پونچھ اور راجوری میں ایل او سی پر آر پارگولہ باری

جموں// جموں وکشمیر کے پونچھ اور راجوری اضلاع میں جمعہ کی صبح لائن آف کنٹرول پر ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا۔ ایک دفاعی ترجمان نے بتایا کہ ضلع پونچھ کے کرشنا گھاٹی سیکٹر میں ایل او سی پرآج علی الصبح پاکستانی فوج نے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہندوستانی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری شرع کردی۔ انہوں نے کہا کہ وہاں تعینات بھارتی فوج نے حملے کا بھر پور جواب دیا۔  

مغل شاہراہ قابل آمد و رفت بنانے کیلئے 16دنوں سے کام بند

سرنکوٹ// راجوری پونچھ کوکشمیر سے جوڑنے والی مغل شاہراہ سے برف ہٹانے کاعمل پچھلے 16 دنوں سے معطل ہے اور کورونا وائرس کے چلتے آئندہ ایک ماہ تک سڑک کی بحالی کا کوئی امکان دکھائی نہیں دے رہا ہے۔شاہراہ کے آخری حصے پر اب صرف دو کلو میٹر کا علاقہ برف تلے ڈھکاہواہے جبکہ دیگر حصے سے برف ہٹادی گئی ہے لیکن کورونا وائرس کے پیش نظر کام ٹھپ ہوکر رہ گیاہے۔قابل ذکر ہے کہ مغل روڈ سرنکوٹ بفلیاز سے لیکر ہیر پور تک کل 84 کلو میٹر ہے جبکہ سرنکوٹ کی طرف سے 41 کلو میٹر شاہراہ سے برف صاف کی گئی ہے۔امسال 18 مئی کو کھولنے کا ہدف رکھاگیاتھا لیکن کورونا نے نظام زندگی ہی مفلوج کر دیا اوراس سے ایک خطے کے دوسرے خطے کے ساتھ روابط متاثر ہوئے ہیں۔ایڈووکیٹ یاسر خان جنجوعہ کا اس حوالہ سے کہناہے کہ مغل شاہراہ بند ہونے کی وجہ سے لوگوں کو نقصان ہو رہا ہے،خاص طور پر کشمیر کے مختلف کالجوں اور یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم طلاب

تازہ ترین