راجوری میں کورونا کے 3نئے معاملات

راجوری //ضلع راجوری میں کورونا وائرس کے 3نئے معاملات سامنے آئے اور متاثرین میں پولیس اہلکار اور پاکستان سے واپس لوٹنے والی خاتون بھی شامل ہے۔اس دوران انتظامیہ نے درہال قصبہ کو ریڈ زون قرار دیتے ہوئے آمدورفت پر پابندیاں عائد کردی ہیں ۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر راجوری شیر سنگھ نے بتایاکہ مہاری گائوں سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے جسے علاج کیلئے کووڈ ہسپتال منتقل کردیاگیا۔انہوں نے بتایاکہ متاثرہ خاتون حال ہی میں پاکستان سے واپس لوٹی ہے اور وہ قرنطینہ میں تھی ۔انہوں نے مزید بتایاکہ پولیس چوکی پیڑی کا ایک پولیس اہلکار بھی کورونا میں مبتلا پایاگیاہے ۔انہوں نے بتایاکہ حال ہی میں پیڑی علاقے کے جموں وکشمیر بینک ملازم میں کورونا کی تصدیق ہوئی تھی جس کے بعد علاقے میں بڑے پیمانے پر نمونے حاصل کئے گئے اور انہی نمونوں میں پولیس اہلکار کا ٹیسٹ مثبت آیاہے ۔انہوں نے بتایاکہ یہ اہل

امرناتھ یاترا اِنتظامات کا جائزہ لیاگیا

جموں//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر بصیر احمدخان نے اگلے ماہ شروع ہونے والی امرناتھ یاترا۔ 2020کے لئے کئے گئے انتظامات کا  اَفسران کی اعلیٰ سطحی میٹنگ میں جائزہ لیا۔میٹنگ میں ڈویژنل کمشنر کشمیر ، آئی جی پی کشمیر ، ڈپٹی کمشنر سرینگر، ڈپٹی کمشنر گاندربل ، ڈپٹی کمشنر اننت ناگ اور امرناتھ شرائین بورڈ کے نمائندگان نے بذریعہ ویڈیو کانفرنسنگ شرکت کی۔مشیرنے تمام اِنتظامات بشمول پگڈنڈی کو صاف کرنے ،لائیٹس ، واٹر ٹینک ، بیت الخلاء ، جنریٹر سٹیوں ، پی ایس پیز ، پبلک ایڈریس سسٹم ، کمیونیکیشن ٹاور اور سائن بورڈوں کی مقررہ تاریخ سے قبل تنصیب پر پیش رفت کا جائزہ لیا۔بصیر احمدخان نے طبی ٹیموں ، فائر ٹینڈر ، آکسیجن بوتھ ، عارضی راشن ڈیپوئوں کی تعیناتی کے بارے میں جانکاری حاصل کی۔ اُنہوں نے کہا کہ یاتریوں یا یاترا ڈیوٹی پر تعینات اِنتظامیہ سے وابستہ لوگوں کو کسی بھی اشیائے ضروریہ کی قلت نہیں ہونی چاہیئے

خو د معذور ،اکلوتابیٹا بھی معذور، مکان پچھلے سال بارشوں میں ڈھہ گیا

مینڈھر//خود جسمانی طور پر ناخیز ، اکلوتابیٹابھی معذوراور مکان بھی ڈیڑھ سال قبل بھاری بارشوں کے باعث ڈھہ گیا ۔یہ کہانی ہے حد متارکہ پر بسنے والے محمد اسحق ولد غلام محمد کی جو دانے دانے کا محتاج ہے اور اس کی اہلیہ لوگوں کے گھروں میں محنت مزدوری کرکے اس خاندان کی کفالت کررہی ہے ۔محمد اسحق مینڈھر کے منکوٹ سیکٹر میں حد متارکہ پر واقع دھلاڑ تراڑاں ساگرہ علاقے میں رہتاہے ۔وہ پہلے سے ہی مالی تنگدستی اوردیگر مسائل کاسامناکررہاتھاتاہم ڈیڑھ سال قبل اس وقت اس پر آفت ٹوٹ پڑی جب بارشوں کے سبب اس کا مکان گر گیاتھااوراس وقت اس کا خاندان صرف ایک کمرے میں رہ رہاہے جو بھی خستہ حالی کاشکار ہے۔اس کی 4 جوان بیٹیاں ہیں جبکہ ایک ہی بیٹا ہے اور بھی جسمانی طور پر معذور ہے ۔اسحق کی اہلیہ گائوں میں لوگوں کے گھروں میں کام کاج کرکے گھر کا خرچہ چلارہی ہے اور اسے گھر میں موجود دو معذوروں کی دیکھ ریکھ بھی کرناپڑتی ہے

قدرتی حُسن سے مالا مال منڈی کا جبی طوطی علاقہ نظرانداز

 منڈی//ضلع پونچھ کی تحصیل منڈی میں واقع علاقہ جبی طوطی قدرتی حسن سے مالا مال ہے لیکن انتظامیہ اس علاقہ کی جانب کوئی توجہ نہیں دے رہی جس کی وجہ سے اسے سیاحتی طور پر ترقی نہیں دی جاسکی ہے۔منڈی میں کئی سیاحتی مقامات پائے جاتے ہیں جن میں سے ایک مقام جبی طوطی کے نام سے جانا جاتا ہے جہاں ہر روز سینکڑوں کی تعداد میں لوگ 3 گھنٹے کا پیدل سفر کر کے قدرت کے حسین مناظر سے لطف اندوز ہونے کے لئے پہنچتے ہیں ۔ان مقامات کو اگر انتظامیہ کی جانب سے سیاحتی منظر نامے پر لایا جائے تو نہ صرف مقامی بلکہ غیر مقامی سیاحوں کی توجہ بھی اس جانب راغب ہوگی اور ضلع پونچھ میں روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔تحصیل منڈی کی عوام نے مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہر ایک حکومت نے ان کے ساتھ وعدہ خلافیاں کیں اور مقامی سیاسی لیڈران بھی منڈی کو سیاحتی نقشے پر لانے میں کامیاب نہیں ہوپائے ،یہی وجہ ہے کہ اس قدر خوبصورت مق

تازہ ترین