تازہ ترین

راجوری میں باپ بیٹے پر حملہ، سرپنچ سمیت سات افراد گرفتار

جموں// جموں و کشمیر پولیس نے ضلع راجوری کے تحصیل کالاکوٹ کے سیالسوئی علاقے میں ایک پنچایت میٹنگ کے دوران باپ بیٹے پر حملہ کرنے کی پاداش میں ایک سر پنچ، دو پنچ اور ایک مقامی ٹھیکیدار سمیت سات لوگوں کو گرفتار کیا ہے۔ ایس ایس پی راجوری چندن کوہلی نے بتایا کہ امجد پرویز کی طرف سے ایک شکایت درج ہوئی ہے جس میں کہا گیا کہ اس (امجد) کے بھائی کو ایک سڑک کی تعمیر کے متعلق ایک مقامی ٹھیکیدار کے ساتھ گرم گفتاری ہوئی جس پر سرپنچ کی سربراہی میں پنچایت کی ایک میٹنگ طلب کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ شکایت کے مطابق میٹنگ کے دوران سات افراد نے شکایت گذار اور اس کے والد محمد بشیر پر حملہ کیا اور انہیں سر عام بے عزت کیا۔  ملزموں پر الزام ہے کہ اُنہوں نے باپ بیٹے کے سر منڈھوائے اور اُن کے چہروں پر کالک پوتی۔  

راجوری میں دراندازی کی کوشش ناکام، 3جنگجو جاں بحق: فوج

سرینگر//فوج نے پیر کے روز دعویٰ کیا کہ ضلع راجوری کے نوشیرا سیکٹر میں کنٹرول لائن پر در اندازی کی ایک کوشش کو ناکام بناتے ہوئے تین جنگجوﺅں کو ہلاک کیا گیاہے۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق ایل او سی پرنوشیرا سیکٹر میں دراندازی مخالف آپریشن 28مئی سے جاری تھا جس کے دوران آج تین جنگجوﺅں کو ہلاک کیا گیا۔ اطلاعات کے مطابق یہ آپریشن اب بھی جاری ہے۔  

مینڈھر اور پونچھ سیکٹروں میں شدید گولہ باری | نوجوان زخمی ،متعدد مکانات تباہ، آر پی جی ایس کا استعمال

مینڈھر+پونچھ//پونچھ او ر مینڈھر کے مختلف سیکٹروں میں ہندوپاک افواج کے درمیان شدید گولہ باری اور فائرنگ کے نتیجہ میں ایک نوجوان زخمی ہواہے جبکہ متعدد مکانات کو جزوی طور پر نقصان پہنچاہے ۔سنیچر اور اتوار کی درمیانی رات اور اتوار کی صبح مینڈھر اور بالاکوٹ سیکٹروں میں شدید فائرنگ اور گولہ باری کاسلسلہ شروع ہواجس دوران آر پی جی مارٹرگولوں کا استعمال بھی کیا گیا ۔ بالاکوٹ سیکٹر میںر ات 11بجے سے ساڑھے 12بجے تک فائرنگ اور گولہ باری ہوئی جبکہ علی الصبح مینڈھر سیکٹر میں ساڑھے 3بجے سے ساڑھے 4بجے تک شدید گولہ باری کا تبادلہ ہواجس کی وجہ سے لوگ خوف میں سوبھی نہیں پائے ۔سرکاری ذرائع نے بتایاکہ کم سے کم پانچ گائوں اور بھارتی فوج کی چوکیاں پاکستانی فوج کی گولہ باری کی زد میں آئیں جس کے نتیجہ میں کئی گھروں کو جزوی طور پر نقصان پہنچا۔ا س دوران ایک نوجوان بھی زخمی ہواجسے علاج کیلئے ہسپتال منتقل کیاگیاہ

درہ دلیاں اور جھلاس ریڈ زون قرار | پہلے منفی آنیوالی رپورٹ اب مثبت ہوگئی

راجوری //پونچھ کے درہ دلیاں اور جھلاس علاقوں کو ریڈ زون جبکہ نواحی علاقوں کو بفر زون قرار دیاگیاہے ۔یہ اقدام علاقے سے ایک شخص کی رپورٹ مثبت آنے کے بعد کیاگیاہے جس کی پہلے رپورٹ منفی آئی تھی۔ذرائع نے بتایاکہ مذکورہ شخص کو 25مئی کورپورٹ منفی آنے پرانتظامی قرنطینہ سے واپس بھیج دیاگیاتھاتاہم دوسری مرتبہ اس کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔اس متاثرہ شخص کی سفری تفصیل بیرون جموں وکشمیر کی ہے ۔ذرائع کاکہناہے کہ چونکہ متاثرہ شخص کا تعلق درہ دلیاں علاقے سے ہے اس لئے اس علاقے کو ریڈ زون قرار دیاگیاہے اور ساتھ ہی جھلاس کو بھی ریڈ زون زمرے میں لایاگیاجو نواحی علاقہ ہے۔اس کے علاوہ اپر جھلاس اور دھراٹی علاقے بفر زون میں شامل کئے گئے ہیں ۔ڈپٹی کمشنر پونچھ راہل یاد ونے بتایاکہ ایس او پی کو اپنایاجارہاہے ۔  

پونچھ میں ایل او سی پر آر پارگولہ باری، جانی یا مالی نقصان نہیں

جموں// جموں و کشمیر کے ضلع پونچھ میں لائن آف کنٹرول پر کرنی سیکٹر میں ہفتے کی صبح ہندوستان اور پاکستان کی افواج کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا تاہم کسی بھی جانب کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ ایک دفاعی ترجمان نے بتایا کہ پونچھ میں ایل او سی پر کرنی سیکٹر میں ہفتے کی صبح قریب دس بجے پاکستانی فوج نے بلا اشتعال فائرنگ کرکے ہندوستانی چوکیوں کو نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ وہاں تعینات بھارتی فوجی اہلکار اس حملے کا بھر پور جواب دے رہے ہیں تاہم فی الوقت کسی بھی جانب کسی جانی یا مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔  

کنٹرول لائن پر بالا کوٹ کے جنگل میں آگ لگنے سے بارودی سرنگیں پھٹ پڑیں

سرینگر//ضلع پونچھ میں جمعہ کو کنٹرول لائن پر بالا کوٹ علاقے کے جنگلی علاقے میں آگ لگنے کے نتیجے میں زیر زمین بارودی سرنگیں پھٹ پڑی ہیں اور وہاں دھماکوں کی آوازیں سنی جارہی ہیں جن کی وجہ سے سبز سونا تباہ ہورہا ہے۔ حکام کے مطابق اصل میں جنگل میں آگ کنٹرول لائن کے دوسری طرف بھڑک اُٹھی ہے جو اب اس طرف تک پھیل گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس آگ سے درجنوںزیر زمین بچھائی گئی بارودی سرنگیں زور دار دھماکوں سے پھٹ رہی ہیں۔ یاد رہے کہ کنٹرول لائن پر دفاعی ذرائع کے مطابق در اندازی سے نمٹنے کیلئے زیر زمین بارودی سرنگیں بچھائی گئی ہیں۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق مذکورہ جنگل میں آگ ابھی تک بھڑک رہی تھی۔  

بالاکوٹ میں آر پار شدید گولہ باری

مینڈھر //مینڈھر کے بالاکوٹ سیکٹر میں ہندوپاک افواج کے درمیان گولہ باری اور فائرنگ کے نتیجہ میں متعدد مکانات تباہ ہوگئے جبکہ کئی مویشی ہلاک ہوئے ہیں ۔سرکاری ذرائع نے بتایاکہ منگل کی صبح بالاکوٹ کے بسونی اور دیگر علاقوں میں پاکستانی فوج کی طرف سے فائرنگ اور گولہ باری کی گئی جس دوران کئی مارٹر گولے رہائشی علاقوں میں بھی گرے جس سے کچھ مکانات کو جزوی طور پر نقصان پہنچاجبکہ کئی مویشی ہلاک ہوئے ہیں ۔ذرائع نے بتایاکہ کئی مویشی زخمی بھی ہوئے ہیں۔پونچھ انتظامیہ کے ایک سینئر افسر نے بتایا’’شلنگ سے ہونے والی مکمل تباہی کا پتہ مکمل جائزہ لینے کے بعد ہی لیاجاسکے گا‘‘۔دریں اثناء جموں میں مقیم دفاعی ترجمان لیفٹنٹ کرنل دیوندر آنند نے بتایاکہ پاکستانی افواج نے ایک بارپھر بالاکوٹ سیکٹر میں اشتعال انگیز فائرنگ اور گولہ باری شروع کردی جس دوران چھوٹے اور خود کار ہتھیاروں کا استعمال

پونچھ میں ایل او سی پر آر پارگولہ باری، رہائشی مکانات کو نقصان، کئی مویشی ہلاک

جموں//جموں وکشمیر کے ضلع پونچھ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے بالاکوٹ سیکٹر پر منگل کی صبح ہندوستان اور پاکستان کی افواج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا جس میں سرحد کے اس پار کچھ رہائشی ڈھانچوں کو نقصان پہنچنے اور کئی مویشیوں کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے منگل کی صبح ضلع پونچھ میں ایل او سی کے بالاکوٹ سیکٹر میں ہندوستانی فوج کی چوکیوں اور آبادی والے علاقوں کو نشانہ بناکر فائرنگ کی اور مارٹر گولے داغے۔ انہوں نے کہا کہ ایل او سی کی حفاظت پر مامور فوجی اہلکار پاکستانی فائرنگ اور مارٹر شیلنگ کا موثر اور منہ توڑ جواب دے رہے ہیں۔  

راجوری پونچھ کے کئی سیکٹروں میں گولہ باری

راجوری //راجوری اور پونچھ کے کئی سیکٹروں میں ہندوپاک افواج کے درمیان شدید فائرنگ اورگولہ باری کاتبادلہ ہوا۔سرکاری ذرائع نے بتایاکہ جمعہ کی صبح ساڑھے 3بجے جب لوگ سحری کھانے میں مصروف تھے ، اچانک سے کرشنا گھاٹی پونچھ سیکٹر میں فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ شروع ہوگیا ۔ذرائع نے بتایاکہ اس دوران منکوٹ سمیت چار گائوں اس گولہ باری کی زد میں آئے اور یہ سلسلہ لگ بھگ پانچ گھنٹوں تک جاری رہا۔اسی طرح سے صبح 8بجے سے راجوری کے نوشہرہ کے کلال ، بابا کھوڑی، کلسیاں، جھنگڑ اور سریا علاقوں میں بھی فائرنگ اور گولہ باری شروع ہوگئی ۔ذرائع نے بتایاکہ پاکستانی فوج کی طرف سے اشتعال انگیز فائرنگ اور گولہ باری کی گئی جس کا بھرپور جواب دیاجارہاہے ۔جموں میں مقیم دفاعی ترجمان لیفٹنٹ کرنل دیوندر آنند نے بتایاکہ راجور ی اور پونچھ میں پاکستان نے اشتعال انگیز فائرنگ اور گولہ باری کی جس کا جواب دیاجارہاہے۔  

یوم القدس پر جموں ، پونچھ اور منڈی میں پُرامن احتجاج

منڈی+پونچھ+جموں//ماہ رمضان کے آخری جمعہ کے موقعہ پر مظلوم فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے یوم القدس پر جموں کے کربلا کمپلیکس اور پونچھ کے صدر مقام پرپُرامن احتجاج اور احتجاجی اجلاس منعقد ہوا جس میں مقررین نے قبلہ اول بیت المقدس کی بازیابی کیلئے آواز بلند کی گئی۔ماہ رمضان کی آخری جمعہ کے موقعہ پر مظلوم فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے انجمن امامیہ جموں کے کربلا کمپلیکس میںایک  پرامن احتجاج منعقد ہوا۔ حکومت کی جانب سے وبائی مرض کے دوران جاری کردہ ایڈوائزری کو مدنظر رکھتے ہوئے احتجاج کے دوران تمام اصولوں کو مدنظر رکھا گیا۔احتجاج کا اہتمام القدس کے عالمی دن کے موقع پر کیا گیا ،جس کو پوری دنیا کے تمام مسلمان فلسطینیوں کے ساتھ ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کرنے کے لئے مناتے ہیں کیونکہ اسے امام خمینی نے 1978 میں مظلوم کے دن کے طور پر منانے اور مظلوم کے خلاف آواز اٹھانے کا اعلان کیا تھا

پونچھ اور راجوری میں ایل او سی پر آر پارگولہ باری

جموں// جموں وکشمیر کے پونچھ اور راجوری اضلاع میں جمعہ کی صبح لائن آف کنٹرول پر ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا۔ ایک دفاعی ترجمان نے بتایا کہ ضلع پونچھ کے کرشنا گھاٹی سیکٹر میں ایل او سی پرآج علی الصبح پاکستانی فوج نے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہندوستانی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری شرع کردی۔ انہوں نے کہا کہ وہاں تعینات بھارتی فوج نے حملے کا بھر پور جواب دیا۔  

مغل شاہراہ قابل آمد و رفت بنانے کیلئے 16دنوں سے کام بند

سرنکوٹ// راجوری پونچھ کوکشمیر سے جوڑنے والی مغل شاہراہ سے برف ہٹانے کاعمل پچھلے 16 دنوں سے معطل ہے اور کورونا وائرس کے چلتے آئندہ ایک ماہ تک سڑک کی بحالی کا کوئی امکان دکھائی نہیں دے رہا ہے۔شاہراہ کے آخری حصے پر اب صرف دو کلو میٹر کا علاقہ برف تلے ڈھکاہواہے جبکہ دیگر حصے سے برف ہٹادی گئی ہے لیکن کورونا وائرس کے پیش نظر کام ٹھپ ہوکر رہ گیاہے۔قابل ذکر ہے کہ مغل روڈ سرنکوٹ بفلیاز سے لیکر ہیر پور تک کل 84 کلو میٹر ہے جبکہ سرنکوٹ کی طرف سے 41 کلو میٹر شاہراہ سے برف صاف کی گئی ہے۔امسال 18 مئی کو کھولنے کا ہدف رکھاگیاتھا لیکن کورونا نے نظام زندگی ہی مفلوج کر دیا اوراس سے ایک خطے کے دوسرے خطے کے ساتھ روابط متاثر ہوئے ہیں۔ایڈووکیٹ یاسر خان جنجوعہ کا اس حوالہ سے کہناہے کہ مغل شاہراہ بند ہونے کی وجہ سے لوگوں کو نقصان ہو رہا ہے،خاص طور پر کشمیر کے مختلف کالجوں اور یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم طلاب

راجوری میں ایل او سی پر ہند پاک افواج کے مابین گولہ باری

جموں//جموں و کشمیر کے ضلع راجوری کے سندربنی سیکٹر میں لائن آف کنٹرول پر منگل کو ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری کا تبادلہ ہوا۔ ایک دفاعی ترجمان نے بتایا کہ راجوری کے سندربنی سیکٹر میں ایل او سی پر منگل کی صبح قریب ساڑھے سات بجے پاکستانی فوج نے ایک بار پھر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہندوستان کی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری شروع کی۔ انہوں نے کہا کہ وہاں تعینات فوجی اہلکار اس حملہ کا بھر پور جواب دے رہے ہیں۔  

پونچھ میں آ رپار گولہ باری

پونچھ //پونچھ میں لگاتار دوسرے روز بھی ہندوپاک افواج کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری کا تبادلہ ہوا،تاہم اس دوران کسی طرح کے جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ۔سرکاری ذرائع نے بتایاکہ پیر کی شام 7بجے پاکستانی فوج کی طرف سے بھارتی فوج کی چوکیوں اور رہائشی علاقوں پر اندھادھند فائرنگ وگولہ باری کی گئی جس کا بھارتی فوج نے بھی بھرپور جواب دیا ۔ذرائع نے بتایاکہ آخری اطلاعات ملنے تک فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ جاری تھا لیکن کسی طرح کے جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ۔  

مہاراشٹر سے اترپردیش جا رہے 7 مزدوروں کی سڑک حادثہ میں موت، 40 سے زائد زخمی

گنا// مدھیہ پردیش کے ضلع گنا کے صدرمقام کے نزدیک با ئی پاس شاہراہ پر بس اور کنٹینر کی ٹکر کی وجہ سے سات مزدوروں کی موت ہو گئی اور 40 سے زائد زخمی ہو گئے۔ یہ مزدوراترپردیش کے رہنے والے ہیں، جو مہاراشٹر سے اپنے گھر واپس لوٹ رہے تھے۔ پولیس ذرائع کے مطابق علی الصبح پیش آئے اس حادثے میں کنٹینر میں سوار مزدوروں کی موت ہو گئی۔ زخمیوں کو یہاں ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ ذرائع نے کہا کہ کینٹ تھانہ علاقے میں صبح تقریبا تین بجے یہ حادثہ اس وقت پیش ا?یا جب مزدوروں کو لے جا رہے کنٹینر کی مخالف سمت سے ا?نے والی بس سے ٹکر ہو گئی۔ بتایا گیا ہے کہ کنٹینر مہاراشٹر سے اترپردیش کے ضلع اناو¿کی طرف جا رہا تھا۔ ہلاک شدگان کی شناخت ابراہیم، اجیت، ارجن، وسیم، رمیش اور سدھیر کے طور پر ہوئی ہے۔ ایک کی شناخت فوری طور پر نہیں کی جا سکی۔ زخمی زیر علاج ہیں اور ضلع انتظامیہ نے اترپردیش حکومت سے

مینڈھر ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی | حاملہ خواتین مشکلات سے دوچار

مینڈھر //سب ضلع ہسپتال مینڈھر میں ماہر ڈاکٹروں کی اسامیاں خالی ہونے کی وجہ سے مشکل وقت میں بھی مریضوں کو دیگر ہسپتالوں میں منتقل کرنے کیلئے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔اس وقت سب ڈسٹر کٹ ہسپتال میں گائنا کالوجسٹ ،بچوں کے ماہر ڈاکٹر کیساتھ ساتھ گزشتہ کئی عرصہ سے اینستھیزیا ماہر کی اسامیاں خالی پڑی ہوئی ہے جبکہ لاک ڈائون کے دوران حاملہ خواتین کو کچھ حد تک ایمبولینس گاڑیوں کی مدد سے راجوری اور پونچھ کے ہسپتالوں میں منتقل کیا جاتا ہے لیکن بچوں ودیگر مریضوں کی ہسپتالوں میں منتقلی کیلئے کئی دنوں تک لوگوں کو ٹھوکریں کھانی پڑرہی ہیں ۔مکینوں نے بتایا کہ حاملہ خواتین کو مینڈھر سے راجوری اور پونچھ منتقل کرنے کیلئے انتظامیہ کی جانب سے حالانکہ ایمبولینس فراہم کی جارہی ہیں تاہم اس کے باوجود بھی دیہات میں اس عمل پر اس وقت چلنا انتہائی مشکل ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بیمار چھوٹے بچوں کی امراض کا ماہ

پونچھ سیکٹر میں گولہ باری

جموں // فوج کے دفاعی ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستانی فوج نے جموں و کشمیر کے پونچھ ضلع میں لائن آف کنٹرول کے نزدیک فائرنگ  اور مارٹر شلنگ کی ، تاہم کوئی نقصان نہیں ہوا۔ ترجمان نے بتایا کہ سیز فائر کی خلاف ورزی کا یہ واقع دیوگر سیکٹر میں ہوا اور بھارتی فوج بہترین انداز میں جواب دے رہی ہے۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ سنیچر کی صبح 7بجکر 30منٹ پر پاکستانی فوج نے بغیر کسی اشتعال انگیزی کے سیز فائر کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیگوار سیکٹر میں شلنگ  اور چھوٹے ہتھیاروں سے فائرنگ کی۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ گولی باری کا سلسلہ جاری ہے لیکن ابتک کسی جانی نقصان کی کوئی خبر نہیں ہے‘‘۔  

کیرنی سیکٹر میں آرپارگولہ باری

 سرینگر//بھارت نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان کی طرف سے بھارتی چوکیوں پر بلااشتعال فائرنگ کا جواب دیتے ہوئے اُس نے چار پاکستانی فوجی ہلاک کئے۔جمعہ کو ضلع پونچھ میں حدمتارکہ پر پاکستان اور بھارتی افواج کے مابین گولہ باری کا شدید تبادلہ ہواجس دوران چار پاکستانی فوجی اہلکار ہلاک ،جبکہ کئی ایک زخمی ہوئے اور نصف درجن رہائشی ڈھانچوں کو نقصان پہنچا ۔ خبررساں ایجنسی سی این آئی کے مطابق ہندوپاک سرحدوں پر جمعہ کو  مسلسل چھٹے روز دونوں  ملکوں کی افواج نے ایک دوسرے کی چوکیوں پراپنی بندوقوں کے دہانے کھولے ۔ صوبہ جموں کے شاہ پور کیرنی سیکٹر میں صبح پاکستانی فوج نے بھارتی فوجی چوکیوں کو نشانہ بناتے ہوئے جدیدترین ہتھیاروں سے گولہ باری کی ۔ دفاعی ذرائع نے اس حوالے سے کہا کہ بدھ کو دو دنوں کی خاموشی کے بعد پاکستانی فوج نے بلا اشتعال بھارتی فوجی چوکیوں کونشانہ بناکر جدید ترین ہتھیاروں سے گولہ

پونچھ میں حدمتارکہ پر آر پار گولہ باری سے خوف و دہشت

سرینگر//حد متارکہ پر ہند و پاک افواج کے درمیان کشیدگی برقرار ہے اور جمعرات کو بھی دو ایٹمی ممالک کی افواج کے مابین 3 سیکٹروں میںشدیدگولہ باری کی وجہ سے سرحدی آبادی میں رہائش پذیر لوگوں میں خوف وہراس کی لہر دوڑ گئی۔ جمعرات کی صبح11بجے ہند وپاک افواج کے درمیان پونچھ کے3سیکٹروں قصبہ ،شاہپور اور کیرنی میں شدید گولہ باری کا تبادلہ شروع ہوا جو وقفے وقفے سے سہ پہر4بجے تک جاری تھی ۔گولہ باری کے نتیجے میں سرحدی ضلع پونچھ کے مذکورہ تین سیکٹروں کے کئی دیہات اسکی زد میں آگئے ،تاہم کسی جانی ومالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیںہے ۔تاہم قصبہ سیکٹر میں متعدد افراد آہینی زد میں آکر زخمی ہوئے ۔جموں میں مقیم دفاعی ترجمان کرنل دیویندر آنند نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے جمعرات کو ایک مرتبہ پھر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی ،جس کا بھر پو ر اور معقول جواب دیا گیا ۔ان کا کہناتھا کہ رواںبرس یکم جنوری سے اب پاکس

ریاسی کے پہاڑوں پر تازہ برفباری،سردی میں اضافہ

مہور//ریاسی ضلع کے پہاڑوں پر بدھ کے روز تازہ ہلکی برفباری ہوئی ،جس کے بعد علاقہ میں ایک بار پھر سے سردی شروع ہو گئی۔واضع رہے کہ اس موسم میں لوگ ڈھوکوں میں رہائش پذیر ہوتے ہیں اور بکروالوں کا بھی اس موسم میں پہاڑوں سے گزرنا ہوتا ہے لیکن برف گرنے کے باعث پہاڑوں پر شدید سردی پڑ گئی ہے ،جس کی وجہ سے ان لوگوں کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔البتہ اس دوران کسی بھی پہاڑی علاقہ سے کوئی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی ہے۔