کورونا کے نئے 91 مثبت معاملات، مجموعی تعداد1759

 سرینگر// حکومت نے کہا ہے کہ پچھلے چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے91نئے مثبت معاملات سامنے آئے ہیںجن میں سے37کا تعلق کشمیر صوبے سے اور 54 کا تعلق جموں صوبے سے ہیں اور اس طرح مثبت معاملات کی کل تعداد1759تک پہنچ گئی ہے۔ حکومت کی طرف سے جاری کئے گئے روزانہ میڈیا بلیٹن میں بتایا گیا ہے کہ نوول کورونا وائرس کے1759 مثبت معاملات سامنے آئے ہیں جن میں سے 902سرگرم معاملات ہیں ۔ اب تک 833اَفراد شفایاب ہوئے ہیںاور24اَفراد کی موت واقع ہوئی ہے ۔ اِس دوران آج مزید24مزید مریض صحتیاب ہوئے ہیںجس میںجموں صوبے کے15 اور کشمیر صوبے کے 09 اَفراد شامل ہیں ، جن کو جموں و کشمیر کے مختلف ہسپتالوں سے رخصت کیا گیا۔ بلیٹن میں مزید کہا گیا ہے کہ اب تک 1,40,962ٹیسٹوں کے نتائج دستیاب ہوئے ہیں جن میں سے 26مئی 2020ءکی شام تک 1,39,203نمونوں کی رِپورٹ منفی پائی گئی ہے ۔

توسہ میدان میں دھماکہ، تین افراد زخمی

سری نگر//وسطی ضلع بڈگام کے کھاگ علاقہ میں واقع توسہ میدان میں ایک ان پھٹے بارودی شیل کے پھٹنے سے تین افراد زخمی ہوگئے ہیں جن میں سے ایک کی حالت تشویشناک بتائی جارہی ہے۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ توسہ میدان میں منگل کو دوپہر کے وقت پھٹنے سے رہ گئے ایک بارودی شیل کے اچانک پھٹنے سے تین افراد زخمی ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ زخمیوں کو قریبی پبلک ہیلتھ سینٹر میں فرسٹ ایڈ دینے کے بعد بہتر علاج ومعالجہ کے لئے سری نگر منتقل کیا گیا۔ یاد رہے کہ توسہ میدان1964سے 2014 تک فوج کا فائرنگ رینج تھا جس دوران یہاں دھماکوں کی وجہ سے70شہری جاں بحق جبکہ بیسیوں زخمی ہوگئے۔  

شمالی ضلع کپوارہ میں تلاشی آپریشن کے دوران دو یو بی جی ایل گرینیڈ بر آمد

سرینگر//سیکورٹی فورسز نے منگل کے روز شمالی کشمیر میں ضلع کپوارہ کے زونہ ریشی علاقے سے تلاشی آپریشن کے دوران دو یو بی جی ایل گرینیڈ بر آمد کئے۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق فوج اور پولیس کی ایک مشترکہ ٹیم نے زونہ ریشی گاﺅں کے چوپان محلہ کو مصدقہ اطلاع ملنے کے بعد محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ آپریشن کے دوران دو یو بی جی ایل گرینیڈ بر آمد کئے گئے۔    

کورونا وائرس مریضوں کے ایچ سی کیو تجربہ پر ڈبلیو ایچ او کی پابندی

جنیوا //عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کورونا وائرس کے مریضوں پر ہایڈرو کیمیکلو رو کوین (ایچ سی کیو) ادویہ کے تجربہ پرعارضی طور پر پابندی لگادی ہے۔ ڈبلیو ایچ او کے ڈائرکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیڈروس گیبرسس نے کو بتایا کہ تنظیم کے زیرانتظام 17 ممالک کے چار سو اسپتالوں میں کورونا کے مریضوں پر شروع کئے گئے’سالیڈریٹی ٹرائل‘کے ایگزیکٹیو گروپ کی سفارش پر یہ فیصلہ کیا گیا۔ ممتاز ہیلتھ میگزین ’لینسیٹ‘ میں گزشتہ جمعہ کو شائع ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ سالیڈریٹی ٹرائل کے تحت جن مریضوں کو یہ دوا انفرادی طور پر دی گئی تھی ان میں موت کی شرح زیادہ پائی گئی ہے۔ رپورٹ کا نوٹس لیتے ہوئے ایگزیکٹیو گروپ نے اس دوا کے اثرات کا مزید وسیع مطالعہ کرنے اور اس وقت تک اس کا استعمال روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔ٹیڈروس نے بتایا کہ سالیڈرٹی ٹرائل کے تحت 3،500 مریضوں پر چار ادویہ یا ادویہ کے کمبین

ملک میں کورونا کی سنگینی برقرار، متاثرین کی مجموعی تعداد 1.45 لاکھ

نئی دہلی// ملک میں کورونا وائرس کی سنگینی میں اضافہ ہوتاجارہاہے۔ اور اب یہ دنیا بھر میں انفیکشن کے سب سے زیادہ کیسز والے ممالک میں 10 ویں نمبر پر ہے۔  گزشتہ 24 گھنٹوں میں انفیکشن کے کیسوں میں اگرچہ جزوی کمی آئی ہے جبکہ اسی مدت 2770 لوگ ٹھیک ہوئے بھی ہیں جس سے اس بیماری سے نجات پانے والوں کی تعداد بڑھ کر 60 ہزار سے زائد ہو گئی۔ اس درمیان مہاراشٹر میں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد 52 ہزار سے زائد ہو گئی۔  مرکزی صحت اور خاندانی بہبود کی وزارت کی جانب سے منگل کی صبح جاری تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا وائرس کے 6535 نئے کیس سامنے آئے جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد 1,45,380 تک پہنچ گئی۔ فی الحال ملک میں کل 80،722 ایکٹیو کیسز ہیں۔ اس سے ایک دن پہلے 6977 اور اتوار اور ہفتہ کو بالترتیب 6767 اور 6654 نئے کیس سامنے آئے تھے۔  ملک میں کورونا انف

افغانستان میں عیدجنگ بندی کی مدت میں ایک ہفتہ کی توسیع

کابل// افغانستان میں عید الفطر کے موقع پر تین دن کی جنگ بندی کے بعد رپورٹوں کے مطابق اب ایک ہفتے تک کے لئے بڑھا دی گئی ہے۔ افغان خبررساں ایجنسی نے یہ اطلاع دی ہے۔ خبررساں ایجنسی پجووک نے حکومت اور طالبان کے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ طرفین جنگ بندی کے بعد ملک میں تشدد کو کم کرنا چاہتے ہیں۔ طالبان نے دراصل عید کے موقع پر اتوار کو تین دن کے لئے جنگ بندی کا اعلان کیا تھا جس کے بعد افغانستان کے صدر اشرف غنی نے اس اقدام کا خیر مقدم کرتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ طالبان قیدیوں کو رہا کرنے کے عمل میں تیزی لائی جائے گی اور جنگ بندی کے اعلان کے بدلے ایک مثبت اشارہ کے طور پر دو ہزار طالبان قیدیوں کو رہا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ قابل غور ہے کہ اس سال 29 فروری کو قطر کے دارالحکومت دوحہ میں امریکہ اور طالبان کے قیدیوں کو رہا کرنے اور قیام امن کے حوالہ سے معاہدہ ہوا تھا۔ (اسپوتنک) &n

شمالی کشمیر کے سوپور میں30سالہ نوجوان کی خود کشی

سرینگر//شمالی کشمیر کے سوپور میں گذشتہ رات دیر گئے ایک 30سالہ نوجوان نے مبینہ طورخود کو لٹکا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق مہاراج پورہ سوپور کے رہنے والے شہری نے مبینہ طور اپنے ہی گھر میں خود کو لٹکا کر خود کشی کی۔ گھر والوں نے اُسے سب ضلع اسپتال سوپور پہنچایا تھا تاہم وہاں ڈاکٹروں نے اُسے مردہ قرار دیا۔ پولیس نے خبر رساں ایجنسی کے این او کو اس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ اُنہوں نے مذکورہ نوجوان کی ہلاکت کے سلسلے میں تحقیقات شروع کی ہے۔  

جموں بین الاقوامی سرحد پر پکڑے گئے کبوتر کے بارے میں تحقیقات شروع

جموں//جموں وکشمیر کے ضلع کٹھوعہ میں بین الاقوامی سرحد کے نزدیک پکڑے گئے کبوتر کے پیر میں باندھی گئی رِنگ اور اس پر لکھے ہوئے اعداد کے بارے میں تحقیقات شروع کی گئی ہے۔ ایس ایس پی کٹھوعہ ڈاکٹر شیلندر کمار مشرا کا کہنا ہے کہ کبوتر کے پیر میں باندھی ہوئی رِنگ کے بارے میں تحقیقات کی جارہی ہے۔ انہوں نے میڈیا کو بتایا”ہمیں یہ معلوم نہیں کہ یہ کبوتر کہاں سے آیا، مقامی لوگوں نے اس کو سرحد کے متصل پکڑا، اس کے پیر کے ساتھ ایک رنگ بندھی ہوئی تھی جس پر کچھ اعداد لکھے ہوئے ہیں اس کے بارے میں تحقیقات کی جارہی ہے“۔  

پونچھ میں ایل او سی پر آر پارگولہ باری، رہائشی مکانات کو نقصان، کئی مویشی ہلاک

جموں//جموں وکشمیر کے ضلع پونچھ میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے بالاکوٹ سیکٹر پر منگل کی صبح ہندوستان اور پاکستان کی افواج کے درمیان گولہ باری کا تبادلہ ہوا جس میں سرحد کے اس پار کچھ رہائشی ڈھانچوں کو نقصان پہنچنے اور کئی مویشیوں کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔ دفاعی ترجمان نے بتایا کہ پاکستانی فوج نے منگل کی صبح ضلع پونچھ میں ایل او سی کے بالاکوٹ سیکٹر میں ہندوستانی فوج کی چوکیوں اور آبادی والے علاقوں کو نشانہ بناکر فائرنگ کی اور مارٹر گولے داغے۔ انہوں نے کہا کہ ایل او سی کی حفاظت پر مامور فوجی اہلکار پاکستانی فائرنگ اور مارٹر شیلنگ کا موثر اور منہ توڑ جواب دے رہے ہیں۔  

کولگام کا90سالہ شہری کورونا سے جاں بحق، جموں کشمیر میں تعداد24

سرینگر//جنوبی ضلع کولگام کا ایک شہری، جس کو کورونا وائرس کے انفکشن میں مبتلاءپایا گیا تھا ،منگل کی صبح جاں بحق ہوگیا۔ اس طرح جموں کشمیر میں کورونا ہلاکتوں کی تعداد24تک بڑھ گئی ہے۔ ضلع کے کھالورہ نامی گاوں کا 90سالہ شہری سکمز میں زیر علاج تھا جہاں آج صبح اُس نے آخری سانس لی۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس  نے پروفیسر فاروق جان کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ مذکورہ بزرگ شہری نمونیا میں مبتلاءتھا اور اُس کا کورونا ٹیسٹ گذشتہ روز مثبت آیا تھا۔  کورونا میں مبتلاءپانے کے بعد اُسے الگ تھلگ وارڈ میں منتقل کیا گیا تھا جہاں اُس نے وفات پائی۔  

تازہ ترین