران 68 ہزار 885 مریضوں کی شفایابی کے بعد اس وبا کو شکست دینے والے افراد کی مجموعی تعداد دو کروڑ 90 لاکھ 63 ہزار 740 ہوگئی ہے۔ ایکٹیو کیسز 16،137 سے گھٹ کر 6 لاکھ 27 ہزار 57

تازہ ترین