تازہ ترین

سابق ایم ایل سی یشپال شرما کا انتقال

پونچھ// پونچھ کے نامور لیڈر اور سابقہ قانون ساز کونسل یشپال شرما حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے اس دنیا کو خیر آباد کہہ گیے ہیں۔    خاندانی زراع کے مطابق یشپال شرما کی موت  سنیچر اور اتوار کی درمیانی رات کو اچانک حرکت قلب بند ہونے کی وجہ سے پونچھ میں واقع ہویی ہے۔    یشپال شرما کا تعلق جموں کشمیر پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی سے تھا اور ان کی عمر 76 سال کے قریب بتاٸی جا رہی ہے۔     یشپال شرما کو شیرِ پونچھ کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔

خطہ پیر پنچال کی شاعرہ کے شعری مجموعہ’اضطراب‘ کی رسم رونمائی

راجوری // خطہ پیر پنچال سے تعلق رکھنے والی اردو کی معروف شاعرہ روبینہ میر کے پانچویں شعری مجموعہ ’اضطراب‘ کی رسم رونمائی ان کے والدین کے ہاتھوں سے ان ہی کے گھر راجوری میں سادگی کے ساتھ انجام دی گئی۔ روبینہ میر کے والد میر عبد السلام راجوری اردو کے معروف صحافی ہیں ۔وہ ہفت روزہ آئینہ قلب کے مدیر اعلیٰ ہیں ۔روبینہ میر کی والدہ ظریفہ بیگم خاتون خانہ ہیں۔ رسم رونمائی کے دوران روبینہ میر نے بتایا ’’ میں جو کچھ بھی ہوں اپنے والدین کی وجہ سے ہوں اور ان کے سائے میں رہ کر میں نے یہ مقام حاصل کیا ‘‘۔انہوں نے کہا کہ ’’میرے والد نے ہمیشہ میری حوصلہ افزائی کی اورمیرے والدین میرے گلشنِ حیات میں بہار ہے۔جو دنیا میں میرے لئے نعمت ، راحت و فرحت اور آخرت میں بخشش کا وسیلہ ہیں یعنی میری دنیا بھی انہی سے ہے اور میری آخرت میں جنت کا سامان بھی یہی ہیں اور یہ

کشمیر یونیورسٹی میں 5روزہ

سرینگر//کشمیر یونیورسٹی میں ہفتہ کو تحقیقی طریقہ کار پر ایک آن لائن ورکشاپ اختتام پذیر ہوا۔پانچ روزہ ورکشاپ کا اہتمام جامعہ کے شیخ العالم سینٹر فار ملٹی ڈسپلنری اسٹڈیز (SACMS) نے ابن عربی سوسائٹی کشمیر کے تعاون سے کیا تھا تاکہ ہیومینٹیز اور سوشل سائنسز کے شعبوں کے نوجوان اسکالرز کی مدد کی جا سکے۔ان کی تحقیقی صلاحیتیں اور تحقیق پر ان کے نقطہ نظر کو وسیع کریں۔چیئرمین ایس اے سی ایم ایس پروفیسر جی این خاکی نے ورکشاپ کا افتتاح کیا اور مقررین، مہمانوں اور شرکاء کا خوش آمدید کیا۔ انہوں نے ورکشاپ کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالی۔ورکشاپ کے دوران آن لائن لیکچر دینے والے نامور مقررین میں پروفیسر فریدہ خان، سابق پروفیسر اور ڈین، فیکلٹی آف ایجوکیشن، جامعہ ملیہ اسلامیہ؛ پروفیسر ستیش دیشپانڈے، سوشیالوجی کے پروفیسر، دہلی اسکول آف اکنامکس؛ پروفیسر اوما چکرورتی، سابق تاریخ کی پروفیسر، دہلی یونیورسٹی

راجور ی اور پونچھ کے میدانی علاقوں میں بارشیں جبکہ بالائی علاقوں میںبرف باری ،سردی کی شدت میں اضافہ

پونچھ +راجوری //محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے عین مطابق جموں وکشمیر کے دیگر حصوں کیساتھ ساتھ خطہ پیر پنچال کے میدانی علاقوں میں بارشیں جبکہ بالائی علاقوں میں ہلکی برف باری ہوئی۔ خطہ کے بالائی علاقوں میں مسلسل برفباری ہو رہی ہے جبکہ میدانی علاقوں میں ہورہی بارش کی وجہ سے سردی کی شدت میں بھی اضافہ ہو گیا ہے ۔سرحدی ضلع پونچھ میں برف و باری و بارش کا سلسلہ حتمی اطلاعات موصول ہونے تک جاری تھاجس سے مختلف کچی رابطہ سڑکوں میں نقل کی نقل و حرکت بھی متاثر ہوئی ہے ۔محکمہ موسمیات کی پیش گوئی کے عین مطابق جموں کشمیر کے دوسرے اضلاع کی طرح پونچھ ضلع کے بالائی علاقوں میںکہیں کہیں کئی کئی برف جمع ہوئی ہے۔تحصیل مینڈھر کے شاہستار،بالاکوٹ،بھمبر گلی،سنگیوٹ و دیگر علاقہ جات میں بالائی علاقوں میں ہلکی برف کی وجہ سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوا ہے۔سب ڈویژ ن میں شدید بارش رہی ۔کچی سڑکیں بند ہوگئی ہیں جبکہ تحصیل سر

دونوں سرحدی اضلاع میں بجلی کی سپلائی کئی گھنٹوں متاثر رہی

پونچھ +راجوری //خطہ پیر پنچال میں شروع ہوئی تازہ برفباری و بارش کے دوران دونوں سرحدی اضلاع میں بجلی کی سپلائی متاثر ہوئی گئی ہے ۔سرحدی ضلع پونچھ میں کئی گھنٹوں سے بجلی سپلائی متاثر ہونے سے عوام پونچھ کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔بجلی بند ہونے سے ضلع کے مختلف علاقوں میں لوگوں کو طوفانی برف باری کے دوران شدید سردی کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔مکینوں انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ بجلی کا سپلائی نظام اس قدر خستہ ہو چکا ہے کہ موسم خراب ہوتے ہے سپلائی بند کر دی جاتی ہے ۔مقامی لوگوں نے کہا کہ لاک ڈون کے دوران بجلی سپلائی نہ ہونے سے گھروں میں مقید لوگوں کو کافی دشواری پیش آرہی ہے۔انھوں نے کہا کہ بجلی سپلائی نہ ہونے سے گھر وں کی موٹرین بند ہو گئی ہیں جس کی وجہ سے گھر کی چھتوں پر رکھی گئی ٹینکیاں خالی پڑی ہوئی ہیں ۔اس ضمن میں بجلی محکمہ کے افسران نے بتایا کہ بارش اور برفباری کی

کئی سڑکوںپر گاڑیوں کی آمدورفت متاثر

راجوری//جڑواں اضلاع راج پور اور پونچھ کے کئی علاقوں میں ہفتہ کو تازہ برف باری ہوئی جس سے کچھ علاقوں میں ٹریفک بری طرح متاثر ہوئی۔عہدیداروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ راجوری ضلع کے بالائی علاقوں میں ہفتہ کی صبح تازہ برف باری شروع ہوئی اور دیر شام تک جاری رہی۔انہوں نے بتایا کہ بالائی علاقوں میں کئی سڑکیں برف باری کی وجہ سے بند ہوگئیں جس کی وجہ سے ا ن اہم سڑکوں پر گاڑیوں کی آمدورفت بھی متاثر ہوئی۔حکام نے بتایا کہ ’برفباری کی وجہ سے راجوری کوٹرنکہ بدھل سڑک  مندر گالا سے بدھل تک آمد ورفت کیلئے بند ہو گئی ہے ۔انہوں نے بتایا کہ راجوری کوٹرنکہ بدھل روڈ پر مندر گالا اور کنڈی گالا کے درمیان سڑک پر ایک فٹ سے زیادہ تازہ برف باری ہوئی ہے۔اسی طرح تھنہ منڈی ڈی کے جی بفلیاز روڈ پر گاڑیوں کی آمدورفت بھی ہفتہ کی دوپہر ڈی کے جی میں تازہ برف باری کی وجہ سے متاثر ہوئی۔تازہ برف باری کی وجہ سے

کووٖڈکے پیش نظر راجوری، پونچھ میں’ ویک اینڈ لاک ڈاؤن‘ جاری

راجوری//کورونا وائرس کے پیش نظر جموں وکشمیر کے دیگر حصوں کیساتھ ساتھ راجوری پونچھ اضلاع میں بھی انتظامیہ کی جانب سے عائد کر دہ پابندیاں مسلسل جاری ہیں ۔خطہ میں نافذ’ ویک اینڈ لاک ڈاؤن‘ دوسرے دن بھی جاری رہا جس میں ضروری نوعیت کی دکانیں اور دیگر ضروری خدمات کی اجازت دی گئی تھی اور غیر ضروری نقل و حمل و خدمات پر پابندی تھی۔راجوری اور پونچھ دونوں اضلاع میں ہفتے کے آخر میں ’لاک ڈاؤن‘ دوپہر 2 بجے سے نافذ کیا گیا تھا۔ جمعہ کی سہ پہر سے شروع ہو کر ہفتہ کو دوسرے دن جاری رہا۔عہدیداروں نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہفتہ کو صرف ضروری خدمات کی اجازت دی گئی تھی اور ضروری اشیاء کی دکانوں کو کھولنے کی اجازت دی گئی تھی جبکہ غیر ضروری خدمات اور نقل و حرکت کی اجازت نہیں دی گئی ۔ان کا کہنا تھا کہ سول انتظامیہ اور پولیس کی خصوصی ٹیمیں ویک اینڈ لاک ڈاؤن کے مناسب نفاذ کو یقینی بنانے

۔400کے وی ٹرانسمیشن لائن کے 12ٹاوروں کو خطرہ لاحق

 تھنہ منڈی // سب ڈویژن تھنہ منڈی کے منہال علاقے میں 400 کے وی سپلائی لائن کے متعدد ٹاور عوام کیلئے ایک بڑا خطرہ بن گئے ہیں ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ سڑک کی کشادگی کی وجہ سے زد میں آئے 12سے زائد ٹاور ملحقہ علاقوں میں رہائش پذیر لوگوں کیلئے ایک بڑا خطرہ بنتے جارہے ہیں جبکہ منیال علاقہ میں آئی پسی کی وجہ سے 2سے 3رہائشی گھر وں کو شدید خطرہ جبکہ 15سے 20گھروں سے لوگ نقل مکانی کرنے پر مجبور ہو گئے ہیں ۔مقامی ذرائع نے بتایا کہ کئی برس قبل ایک نجی کمپنی کی جانب سے نصب کئے جانے والے ٹاوروں کے سلسلہ میں ایک حکم نامہ جاری کیا گیا تھا جس کے تحت اس ٹرانسمیشن لائن کو غیر آباد علاقوں سے لے جانے کی ہدایت جاری کی گئی تھی لیکن اس وقت کمپنی نے حکم نامے کو یکسر نظر انداز کرتے ہوئے گنجان آبادی والے علاقوں میں ہی ٹاور نصب کر دئیے اور اب تھنہ منڈی اور بفلیاز سڑک کی کشادگی کی زد میں کئی ٹاور آسکتے ہیں

مزید خبریں

۔109نئے کووڈ کیس درج کئے گئے  سمت بھارگو  راجوری//پیر پنجال خطہ کے دونوں سرحدی اضلاع میں کووڈ کے مزید 109نئے کیس ریکارڈ کئے گئے ہیں ۔انتظامیہ کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق راجوری ضلع میں 59 افرامثبت پائے گئے جن میں دو مسافر اور 57 مقامی افرادشامل ہیں۔حکام نے بتایا کہ مہلوک وائرس میں مبتلا 40افراد صحتیاب بھی ہوئے ہیں جس کے بعد ضلع میں مثبت کیسوں کی کل تعداد 466 ہے۔اسی طرح ضلع پونچھ میں پچاس افراد کا کووڈ ٹیسٹ مثبت آیا ہے جو کہ سبھی مقامی افراد ہی ہیں ۔ضلع میں اس وقت کووڈ کے ایکٹو معاملات کی کل تعداد 328رہ گئی ہے ۔غور طلب ہے کہ انتظامیہ کی جانب سے دونوں سرحدی اضلاع میں جہاں بندشیں عائد رکھی گئی ہیں وہائیں لوگوں کے کووڈ ٹیسٹ بھی کئے جارہے ہیں تاکہ وائرس کا چین توڑنے میں مدد مل سکے ۔       پبلک سروس گارنٹی ایکٹ و حق اطلاعات قان