پونچھ میں ایل او سی پر آر پارگولہ باری، رہائشی مکانات کو نقصان، کئی مویشی ہلاک

جموں//جموں وکشمیر کے ضلع پونچھ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے بالاکوٹ سیکٹر پر منگل کی صبح ہندوستان اور پاکستان کی افواج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا جس میں سرحد کے اس پار کچھ رہائشی ڈھانچوں کو نقصان پہنچنے اور کئی مویشیوں کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے منگل کی صبح ضلع پونچھ میں ایل او سی کے بالاکوٹ سیکٹر میں ہندوستانی فوج کی چوکیوں اور آبادی والے علاقوں کو نشانہ بناکر فائرنگ کی اور مارٹر گولے داغے۔ انہوں نے کہا کہ ایل او سی کی حفاظت پر مامور فوجی اہلکار پاکستانی فائرنگ اور مارٹر شیلنگ کا موثر اور منہ توڑ جواب دے رہے ہیں۔  

راجوری پونچھ کے کئی سیکٹروں میں گولہ باری

راجوری //راجوری اور پونچھ کے کئی سیکٹروں میں ہندوپاک افواج کے درمیان شدید فائرنگ اورگولہ باری کاتبادلہ ہوا۔سرکاری ذرائع نے بتایاکہ جمعہ کی صبح ساڑھے 3بجے جب لوگ سحری کھانے میں مصروف تھے ، اچانک سے کرشنا گھاٹی پونچھ سیکٹر میں فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ شروع ہوگیا ۔ذرائع نے بتایاکہ اس دوران منکوٹ سمیت چار گائوں اس گولہ باری کی زد میں آئے اور یہ سلسلہ لگ بھگ پانچ گھنٹوں تک جاری رہا۔اسی طرح سے صبح 8بجے سے راجوری کے نوشہرہ کے کلال ، بابا کھوڑی، کلسیاں، جھنگڑ اور سریا علاقوں میں بھی فائرنگ اور گولہ باری شروع ہوگئی ۔ذرائع نے بتایاکہ پاکستانی فوج کی طرف سے اشتعال انگیز فائرنگ اور گولہ باری کی گئی جس کا بھرپور جواب دیاجارہاہے ۔جموں میں مقیم دفاعی ترجمان لیفٹنٹ کرنل دیوندر آنند نے بتایاکہ راجور ی اور پونچھ میں پاکستان نے اشتعال انگیز فائرنگ اور گولہ باری کی جس کا جواب دیاجارہاہے۔  

یوم القدس پر جموں ، پونچھ اور منڈی میں پُرامن احتجاج

منڈی+پونچھ+جموں//ماہ رمضان کے آخری جمعہ کے موقعہ پر مظلوم فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے یوم القدس پر جموں کے کربلا کمپلیکس اور پونچھ کے صدر مقام پرپُرامن احتجاج اور احتجاجی اجلاس منعقد ہوا جس میں مقررین نے قبلہ اول بیت المقدس کی بازیابی کیلئے آواز بلند کی گئی۔ماہ رمضان کی آخری جمعہ کے موقعہ پر مظلوم فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کے لئے انجمن امامیہ جموں کے کربلا کمپلیکس میںایک  پرامن احتجاج منعقد ہوا۔ حکومت کی جانب سے وبائی مرض کے دوران جاری کردہ ایڈوائزری کو مدنظر رکھتے ہوئے احتجاج کے دوران تمام اصولوں کو مدنظر رکھا گیا۔احتجاج کا اہتمام القدس کے عالمی دن کے موقع پر کیا گیا ،جس کو پوری دنیا کے تمام مسلمان فلسطینیوں کے ساتھ ہمدردی اور یکجہتی کا اظہار کرنے کے لئے مناتے ہیں کیونکہ اسے امام خمینی نے 1978 میں مظلوم کے دن کے طور پر منانے اور مظلوم کے خلاف آواز اٹھانے کا اعلان کیا تھا

پونچھ اور راجوری میں ایل او سی پر آر پارگولہ باری

جموں// جموں وکشمیر کے پونچھ اور راجوری اضلاع میں جمعہ کی صبح لائن آف کنٹرول پر ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا۔ ایک دفاعی ترجمان نے بتایا کہ ضلع پونچھ کے کرشنا گھاٹی سیکٹر میں ایل او سی پرآج علی الصبح پاکستانی فوج نے جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہندوستانی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری شرع کردی۔ انہوں نے کہا کہ وہاں تعینات بھارتی فوج نے حملے کا بھر پور جواب دیا۔  

مغل شاہراہ قابل آمد و رفت بنانے کیلئے 16دنوں سے کام بند

سرنکوٹ// راجوری پونچھ کوکشمیر سے جوڑنے والی مغل شاہراہ سے برف ہٹانے کاعمل پچھلے 16 دنوں سے معطل ہے اور کورونا وائرس کے چلتے آئندہ ایک ماہ تک سڑک کی بحالی کا کوئی امکان دکھائی نہیں دے رہا ہے۔شاہراہ کے آخری حصے پر اب صرف دو کلو میٹر کا علاقہ برف تلے ڈھکاہواہے جبکہ دیگر حصے سے برف ہٹادی گئی ہے لیکن کورونا وائرس کے پیش نظر کام ٹھپ ہوکر رہ گیاہے۔قابل ذکر ہے کہ مغل روڈ سرنکوٹ بفلیاز سے لیکر ہیر پور تک کل 84 کلو میٹر ہے جبکہ سرنکوٹ کی طرف سے 41 کلو میٹر شاہراہ سے برف صاف کی گئی ہے۔امسال 18 مئی کو کھولنے کا ہدف رکھاگیاتھا لیکن کورونا نے نظام زندگی ہی مفلوج کر دیا اوراس سے ایک خطے کے دوسرے خطے کے ساتھ روابط متاثر ہوئے ہیں۔ایڈووکیٹ یاسر خان جنجوعہ کا اس حوالہ سے کہناہے کہ مغل شاہراہ بند ہونے کی وجہ سے لوگوں کو نقصان ہو رہا ہے،خاص طور پر کشمیر کے مختلف کالجوں اور یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم طلاب

راجوری میں ایل او سی پر ہند پاک افواج کے مابین گولہ باری

جموں//جموں و کشمیر کے ضلع راجوری کے سندربنی سیکٹر میں لائن آف کنٹرول پر منگل کو ہندوستان اور پاکستان کی فوج کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری کا تبادلہ ہوا۔ ایک دفاعی ترجمان نے بتایا کہ راجوری کے سندربنی سیکٹر میں ایل او سی پر منگل کی صبح قریب ساڑھے سات بجے پاکستانی فوج نے ایک بار پھر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ہندوستان کی چوکیوں کو نشانہ بنا کر گولہ باری شروع کی۔ انہوں نے کہا کہ وہاں تعینات فوجی اہلکار اس حملہ کا بھر پور جواب دے رہے ہیں۔  

پونچھ میں آ رپار گولہ باری

پونچھ //پونچھ میں لگاتار دوسرے روز بھی ہندوپاک افواج کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری کا تبادلہ ہوا،تاہم اس دوران کسی طرح کے جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ۔سرکاری ذرائع نے بتایاکہ پیر کی شام 7بجے پاکستانی فوج کی طرف سے بھارتی فوج کی چوکیوں اور رہائشی علاقوں پر اندھادھند فائرنگ وگولہ باری کی گئی جس کا بھارتی فوج نے بھی بھرپور جواب دیا ۔ذرائع نے بتایاکہ آخری اطلاعات ملنے تک فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ جاری تھا لیکن کسی طرح کے جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ۔  

مہاراشٹر سے اترپردیش جا رہے 7 مزدوروں کی سڑک حادثہ میں موت، 40 سے زائد زخمی

گنا// مدھیہ پردیش کے ضلع گنا کے صدرمقام کے نزدیک با ئی پاس شاہراہ پر بس اور کنٹینر کی ٹکر کی وجہ سے سات مزدوروں کی موت ہو گئی اور 40 سے زائد زخمی ہو گئے۔ یہ مزدوراترپردیش کے رہنے والے ہیں، جو مہاراشٹر سے اپنے گھر واپس لوٹ رہے تھے۔ پولیس ذرائع کے مطابق علی الصبح پیش آئے اس حادثے میں کنٹینر میں سوار مزدوروں کی موت ہو گئی۔ زخمیوں کو یہاں ضلع اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔ ذرائع نے کہا کہ کینٹ تھانہ علاقے میں صبح تقریبا تین بجے یہ حادثہ اس وقت پیش ا?یا جب مزدوروں کو لے جا رہے کنٹینر کی مخالف سمت سے ا?نے والی بس سے ٹکر ہو گئی۔ بتایا گیا ہے کہ کنٹینر مہاراشٹر سے اترپردیش کے ضلع اناو¿کی طرف جا رہا تھا۔ ہلاک شدگان کی شناخت ابراہیم، اجیت، ارجن، وسیم، رمیش اور سدھیر کے طور پر ہوئی ہے۔ ایک کی شناخت فوری طور پر نہیں کی جا سکی۔ زخمی زیر علاج ہیں اور ضلع انتظامیہ نے اترپردیش حکومت سے

مینڈھر ہسپتال میں ڈاکٹروں کی کمی | حاملہ خواتین مشکلات سے دوچار

مینڈھر //سب ضلع ہسپتال مینڈھر میں ماہر ڈاکٹروں کی اسامیاں خالی ہونے کی وجہ سے مشکل وقت میں بھی مریضوں کو دیگر ہسپتالوں میں منتقل کرنے کیلئے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔اس وقت سب ڈسٹر کٹ ہسپتال میں گائنا کالوجسٹ ،بچوں کے ماہر ڈاکٹر کیساتھ ساتھ گزشتہ کئی عرصہ سے اینستھیزیا ماہر کی اسامیاں خالی پڑی ہوئی ہے جبکہ لاک ڈائون کے دوران حاملہ خواتین کو کچھ حد تک ایمبولینس گاڑیوں کی مدد سے راجوری اور پونچھ کے ہسپتالوں میں منتقل کیا جاتا ہے لیکن بچوں ودیگر مریضوں کی ہسپتالوں میں منتقلی کیلئے کئی دنوں تک لوگوں کو ٹھوکریں کھانی پڑرہی ہیں ۔مکینوں نے بتایا کہ حاملہ خواتین کو مینڈھر سے راجوری اور پونچھ منتقل کرنے کیلئے انتظامیہ کی جانب سے حالانکہ ایمبولینس فراہم کی جارہی ہیں تاہم اس کے باوجود بھی دیہات میں اس عمل پر اس وقت چلنا انتہائی مشکل ہے ۔انہوں نے بتایا کہ بیمار چھوٹے بچوں کی امراض کا ماہ

پونچھ سیکٹر میں گولہ باری

جموں // فوج کے دفاعی ترجمان نے کہا ہے کہ پاکستانی فوج نے جموں و کشمیر کے پونچھ ضلع میں لائن آف کنٹرول کے نزدیک فائرنگ  اور مارٹر شلنگ کی ، تاہم کوئی نقصان نہیں ہوا۔ ترجمان نے بتایا کہ سیز فائر کی خلاف ورزی کا یہ واقع دیوگر سیکٹر میں ہوا اور بھارتی فوج بہترین انداز میں جواب دے رہی ہے۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ سنیچر کی صبح 7بجکر 30منٹ پر پاکستانی فوج نے بغیر کسی اشتعال انگیزی کے سیز فائر کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دیگوار سیکٹر میں شلنگ  اور چھوٹے ہتھیاروں سے فائرنگ کی۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ گولی باری کا سلسلہ جاری ہے لیکن ابتک کسی جانی نقصان کی کوئی خبر نہیں ہے‘‘۔  

کیرنی سیکٹر میں آرپارگولہ باری

 سرینگر//بھارت نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان کی طرف سے بھارتی چوکیوں پر بلااشتعال فائرنگ کا جواب دیتے ہوئے اُس نے چار پاکستانی فوجی ہلاک کئے۔جمعہ کو ضلع پونچھ میں حدمتارکہ پر پاکستان اور بھارتی افواج کے مابین گولہ باری کا شدید تبادلہ ہواجس دوران چار پاکستانی فوجی اہلکار ہلاک ،جبکہ کئی ایک زخمی ہوئے اور نصف درجن رہائشی ڈھانچوں کو نقصان پہنچا ۔ خبررساں ایجنسی سی این آئی کے مطابق ہندوپاک سرحدوں پر جمعہ کو  مسلسل چھٹے روز دونوں  ملکوں کی افواج نے ایک دوسرے کی چوکیوں پراپنی بندوقوں کے دہانے کھولے ۔ صوبہ جموں کے شاہ پور کیرنی سیکٹر میں صبح پاکستانی فوج نے بھارتی فوجی چوکیوں کو نشانہ بناتے ہوئے جدیدترین ہتھیاروں سے گولہ باری کی ۔ دفاعی ذرائع نے اس حوالے سے کہا کہ بدھ کو دو دنوں کی خاموشی کے بعد پاکستانی فوج نے بلا اشتعال بھارتی فوجی چوکیوں کونشانہ بناکر جدید ترین ہتھیاروں سے گولہ

پونچھ میں حدمتارکہ پر آر پار گولہ باری سے خوف و دہشت

سرینگر//حد متارکہ پر ہند و پاک افواج کے درمیان کشیدگی برقرار ہے اور جمعرات کو بھی دو ایٹمی ممالک کی افواج کے مابین 3 سیکٹروں میںشدیدگولہ باری کی وجہ سے سرحدی آبادی میں رہائش پذیر لوگوں میں خوف وہراس کی لہر دوڑ گئی۔ جمعرات کی صبح11بجے ہند وپاک افواج کے درمیان پونچھ کے3سیکٹروں قصبہ ،شاہپور اور کیرنی میں شدید گولہ باری کا تبادلہ شروع ہوا جو وقفے وقفے سے سہ پہر4بجے تک جاری تھی ۔گولہ باری کے نتیجے میں سرحدی ضلع پونچھ کے مذکورہ تین سیکٹروں کے کئی دیہات اسکی زد میں آگئے ،تاہم کسی جانی ومالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیںہے ۔تاہم قصبہ سیکٹر میں متعدد افراد آہینی زد میں آکر زخمی ہوئے ۔جموں میں مقیم دفاعی ترجمان کرنل دیویندر آنند نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے جمعرات کو ایک مرتبہ پھر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی ،جس کا بھر پو ر اور معقول جواب دیا گیا ۔ان کا کہناتھا کہ رواںبرس یکم جنوری سے اب پاکس

ریاسی کے پہاڑوں پر تازہ برفباری،سردی میں اضافہ

مہور//ریاسی ضلع کے پہاڑوں پر بدھ کے روز تازہ ہلکی برفباری ہوئی ،جس کے بعد علاقہ میں ایک بار پھر سے سردی شروع ہو گئی۔واضع رہے کہ اس موسم میں لوگ ڈھوکوں میں رہائش پذیر ہوتے ہیں اور بکروالوں کا بھی اس موسم میں پہاڑوں سے گزرنا ہوتا ہے لیکن برف گرنے کے باعث پہاڑوں پر شدید سردی پڑ گئی ہے ،جس کی وجہ سے ان لوگوں کو کافی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔البتہ اس دوران کسی بھی پہاڑی علاقہ سے کوئی نقصان کی اطلاع موصول نہیں ہوئی ہے۔  

بکروال کنبوں پراُُفتاد | آسمانی برق اور طوفان سے 167بھیڑ بکریاں ہلاک

راجوری //3بکروال کنبوں کو اس وقت لاکھو ں روپے مالیت کا نقصان اٹھاناپڑ اجب راجوری میں آسمانی برق اور طوفان کی زد میں آکر ان کی 167بھیڑ بکریاں ہلاک ہوگئیں ۔تین بکروال کنبے شاہجاں اور غلام رسول پسران محمد اسرائیل ساکن پنجہ کالاکوٹ اور اختر علی ولد شاہ نور عالم ساکن ڈگانی راجوری اپنی بھیڑ بکریاں لیکر موسمی ہجرت کے تحت کشمیر کی پہاڑیوں کی طرف روانہ تھے کہ گزشتہ رات پوٹھہ گائوں میں قیام کے دوران ساڑھے 12بجے اچانک سے آسمانی برق گرا اور طوفان آیا جس کی زد میں آکر 167بھیڑ بکریاں ہلاک ہوگئیں ۔دریں اثناء منگل کی صبح محکمہ شیپ ہسبنڈری کی ٹیم موقعہ پر پہنچی اور نقصانات کا جائزہ لیا ۔بعد ازآں ڈپٹی کمشنر راجوری محمد نذیر شیخ بھی پوٹھہ گائوں پہنچے اور وہ متاثرین کے ساتھ بھی ملے ۔انہوں نے موقعہ پر ہر ایک کنبے کو 50ہزار روپے کا چیک ریڈ کراس فنڈ سے فراہم کیا اور متعلقہ حکام کو ہدایت جاری کی کہ وہ ن

دو محکموں کے درمیان تال میل کا فقدان | حاجن صدرکوٹ سڑک ناقابل آمدورفت

سوناواری //سوناواری میں جہلم کے کنارے حاجن صدرکوٹ سڑک کے پستے ڈہہ جانے سے ناقابل استعمال بن گئی ہے ۔اگرچہ فلڈ اینڈارگیشن محکمہ نے پھر سے بنڈ تعمیر کرنے کی شروعات کی تھی تاہم بنگرمحکمہ جل شکتی نے پایپ لائن بچھانے کیلئے سڑک کو بیچوں بیچ اکھاڑنا شروع کیاجس کی وجہ سے یہ سڑک مزید تباہ ہوکر ناقابل استعمال بن گئی۔اس طرح صدرکوٹ،بانڈی پورہ،مغدم یاری ، بانیاری ، پرنگ اورمدون علاقوں کو حاجن سے ملانے والی واحد رابطہ سڑک پر عبور و مرورکسی عذاب سے کم نہیں ۔واضح رہے کہ سال 1994 میں پہلی مرتبہ اس سڑک کا ایک کنارہ جہلم کی طرف سے ڈہہ گیا تھا اورپھر ایک مضبوط بنڈ بھی تعمیر کیا گیا تھا۔سال 2014 میں پھر سے یہ سڑک کھسکنے لگی تھی اوراب بڑی مشکل سے باندھ تعمیر کرنے کا عمل شروع ہوچکا تھا لیکن اچانک محکمہ جل شکتی کے اہلکاروں نے پھر سے سڑک کو اکھاڑنا شروع کیا۔اس بارے میں محکمہ تعمیرات عامہ کے چیف انجینئر سمیع عا

راجوری کے متعدد سیکٹروں میں گولہ باری

راجوری //حد متارکہ پر ہند و پاک افواج کے درمیان کشیدگی برقرار ہے اور پیر کے روز بھی گولہ باری کا سلسلہ جاری رہا۔ اتوار اور پیر کی درمیانی شب راجوری کے لگ بھگ دس گائوں اس گولہ باری کی زد میں آئے تاہم خوش قسمتی سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔سرکار ی ذرائع نے بتایاکہ رات 10بجے کے قریب راجوری کے ترکنڈی، ویر بڈیشوراور منجاکوٹ و پونچھ کے بالاکوٹ علاقوں میں فائرنگ و گولہ باری شرو ع ہوئی اوراس دوران ویربڈیشور، رتل، بسالی، چٹی بکری، نمبلاں، شرما بستی، نائیکہ، پنج گرائیں، پریالی، سرولہ، منگلناڑ، راجدھانی و دیگر کچھ علاقے اس کی زد میں آئے ۔ ذرائع نے بتایاکہ یہ سلسلہ لگ بھگ چھ گھنٹوں تک جاری رہا اورصبح ہونے پر کشیدگی تھم گئی ۔ذرائع نے بتایاکہ نائیکہ پنج گرائی اور پریالی میں رہائشی آبادی بھی گولہ باری کی زد میں آئی تاہم خوش قسمتی سے کوئی جانی نقصان نہیںہوا اور گولے مکانات کے گرد گرتے رہے ۔محکمہ ما

دراس میں بر فانی تودا گر آیا

کنگن// دراس میں برفانی تودے کی زد میں آکر ایک گاڑی کا کنڈیکٹر لقمہ اجل بن گیا۔ پولیس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سونہ مرگ سے کرگل جارہی سبزی سے لدھی ہوئی 709گاڑی زیر نمبر JK16/9189شیطانی نالہ دراس کے مقام پر برفانی تودہ کی زد میں آکر ایک سو فٹ نیچے کھائی میں جاگری جس کے نتیجے میں گاڑی کا ڈرائیور اور کنڈیکٹر برف کے نیچے دب گئے۔ اطلاع ملتے ہی ایس ایچ او دراس اپنی ٹیم کے ہمراہ جائے حادثے پر پہنچ گئے اور بچاؤ کارروائی شروع کردی۔ ایس ایچ او دراس منظور حسین میر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ حادثے میں کنڈیکٹر توصیف احمد میر ولد غلام محمد میر ساکن آری گوری پورہ گاندربل لقمہ اجل بن گیاجبکہ بشیر احمد لون ولد غلام احمد لون کو 90فٹ برف کے نیچے سے نکال کر دراس ہسپتال پہنچایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اس کی حالت بہتر بتائی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اسے مزید علاج و معالجہ کے لئے کرگل ہسپتال منتقل کیا جارہا ہے۔

منجاکوٹ اور بالاکوٹ میں بھاری شلنگ | راجوری میں فوجی اہلکار حادثہ میں ہلاک

مینڈھر+منجاکوٹ//پونچھ کے بالاکوٹ اور راجوری کے منجاکوٹ سیکٹروں میں ہندوپاک افواج کے درمیان شدید فائرنگ اور گولہ باری ہورہی ہے ۔ اتوار کی رات 9بجے دونوں ممالک کی افواج کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری کا سلسلہ شروع ہواجو آخری اطلاعات ملنے تک جاری تھا۔ مقامی ذرائع نے بتایاکہ شدید گولہ باری کی جارہی ہے اور پورا علاقہ اس کی زد میں ہے ۔تاہم ابھی تک کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی ۔ادھرراجوری کے ایک ٹریننگ سکول میں فوجی اہلکار حادثاتی طورپر لقمہ اجل بن گیا ۔فوج کے مطابق فوج کے سی بی سکول میں فوجی اہلکار معمول کے کام کاج میں مصروف تھے تاہم اسی دوران مذکوراہلکار ایک فوجی گاڑی کی زد میں آکر شدید زخمی ہو گیا ۔زخمی جوان کو نازک حالت میں فوجی ہسپتال میں منتقل کیا گیا جہاںوہ زخمیوں کی تاب نل لاتے ہوئے چل بسا ۔غور طلب ہے کہ مذکورہ اہلکار سی بی سکول میں زیر تربیت تھا تاہم پولیس نے اس سلسلہ میں ایک ک

مینڈھر سیکٹر میں آر پار گولہ باری

مینڈھر //مینڈھر میں آر پار گولہ باری اور فائرنگ کے نتیجہ میں 17سالہ نوجوان کی ہلاکت ہوگئی جبکہ اس کا بڑا بھائی زخمی ہواہے۔ہندوپاک افواج کے درمیان فائرنگ اور گولہ باری کا تازہ سلسلہ جمعرات کی شام ساڑھے 6بجے شروع ہواجو آخری اطلاعات موصول ہونے تک جاری تھا ۔اس کشیدگی کے نتیجہ میں 17سالہ گلفراز احمد ولد محمد رشید ساکن ٹائیں منکوٹ لقمہ اجل بن گیا ۔گلفراز شام کے وقت اپنے گھر کے باہر تھاکہ اچانک ایک مارٹر گولہ اس کے قریب آن گراجس کی زد میں آکر وہ لقمہ اجل بن گیا۔اسی دوران بھائی کو خون میں لت پت دیکھ کر بڑا بھائی اسے اٹھانے کیلئے دوڑا جو دوسرے مارٹر گولے کی زد میں آکر زخمی ہواتاہم خوش قسمتی سے اس کی حالت مستحکم بتائی جارہی ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایاکہ شام کے وقت جب وہ افطاری کی تیاری میں مصروف تھے تو گولہ باری اور فائرنگ شروع ہوگئی جس دوران کئی مارٹر گولے رہائشی علاقوں میں گرے اوراسی کے نتیج

۔88درماندہ طلباء و مزدور رواجور ی وارد

راجوری //ملک کی مختلف ریاستوں میں درماندہ راجوری ضلع کے 88طلباء و مزدوری پیشہ افراد گزشتہ 48گھنٹوں میں راجوری پہنچے ہیں جن کو قرنطینہ مراکز میں زیر نگرانی رکھا گیاہے ۔راجوری واپس پہنچے افراد میں 75مزدور اور 13طلباء شامل ہیں ۔راجوری پہنچنے والے تمام طلباء ریاست راجستھان کے کوٹہ ضلع میں زیر تعلیم تھے ۔ان طلباء کو کوٹہ ضلع سے ہی واپس لایا گیا جبکہ مزدور وں میں سے زیادہ تر لکھن پور خود پہنچے تھے جہاں پر ان کو زیر نگرانی رکھا گیا تھا ۔سرکاری ذرائع کے مطابق طلباء کو ایس آر ٹی سی بسوں کے ذریعہ راجوری منتقل کیا گیا جبکہ بعد بدھ شام کو ہی مزدور وں کو لے کر مذکورہ گاڑیاں راجوری پہنچی ۔ضلع ترقیاتی کمشنر راجوری محمد نذیر شیخ نے بتایا کہ مختلف ریاستوں میں راجوری ضلع سے گئے ہوئے 75مزدور واپس پہنچے ہیں جبکہ ان سبھی کو قرانطینہ مراکز میں منتقل کر دیا گیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ ضلع کے درماندہ سبھی افرا

تازہ ترین