تازہ ترین

راجوری پونچھ کے کئی گاﺅں میں تلاشی کارروائیاں

راجوری //خطہ پیر پنچال کے دونوں سرحدی اضلاع میں فوج کی جانب سے شروع کر دہ تلاشی مہم گزشتہ کئی روز سے مسلسل جاری ہے جبکہ راجوری ضلع کے تھنہ منڈی سب ڈویژن میں 5روز سے مشکوک نقل و حرکت کی اطلاع ملنے کے بعد تلاشی مہم شروع کی گئی ہے ۔انتظامیہ کے مطابق منجا کوٹ پولیس سٹیشن کے زیر تحت آنے والے 4دیہات میں سیکورٹی ایجنسیوں کی جانب سے تلاشی مہم چلائی جارہی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ مذکورہ دیہات میں مشکوک نقل و حرکت کی اطلاع موصول ہونے کے بعد کارروائی عمل میں لائی گئی ہے ۔اسی طرح راجوری ضلع کے کھنیتر گاﺅں میں سیکورٹی فورسز نے سنیچر کے روز تلاشی مہم شروع کی تاہم اس کو شام کے وقت ختم کردیا گیا ۔دوسری جانب تھنہ منڈی کے دیرہ گلی علاقہ میں اینٹی ملی ٹینسی آپریشن گزشہ 5روز سے مسلسل جاری ہے ۔دفاعی ذرائع نے بتایا کہ مذکورہ علاقہ میں مشکوک نقل و حرکت کی اطلاع موصول ہونے کے بعد کارروائی شروع کی گئی ہے ۔ &n

حد متارکہ پر دھماکہ ،1فوجی لقمہ اجل ،1زخمی

مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن کے کرشنا گھاٹی سیکٹر میں ہوئے ایک دھماکے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک جبکہ دوسرا زخمی ہو گیا۔جمعہ اور سنیچر کی درمیانی شب پیش آئے واقعہ کے بعد ہلاک ہوئے فوجی اہلکار کا مینڈھر سب ڈسٹر کٹ ہسپتال میں پوسٹ مارٹم کیا گیا ۔فوج کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ 23جولائی کی شب پیش آئے واقعہ میں ہلاک ہو ئے فوجی اہلکار کی شناخت سپاہی کمل دیو ودیا کے طورپر ہوئی ہے جو کہ مذکورہ علاقہ میں آپریشن کے سلسلہ میں تعینات تھا ۔انہوں نے بتایا کہ ڈیوٹی کے دوران پیش آئے واقعہ میں فوجی اہلکار شدید زخمی ہوگیا جس کو نزدیکی ہسپتال منتقل کیا گیاتاہم بعد میں اس کی موت واقعہ ہو گئی ۔فوجی بیان میں کہا گیا ہے کہ فوجی کا تعلق ہماچل پردیش کے ہیمار پور ضلع سے تھا ۔انہوں نے بتایا کہ اس حادثے میں ایک فوجی زخمی بھی ہوا ہے اور اس کا علاج معالجہ کیا جارہا ہے ۔

کور ٹ کمپلیکس کے نزدیک نکاسی نظام مفلوج

سرنکوٹ//سرنکوٹ کورٹ کمپلیکس کے باہر نکاسی نظام مفلوج ہونے کی وجہ سے وکلاءاور عام لوگوں کو دوران آمد ورفت شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔وکلاءنے بتایا کہ کورٹ کمپلیکس جہاں پر روزانہ سینکڑوں افراد کا آنا جانا ہوتا ہے وہائیں انتظامیہ کی جانب سے نکاسی نظام کو معیاری بنانے میں کوئی دلچسپی ظاہر نہیں کی جارہی ہے ۔انہوں نے بتایاکہ کورٹ کمپلیکس کے نزدیک ہی میونسپل کمیٹی کا دفتر قائم ہے لیکن اس کے باوجود بھی نہ تو صفائی ستھرائی کا کوئی بندوبست کیاجارہا ہے او ر نہ ہی نکاسی نظام کو معقول بنایا جارہا ہے ۔غور طلب ہے کہ مذکورہ علاقہ میں لگ بھگ سبھی آفیسران کے دفتر قائم ہیں لیکن اس کے باوجود بھی حکام ٹس سے مس نہیں ہوتے ۔مکینوں نے بتایا کہ موسم کی خرابی کےساتھ ہی علاقہ میں سیلابی صورتحال پیدا ہو جاتی ہے تاہم برساتی موسم میں صورتحال مزید خراب ہوجاتی ہے۔مقامی لوگوں اور وکلا ءنے انتظامیہ سے مانگ کرتے

سخی میدان میلے کے انعقاد کا معاملہ

مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن میں سخی میدان میلے کے سلسلہ میں بغیراجاز ت کے جمع ہونے والی ہجوم کے سلسلہ میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے ۔برسوں سے چلی آرہی روایت کے مطابق مینڈھر کے سخی میدان علاقہ میں سالانہ میلے کا اہتمام کیا جاتا ہے جس کے دوران مقامی و غیر مقامی پہلوانوں کی جانب سے زور آزمائی اور کُشتی کی جاتی ہے تاہم گزشتہ 2برسوں سے مذکورہ میلے کو کووڈ کی وجہ سے موخر کردیا جاتا رہا ہے تاہم گزشتہ روز میلا کمیٹی کے اراکین کی جانب سے رسمی پروگرام کااہتمام کیا گیا جس کے دوران جھنڈالہریا گیا اور اس دوران لوگوں کی ایک بڑی تعداد جمع ہو گئی ۔دوسری جانب ضلع انتظامیہ نے بغیر اجازت کے کووڈ دور میں ہجوم کے جمع ہونے کے سلسلہ میں کارروائی کرتے ہوئے انتظامیہ کمیٹی اور عام لوگوں کےخلاف مقدمہ درج کرنے کی ہدایت جاری کی گئی جس کے بعد اس سلسلہ میں مینڈھر پولیس سٹیشن میں ایک مقدمہ زیر ایف آئی آر نمبر 288/2021درج ک

تاجروں کا گریف حکام کےخلاف احتجاج

کوٹرنکہ //سب ڈویژن کوٹرنکہ کے بدھل علاقہ میں تاجروں نے محکمہ گریف کےخلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ کی لاپرواہی مکینوں و تاجروں کےلئے مصیبت کا باعث بنی ہوئی ہے ۔مظاہرین نے بتایا کہ گزشتہ 4ماہ سے نالیاں بند پڑی ہوئی ہیں تاہم محکمہ کی جانب سے ان کی صفائی کےلئے کوئی قدم نہیں اٹھایا جارہا ہے جس کی وجہ سے برساتی موسم شروع ہونے کےساتھ ہی نالیوں کا پانی گلیوں میں سے بہنا شروع ہو گیا ہے ۔جسویر سنگھ ،وشال ،محمد شکور ،عبدالغفور ودیگران نے بتایا کہ نالیاں بند ہونے کی وجہ سے اب ان کو دکانوں کے کھولنے کا عمل بھی متاثرہورہا ہے ۔انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ گریف کی لاپرواہی مکینوں کےلئے شدید مشکلات کا باعث بن چکی ہے تاہم مقامی انتظامیہ سے رجوع کرنے کے باوجود بھی ان کے مسائل کو حل ہی نہیں کیا جارہا ہے ۔انہوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کو متحرک کیا جائے تاکہ نالیوں کی صفائی کروائی جا

میونسپل کمیٹی کے کیجول لیبر ورکروں کا احتجاج

تھنہ منڈی //میونسپلٹی میں عارضی بنیادوں پر کام کرنے والے عارضی ملازمین نے اپنے مطالبات کو لے کر سنیچر کے روز تھنہ منڈی میں میونسپلٹی گیٹ پر سخت احتجاج کیا اور جم کر نعرے بازی کی۔ مظاہرین نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ان کو مستقل کرنے کےساتھ ساتھ ان کی تنخواہیں ماہانہ بنیادوں پر وگزار کی جائیں تاکہ ان کی مشکلات کم ہو سکیں ۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ 10ماہ سے انھیں کوئی تنخواہ نہیں ملی۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ کی خدمت کرنے میں وہ کوئی کسر باقی نہیں چھوڑتے ہیں جس کے عوض انہیں حقیر تنخواہ دی جاتی ہے لیکن وہ بھی اب وقت پر وگزار نہیں کی جارہی ہے ۔مظاہرین نے کہا کہ اگر حکومت نے اب بھی ان کے مطالبات کی طرف توجہ نہیں دی تو تمام عارضی ملازمین اپنے کنبوں سمیت سڑکوں پر آئیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اس سے قبل بھی کئی بار احتجاجوں کے ذریعے حکومت کی توجہ اپنے مطالبات کی طرف مبذول کرنے کی کوشش کی لیکن سرکار ٹس سے

لام علاقہ میں محکمہ جنگلات کی شجر کاری مہم

نوشہرہ //سب ڈویژن نوشہرہ کے لام علاقہ میں محکمہ جنگلا ت کی جانب سے ایک شجر کاری مہم چلائی گئی جس کے دورا ن متعدد پودے لگائے گئے ۔مقامی خاتون سرپنچ کی قیادت میں شروع کر دہ مہم کے دوران کئی سرکاری اداروں میں محکمہ و پنچایتی اراکین کی جانب سے پودے لگائے گئے ۔غور طلب ہے کہ نوشہر ہ سب ڈویژن کے متعدد علاقوں میں اس سے قبل بھی متعلقہ محکمہ کی جانب سے کئی ایک مقامات پر شجر کاری کی گئی ہے جس کے دوران مختلف نوعیت کے پودے لگائے گئے ہیں ۔محکمہ نے بتایا کہ اس مہم کے دوران گور نمنٹ مڈل سکول ،پنچایت گھر اور کمیونٹی ہال میں مذکورہ مہم کے دوران پودے لگائے گئے ہیں ۔

راجوری میں ’گن ہاﺅس ‘پر سی بی آئی کا چھاپہ

راجوری //راجوری ضلع میں سی بی آئی کی جانب سے ایک گن ہاﺅس پر چھاپہ مارا کر ریکارڈ ضبط کرلیا گیا ۔سی بی آئی کی جانب سے بندوقوں کے جعلی لائسنس کے سلسلہ میں ایک تحقیقاتی عمل شروع کیا گیا ہے جس کے لئے متعدد علاقوںمیں چھاپوں کے دوران ریکارڈ ضبط کیا جارہا ہے ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ سنیچر کی صبح سی بی آئی کی ایک ٹیم راجوری پہنچی اور قصبہ میں سیلانی پل کے نزدیک قائم کر دہ ’رخسانہ گن ہاﺅس ‘پر چھاپے کے دوران ریکارڈ ضبط کر لیا ۔انہوں نے بتایا کہ سی بی آئی کی جانب سے کئی گھنٹوں تک جانچ پڑتال کرنے کے بعد تحقیقات میں درکار ضروری ریکارڈ کو ضبط کرلیا گیا ۔  

غیر معیاری تار کول بچھانے کےخلاف احتجاج

منجا کوٹ //تحصیل منجا کوٹ کے نیلی گاﺅں سے حیات پورہ جارہی سڑک پر غیر معیاری تار کول بچھائے جانے کےخلاف مکینوں نے احتجاج کیا ۔مظاہرین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ پی ایم جی ایس وائی کی جانب سے ایک برس قبل سڑک پر تار کول بچھائی گئی تھی تاہم پورا کام غیر معیاری کیا گیا تھا جس کی وجہ سے سڑک اب کھڈوں میں تبدیل ہو گئی ہے ۔مظاہرین نے الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ سرکاری خزانے سے فنڈز ہڑپنے کےلئے متعلقہ محکمہ کی جانب سے غیر معیار ی کام کیا گیا ہے جس کی وجہ سے ایک برس کے اندر ہی تار کول اکھڑ گئی ہے ۔مظاہرین نے ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ بچھائی گئے تار کول کے سلسلہ میں تحقیقات کروائی جائے اور غیر معیاری کام کرنے والوں کےخلاف کارروائی عمل میں لائی جائے ۔  

سکول کی تعمیر میں غیر معیاری ساز و سامان کے استعمال کا الزام

مینڈھر //مینڈھر کے بنولہ علاقہ کے مکینوں نے انتظامیہ پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ گورنمنٹ ہائی سکول کی عمارت کی تعمیر میں غیر معیاری ساز و سامان کا استعمال کیا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ تعمیراتی ایجنسی کی جانب سے مقامی دریا سے مٹی والا ریت استعمال کیا جارہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ متعلقہ محکمہ اور ٹھیکیدار کی ملی بھگت کی وجہ سے غیر معیاری کام کیا جارہا ہے تاکہ عمارت کے بجائے فنڈز ہڑپنے کی کوششیں کی جارہی ہیں ۔مکینوں نے کہاکہ محکمہ اور ٹھیکیدار عمارت کی تعمیر کے بعد چلے جائیں گے تاہم سکول میں زیر تعلیم بچوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو جائے گا ۔غور طلب ہے کہ عمارت کی تعمیر میں حالیہ کئی دنوں سے غیر معیاری تعمیر کے الزامات لگائے جارہے ہیں ۔مکینوں نے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ زیر تعمیر عمارت کی جانچ کروانے کےساتھ ساتھ غیر معیاری تعمیرات کو جلدازجلدمسمار کروا کر نئی ع

میدانہ تا گگر کوٹ سڑک کا تعمیراتی کام سست روی کا شکار

پونچھ//میدانہ تا گگر کوٹ سڑک کا تعمیراتی کام سست روی کا شکار ہے جس کی وجہ سے ہزاروں کی آبادی مشکلات سے دوچار ہیں۔ اس سڑک کا تعمیراتی کام 20سال پہلے شروع کیا گیا جس پر لوگوں نے سکھ کا سانس لیا تھا لیکن سڑک کا کام انتہائی سست روی کا شکار ہونے کی وجہ سے اس وقت تک کام مکمل نہ ہو سکا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ سڑک کی خستہ حالی کی وجہ سے نہ صرف ٹریفک متاثر ہو رہی ہے بلکہ حادثات میں بھی اضافہ ہو گیا ہے گرد و غبار سے بیماریاں جنم لے رہی ہیں۔ اہل علاقہ نے بتایا کہ اگر تعمیراتی کام کی رفتار یہی رہی تو مزید 20 سال میں بھی سڑک مکمل نہیں ہو گی۔انھوں نے کہا نالیوں کا گندا پانی سڑک پر جمع ہو جاتا ہے جس سے لوگوں کی مشکلات بڑھ رہی ہے۔ محمد سلیم نامی ایک سیاسی وسماجی کارکن نے بتایا کہ گگر کوٹ پاور ہوس کے سامنے پاور ہوس والوں نے ایک جھولا پ±ل لگایا ہے جس کے سہارے لوگ دریا عبور کرتے ہیں۔انھوں نے بتای

پونچھ میں غیر معیاری پٹرول کی فروخت کا الزام

پونچھ//سرحدی ضلع پونچھ میں غیر معیاری پٹرول کی فروخت کی شکایات موصول ہو رہی ہیں جس کی وجہ سے عوام برہمی کا اظہار کررہے ہیں۔ اس سلسلہ میں بات کرتے ہوئے مختار احمد نامی ایک شخص نے الزام لگایا کہ انھوں نے اپنے موٹرسائیکل میں پیٹرول ڈلوایا تو چند کلو میٹر سفر کے بعد ان کی بائیک بند ہو گئی جب انہوں نے مستری کو دکھائی تو انہوں نے پیٹرو کی جانچ کی توپتہ چلا کی پیٹرول میں کافی مقدار میں پانی ملا ہوا ہے۔انھوں نے نہایت افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایک طرف پیٹرول کی قیمتیں آسمان چھو رہی ہیں تو دوسری جانب پیٹرول پمپ والے بھی عوام کے ساتھ دھوکہ دری کر رہے ہیں۔انہوں نے پونچھ کی ضلعی انتظامیہ خصوصی طور پر ضلع ترقیاتی کمیشنر سے فوری کاروائی۔کا مطالبہ کرتے ہوئے ایل کی کہ وہ متعلقہ افسران کو کارروائی کی ہدایت کی وہ پٹرول پمپ مالکان کو خبردار کریں کہ پیٹرول میں ملاوٹ نہ کریں اور قانون کی خلاف ورزی کرن

مزید خبریں

پی آئی اے کا غبارہ باز یاب  جاوید اقبال  مینڈھر//گزشتہ روز مینڈھر سب ڈویژن کے بلنوئی گاﺅں میں ایک مشکوک غبارہ بازیاب ہوا ہے جس پر پی آئی اے تحریر کیا گیا ہے ۔مقامی سرپنچ کی جانب سے اس سلسلہ میں جموں وکشمیر پولیس کو اطلاع دی گئی جس کے بعد مینڈھر پولیس سٹیشن کی ایک ٹیم نے موقعہ پر جاکر مذکورہ غبارہ کو اپنی تحویل میں لے لیا ،پولیس نے بتایا کہ مذکورہ غبارہ مینڈھر پولیس سٹیشن میں رکھا گیا ہے ۔     راجوری میں شدید بارشیں ،2کمسن لقمہ اجل  محمد بشارت+سمت بھارگو راجوری //راجوری ضلع کے متعدد علاقوں میں ہوئی شدید بارشوں کی وجہ سے دو کمسن لقمہ اجل بن گئے ۔ان دونوں کمسن میں سے ایک دریا میں بہہ گیا جبکہ دوسرا سیلاب میں پھنس کر لقمہ اجل بن گیا ۔سرکاری ذرائع نے بتایا راجوری ضلع میں ہوئی اچانک بارشوں کی وجہ سے کئی علاقوں میں معمولات زندگی پوری طرح سے

تازہ ترین