تازہ ترین

پناہ گزینوں کا عالمی دن

 نئی دہلی // یو نیورسٹی آندھرا پردیش میں یونیورسٹی کے شعبہ قانون نے ٹا ٹا انسٹی چیوٹ آف سوشل سائنسز ممبئی اور بھارت میں اقوام متحدہ کے ہائی کمشنرکے اشتراک سے 21جون کو پناہ گزین کے عالمی دن کے موقعہ پر ایک آن لائین تقریب منعقد کی ۔ماہرین تعلیم ، سول سوسائٹی ، ، مہاجر تنظیموں اور طلباء نے شرکت کی۔جس میں مقررین نے کہا کہ طویل تنازعات اور انسانی حقوق کی پامالیوں کی وجہ سے عالمی سطح پر پناہ گزینوں کا بحران عروج پر ہے جس کی وجہ سے بے پناہ نقل مکانی اور جبری طور پر نقل مکانی کے منظرنامے جنم لیتے ہیں۔دن بھر کے قومی ویبینار نے مہاجرین سے متعلق عالمی معاہدے کی اہمیت پر غور کیا۔ڈاکٹر اروند تیواری ڈین اسکول آف لاء  TISS  ممبئی نے صدارتی خطبہ دیا اور یونیورسٹی آف شمالی بنگال کے سابق وائس چانسلر پروفیسر سمیر کمار داس نے کلیدی تقریر کی۔ ٹی آئی ایس ایس ممبئی میں سینٹر فار اسٹیٹلیس

کورونادورمیں پختہ یقین اورحوصلہ افزائی کے ذریعہ اصلاحات کی گئیں:مودی

نئی دہلی// وزیراعظم نریندرمودی نے کہا کورونا دورمیں مرکزاورریاستوں نے تخلیقی شراکت کی بنیادپر اصلاحات کے ذریعہ کورونا وبا کے چیلنجز سے نمٹنے کی کوشش کی۔مسٹرمودی منگل کو اپنا ایک بلاگ پوسٹ لنکڈن پلیٹ فارم پر شیئر کرتے ہوئے یہ بات کہی۔ اپنی اس پوسٹ میں انہوں نے کووڈ دورمیں اصلاحات، مرکز-ریاست کی شراکت داری، تخلیقی پالیسی-تعمیر کے بارے میں تفصیل سے ذکر کیاہے ۔زیراعظم نے نے پوسٹ میں لکھا ہے کہ مرکز اورریاستوں نے کوآپریٹو فیڈرلزم کی ایک بہتر مثال قائم کرکے تخلیقی شراکت نبھاتے ہوئے کورونا بحران سے پیداچیلنجز کاسامنا کیا۔ انہوں نے کہا کہ خودکفیل ہندستان پیکج کے تحت ریاستوں کو اضافی قرض لینے کی اجازت دی گئی اورریاستوں نے اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ایک لاکھ کروڑ روپے سے زیادہ کا قرض لیا، جس سے وسائل میں نسبتا اضافہ ہوا۔انہوں نے کہا ہے کہ کورونا وبا دنیا بھرکے لئے نیا چیلنج لے کرآئی اورہندستان بھی

حکومت کانگریس کے مشوروں کو سنجیدگی سے لے: سونیا

سرینگر//کانگریس کی جانب سے کووڈ-19 پر مبنی ایک وہائٹ پیپر جاری کیا گیا جس میں کورونا انفیکشن سے پیدا موجودہ حالات اور آئندہ کے تعلق سے پیش خدشات کا تذکرہ کرتے ہوئے مرکز کی مودی حکومت کو کئی اہم مشورے دیئے گئے ہیں۔ تقریباً 150 صفحات پر مبنی اس وہائٹ پیپر میں کانگریس صدر سونیا گاندھی نے بطور دیباچہ کچھ اہم باتیں لکھی ہیں ۔ایک خصوصی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے منگل کو راہل گاندھی نے کہا کہ ان کی پارٹی نے یہ وائٹ پیپر تفصیل سے تیار کیا ہے ۔ ان کا کہنا ہے کہ اس وائٹ پیپر کے ذریعہ ان کا مقصد حکومت کی طرف انگلی اٹھانا نہیں ہے ، بلکہ حکومت نے پہلی اور دوسری لہر کو شکست دینے کے دوران جس طرح کی غلطیاں کی ہیں، ممکنہ تیسری لہر میں ان غلطیوں کو سدھارنے اور صحیح اقدامات کرنے کی تجویزیں پیش کی گئیں ہیں۔انہوں نے بتایاکہ "ہم جانتے ہیں کہ ان غلطیوں کو آنے والے وقتوں میں بھی سدھارنا پڑے گا۔ پورا

زراعت شعبے میں تعاون

نئی دہلی// وزیرزراعت نریندر سنگھ تومر اور فجی کے زراعت، آبی گزرگاہ اور ماحولیات کے وزیر ڈاکٹر مہندر ریڈی کے مابین زراعت اور متعلقہ شعبوں میں تعاون کے لئے منگل کو ایک مفاہمت نامہ (ایم او یو) پر دستخط کئے گئے ۔اس موقع پر مسٹر تومر نے کہاکہ وسودیو کٹمبکم کے جذبہ سے ہندستان دنیا کی ہمیشہ مدد کرتا رہا ہے اور وزیراعظم نریندر مودی نے کو رونا وبا کے دور میں اسی جذبہ سے تمام ممالک کو مدد پہنچائی ہے ۔ مسٹر تومر نے کہاکہ وزیراعظم نے شروع سے زراعت اور گاووں کی ترقی پر فوکس کیا ہے ۔ دیہی اور زراعت شعبہ خوشحال ہوگا تو ملک خوشحال ہوگا اور ایسا ہونے پر دنیا کی مدد کرنے کا اپنا کردار ہم مزید اچھی طرح سے ادا کرسکیں گے ۔ اسی سمت میں ایک لاکھ کروڑ روپے کی زراعتی انفراسٹرکچر فنڈ، دس ہزار کسان پیداوار گروپ (ایف پی او) کی اسکیم جیسے کئی اقدامات ملک میں کئے گئے ہیں۔   

۔86لاکھ سے زیادہ ٹیکے لگانے کا عالمی ریکارڈ قائم

 نئی دہلی /یو این آئی/ ملک میں کورونا وائرس (کووڈ19) کے معاملات میں کمی کے درمیان ، پچھلے 24 گھنٹوں کے دوران انفیکشن کے 42 ہزار،640 نئے کیس رپورٹ ہوئے اور یہ تعداد گذشتہ 91 دنوں میں سب سے کم ہے۔ دریں اثناء پیر کو 86 لاکھ 16 ہزار 373 افراد کو کورونا سے بچاؤ کے ٹیکے لگائے گئے، جو ایک دن میں عالمی ریکارڈ ہے۔ملک میں اب تک 28 کروڑ 87 لاکھ 66 ہزار 201 افراد کو ٹیکے لگائے جاچکے ہیں۔مرکزی وزارت صحت کی جانب سے منگل کی صبح جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ، گذشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا کے 42،640 نئے کیسز کی آمد کے ساتھ ہی ، متاثرہ افراد کی تعداد بڑھ کر دو کروڑ 99 لاکھ 77 ہزار 861 ہوگئی ہے۔ اس دوران ، 81 ہزار 839 مریضوں کی صحت یابی کے بعد ، اس وبا کو شکست دینے والے افراد کی کل تعداد دو کروڑ 89 لاکھ 26 ہزار 038 ہوگئی ہے۔ سرگرم معاملات 40 ہزار 366 سے کم ہوکر 6 لاکھ 62 ہزار 521 رہ گئے ہیں۔ اسی

وبائی صورتحال میں مسلسل سدھار، 42640 نئے کیس،1167 اموات

سرینگر//مہلک وبا کورونا وائرس کے یومیہ کیسوں میں مسلسل کمی دیکھنے کو مل رہی ہے۔ منگل کووزارت صحت کے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ملک میںگذشتہ 24گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے 42640 نئے معاملے سامنے آئے ہیں، جبکہ اسی عرصہ کے دوران 1167 افراد کی موقع ہوگئی ۔ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ کئی روز سے کورونا کیسز میں مسلسل کمی آرہی ہے اور حالیہ کچھ روز سے اموات کی تعداد میں بھی کمی آئی ہے۔ ابھی تک ملک میں 29977861 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں جبکہ کورونا سے ہلاک ہونے والوں کی کل تعداد 389302 ہو گئی ہے۔ ملک میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں صحتیاب ہونے والوں کی تعداد 81839 ہے۔  

ملک میں88روز کے بعد سب سے کم کیس درج

 نئی دہلی/یو این آئی/ ملک میں جان لیوا اور ہلاکت خیز عالمی وباء کورونا وائرس (کووڈ 19) کے کیسز میں کمی کے درمیان گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران موذی وائرس کے 53 ہزار،256 نئے کیسز رپورٹ ہوئے اور یہ تعداد گذشتہ 88 دنوں میں سب سے کم ہے۔ دریں اثنا ء اتوار کو 30 لاکھ 39 ہزار 996 افراد کو کورونا سے بچاؤ کے ٹیکے لگائے گئے۔ ملک میں اب تک 28 کروڑ 36 ہزار 898 افراد کو کورونا کے ٹیکے لگائے جاچکے ہیں۔مرکزی وزارت صحت کی جانب سے پیر کی صبح جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق ملک میں کورونا متاثرین کی مجموعی تعداد 2 کروڑ،99 لاکھ،35 ہزار،221 ہوگئی ہے۔ اس دوران 78 ہزار 190 مریضوں کی شفایابی سے اس جان لیوا وبا کو شکست دینے والے مریضوں کی کل تعداد دو کروڑ 88 لاکھ 44 ہزار 199 ہوگئی ہے۔ ایکٹیو کیسز 26 ہزار 356 سے گھٹ کر سات لاکھ دو ہزار 887 رہ گئے ہیں۔ اس عرصہ میں 1422 مریضوں کی ہلاکت کی وجہ سے اموات کی تعداد

کورونا بحران کے دور میںیوگا اُمید کی کرن : مودی

 نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے کل کہا کہ کورونا وبا کے خلاف جنگ میں یوگا پوری دنیا کے لئے امید کی کرن بنا ہوا ہے اور ‘یوگا سے تعاون تک’ کا منتر ایک نئے مستقبل کو راہ دکھائے گا ، انسانیت کو مضبوط بنائے گا ۔مسٹر مودی نے پیر کے روز ساتویں عالمی یوگا ڈے کے موقع پر اپنے خطاب میں کہا کہ آج جب پوری دنیا کورونا سے لڑ رہی ہے تو یوگا امید کی ایک کرن بنا ہوا ہے ۔ بھلے ہی دو سالوں سے دنیا بھر کے ممالک اور ہندوستان میں کوئی بڑی عوامی تقاریب کا انعقاد نہیں ہوا ہو لیکن یوگا ڈے کے تیئں جوش و خروش ذرا بھی کم نہیں ہوا ہے ۔ بھگود گیتا کا حوالہ دیتے ہوئے مسٹر مودی نے کہاکہ گیتا میں کہا گیا ہے کہ غموں سے چھٹکارا اور آزادی کو ہی یوگا کہتے ہیں۔ ہمیں سب کو ساتھ لے کر چلنے والی انسانیت کے اس یوگا سفر کو ایسے ہی آگے بڑھانا ہے چاہے کوئی بھی جگہ ہو،کوئی بھی صورتحال ہو ، ہر عمر کے لئے ہر ایک

زہریلا دانہ کھانے سے42 موروں کی موت

مورینا// مدھیہ پردیش کے ضلع مورینا میں گزشتہ چار دنوں میں زہریلے دانے کھانے کے بعد تین درجن سے زائد قومی پرندے مور کی موت ہوگئی ہے۔ سرکاری اطلاع کے مطابق چار روز قبل ہونے والے ایک درجن موروں کی موت کے بعد اتوار کے روز محکمہ جنگلات کی ٹیم کو گاؤں رٹھورہ کے علاقے میں شانی مندر کے آس پاس مزید 28 موروں کی لاش ملی تھی اور اس ٹیم کو چاول کے زہریلے دانے بھی ملے تھے۔ اس کی وجہ سے محکمہ کو خدشہ ہے کہ علاقے میں قومی پرندوں کے مور کا شکار کرنے والا ایک گروہ سرگرم ہے۔ڈپٹی ڈائریکٹر ویٹرنری ڈیپارٹمنٹ ڈاکٹر رام کمار تیاگی نے بتایا کہ گزشتہ روز پائے گئے 28 مرنے والے موروں کا پوسٹ مارٹم کیا جائے گا، اس کے بعد ہی موروں کی موت کی وجوہات واضح طور پر معلوم ہوسکیں گی۔ اطلاع میں بتایا گیا ہے کہ موروں کے شکار کے بعد وہ اپنا گوشت میٹروپولیس کے ہوٹلوں میں سپلائی کرتے ہیں۔  

بارہویں کے امتحانات|معاملے کی سماعت آج

 نئی دہلی //سپریم کورٹ نے بارہویں جماعت کے امتحانات منسوخ کرنے کے حکم کو چیلنج کرنے والی عرضیوں کی سماعت منگل کے لئے ملتوی کردی ہے ۔جسٹس اے ایم خانویلکر اور جسٹس دنیش مہیشوری کی تعطیلی بنچ نے پیر کے روز سی بی ایس ای سے کہا کہ اس نے بورڈ کے منصوبے پراصولی رضامندی ظاہر کی ہے ، لیکن کچھ عرضیوں میں بورڈ امتحانات کو منسوخ کرنے کو چیلنج کیا ہے ۔  

کورونا بحران کے دور میں یوگا امید کی کرن ہے : وزیر اعظم مودی

نئی دہلی//وزیر اعظم نریندر مودی نے پیر کو کہا کہ کورونا وبا کے خلاف جنگ میں یوگا پوری دنیا کے لئے امید کی کرن بنا ہوا ہے اور ’یوگا سے تعاون تک‘ کا منتر ایک نئے مستقبل کو راہ دکھائے گا ، انسانیت کو مضبوط بنائے گا۔  مودی نے آج ساتویں عالمی یوگا ڈے کے موقع پر اپنے خطاب میں کہا “آج جب پوری دنیا کورونا سے لڑ رہی ہے تو یوگا امید کی ایک کرن بنا ہوا ہے۔ بھلے ہی دو سالوں سے دنیا بھر کے ممالک اور ہندوستان میں کوئی بڑی عوامی تقاریب کا انعقاد نہیں ہوا ہو لیکن یوگا ڈے کے تیئں جوش و خروش ذرا بھی کم نہیں ہوا ہے۔ بھگود گیتا کا حوالہ دیتے ہوئے مودی نے کہا “گیتا میں کہا گیا ہے کہ غموں سے چھٹکارا اور آزادی کو ہی یوگا کہتے ہیں۔ ہمیں سب کو ساتھ لے کر چلنے والی انسانیت کے اس یوگا سفر کو ایسے ہی آگے بڑھانا ہے چاہے کوئی بھی جگہ ہو،کوئی بھی صورتحال ہو ، ہر عمر کے لئے ہر ایک

بھارت میں کورونا وائرس کے 53 ہزار 256 نئے کیس، 1422 اموات

سرینگر//گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس کے 53 ہزار 256 نئے کیسوں کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد مثبت کیسوں کی مجموعی تعداد 2 کروڑ 99 لاکھ 35 ہزار 221 ہوگئی ہے، جب کہ اسی عرصہ میں 1 ہزار 422 اموات بھی ہوئی ہےں، جس کے بعد کورونااموات کی مجموعی تعداد 3لاکھ 88 ہزار 135 تک پہنچ گئی ہے۔ وزارت صحت کے مطابق گذشتہ24گھنٹوں کے دوران بھارت میں کورونا وائرس میں مبتلا 78190 مریض صحتیاب ہوگئے ہیں۔ ملک میں ابھی تک کل 280036898 شہریوں کی ویکسی نیشن ہوئی ہے۔  

گرین ہائیڈروجن چوٹی کانفرنس کی میزبانی کیلئے ہندوستان تیار | برکس ممالک کے معروف ماہرین اور پالیسی ساز تبادلہ خیال کریں گے

نئی دہلی//یو این آئی// ہندوستان برکس ممالک کے ساتھ گرین ہائیڈروجن پہل پر دو روزہ چوٹی کانفرنس کی میزبانی کرنے کے لئے پوری طرح تیار ہے ۔یہ کانفرنس 22 اور 23 جون کو آن لائن ایونٹ ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ منعقد کی جائے گی۔ ملک کی سب سے بڑی بجلی تیار کرنے والی کمپنی اور دنیا کی توانائی کی کمپنیوں میں سے ایک نیشنل تھرمل پاور کارپوریشن (این ٹی پی سی) لمیٹیڈ پروگرام کو چلائے گی۔ورچوول چوٹی کانفرنس میں برکس ممالک کے معروف ماہرین اور پالیسی ساز ہائیڈروجن کے مستقبل پر تبادلہ خیال اور بات چیت کے لئے ایک پلیٹ فارم پر یکجا ہوں گے ۔کانفرنس کے پہلے دن سبھی ممالک کے نمائندے ہائیڈروجن کے استعمال اور ان کے مستقبل کے منصوبوں پر اپنے یہاں کی گئیں متعلقہ کوششوں کا اشتراک کریں گے ۔ مقررین ہائیڈروجن پر مبنی مختلف تکنیکوں سے متعلق اور اپنے ملک کے لئے اس کی ترجیحات کو بھی مشترک کریں گے ۔دوسرے دن مختلف ممالک کی

کورونا کے خلاف جنگ | مفت ٹیکہ کاری کا تیسرا مرحلہ آج سے

نئی دہلی// کورونا وائرس کے خلاف ہندوستان میں ٹیکہ کاری مہم کا اگلا مرحلہ 21 جون سے شروع ہونے جارہا ہے۔ اس کے تحت مرکزی حکومت 18 سال سے زیادہ عمر والوں کیلئے مفت میں ویکسین مہیا کرائے گی۔ زیر اعظم نریندر مودی نے گزشتہ سات جون کو اعلان کیا تھا کہ ریاستوں کو ٹیکہ ساز کمپنیوں سے ویکسین کی خریداری نہیں کرنی ہوگی۔ مرکزی حکومت 75 فیصد ویکسین کی خریداری کرے گی اور اس کو ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں کو مفت میں تقسیم کرے گی۔ہندوستان میں پہلی ٹیکہ کاری مہم 16 جنوری سے شروع ہوکر 30 اپریل تک چلی تھی۔ اس دوران مرکزی حکومت کی پالیسی یہ رہی کہ اس نے ٹیکہ ساز کمپنیوں سے سوفیصد ویکسین کی خریداری کی اور انہیں ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام خطوں کو مفت میں دیا۔ پہلے مرحلہ میں فرنٹ لائن ورکرس اور 45 سال سے زیادہ عمر والوں کو ترجیح دی گئی۔  

رام مندر زمین معاملہ | سپریم کورٹ کی نگرانی میں تفتیش کی جائے:کانگریس

نئی دہلی//کانگریس نے اجودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے چندے کی رقم میں لوٹ کا الزام عائد کرتے ہوئے اسے ‘رام دروہ’ (رام سے غداری) قرار دیا اور کہا کہ اس پورے معاملے کی سپریم کورٹ کی نگرانی تفتیش کروائی جانی چاہیے ۔کانگریس میڈیا سیل کے سربراہ رندیپ سرجے والا نے اتوار کے روز یہاں پریس کانفرنس میں کہا کہ رام مندر کے نام پر اکٹھا چندے میں لوٹ کی خبریں ہر دن آ رہی ہیں اور اس میں انکشاف ہو رہا ہے کہ لاکھوں کی زمین رام مندر ٹرسٹ کو کروڑ میں فروخت کی جا رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ تازہ معاملے میں امسال 20 فروری کو محض 20 لاکھ روپیے میں خریدی گئی زمین مندر تعمیر کے لیے 20 مئی کو دو پانچ کروڑ روپیے میں فروخت کی جاتی ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ 79 دن میں اجودھیا میں اس سودے میں زمین کی قیمت تین لاکھ روپیے یومیہ کی شرح سے بڑھتی ہے ۔ قبل ازیں مزید ایک انکشاف ہوا ہے ۔  

مودی کی ابراہیم رئیسی کو مبارکباد

نئی دہلی//وزیراعظم نریندر مودی نے مسٹر ابراہیم رئیسی کو ایران کا صدر منتخب ہونے پر مبارکباد دی ہے ۔مسٹر مودی نے اتوار کو ایک ٹوئٹ پیغام میں کہا کہ جناب ابراہیم رئیسی کو ایران کا صدر منتخب ہونے پر مبارکباد۔ میں ہندستان اور ایران کے مابین تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے لئے ان کے ساتھ مل کر کام کرنے کا خواہش مند ہوں۔  

مودی کی ابراہیم رئیسی کو مبارکباد

نئی دہلی//وزیراعظم نریندر مودی نے مسٹر ابراہیم رئیسی کو ایران کا صدر منتخب ہونے پر مبارکباد دی ہے ۔مسٹر مودی نے اتوار کو ایک ٹوئٹ پیغام میں کہا کہ جناب ابراہیم رئیسی کو ایران کا صدر منتخب ہونے پر مبارکباد۔ میں ہندستان اور ایران کے مابین تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے لئے ان کے ساتھ مل کر کام کرنے کا خواہش مند ہوں۔  

ریاستوںکے پاس 2.87 کروڑ ٹیکے دستیاب

نئی دہلی//صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت نے ہفتے کے روز بتایا کہ ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں کورونا وائرس کے دو کروڑ 87 لاکھ 71 ہزار 85 ٹیکے فی الحال دستیاب ہے ۔وزارت نے بتایا کہ اگلے تین دنوں میں کم از کم 5226460 اور ٹیکے ریاستوں اور مرکز کے زیرانتظام علاقوں کو مہیا کروا دیے جائیں گے ۔ وزارت نے بتایا کہ ابھی تک مرکز نے 28.50 کروڑ سے زیادہ کورونا وائرس کے ٹیکے ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کو دستیاب کروائے جا چکے ہیں’ جن میں سے آج صبح کے اعداد و شمار کورونا وائرس کے ٹیکے ریاستوں اور مرکز کے زیرانتظام علاقوں کو مہیا کروائے جا چکے ہیں جن میں سے کل صبح کے اعداد و شمار کے مطابق خراب سمیت 256328045 ٹیکے استعمال کیے جا چکے ہیں۔ وزارت نے کہا،‘مرکزی حکومت قومی سطحی ٹیکہ کاری مہم کے تحت ریاستوں اور مرکز کے زیرانتظام علاقوں کو مفت میں کووڈ ٹیکے مہیا کرواکر ان ک

کم از کم اجرت میں اضافہ | دہلی میں 55 لاکھ مزدوروں کو فائدہ ملے گا

نئی دہلی// کورونا وبا کے دوران دہلی حکومت نے مزدوروں کو بڑی راحت فراہم کی ہے۔ دہلی حکومت نے مہنگائی بھتہ کے تحت غیر ہنرمند مزدوروں کی ماہانہ تنخواہ 15492 سے بڑھا کر 15908، نیم ہنر مند مزدوروں کی تنخواہ 17069 سے بڑھا کر 17537 روپے اور ہنر مند مزدوروں کی تنخواہ 18797 سے بڑھا کر 19291 روپے کر دی ہے۔ نئی شرحیں یکم اپریل سے نافذ العمل ہوں گی۔ اس کے علاوہ سپر وائزر اور کلرک زمرے کے ملازمین کی کم از کم اجرت میں بھی اضافہ کیا گیا ہے۔غیر میٹرک ملازمین کی ماہانہ تنخواہ 19069 سے بڑھا کر 17537 کی گئی ہے، غیر گریجوایٹ ملازمین کی تنخواہ 18797 سے بڑھا کر 19291 کی گئی ہے۔   

پانی چھوڑے جانے سے گنگا میں طغیانی | اترپردیش میں الرٹ جاری

لکھنو// شمالی ہندوستان میں مانسون کے بروقت آمد اور اس کی بدولت ہوئی پہاڑوں ومیدانی علاقوں میں جھما جھم بارش کے بعد ہفتہ کی صبح ہریدوار سے 375000 کیوسک پانی چھوڑے جانے سے گنگا میں طغیانی آگئی۔ اسی طرح سے بجنور گنگا میں بھی 130000 کیوسکس پانی چھوڑا گیا ہے۔ جس کے بعد شام تک گنگاکی آبی سطح میں مزید اضافہ کے توقعات ہیں۔ وہیں مغربی یوپی میں گنگا کی طغیانی کی وجہ سے گنگا کے ساحلی گاؤں کے لئے خطرات بڑھ گئے ہیں۔گنگا کے نزدیکی گاؤں میں پولیس اور انتظامیہ کو الرٹ کر دیا گیا ہے۔ انتظامیہ نے مقامی باشندوں کو کسی محفوظ مقامات پر متنقل ہونے کی ہدایت دی ہے۔ وہیں دوسری جانب لگاتار بارش کی وجہ سے یوپی میں بہنے والی ندیوں میں طغیانی ہے جس سے پوروانچل کے علاقوں میں سیلاب کے خطرات پیدا ہوگئے ہیں۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں پوری ریاست میں شدید بارش ہوئی ہے اور محکمہ موسمیات پوروانچل و مغربی یوپی میں اگلے 48 گ