تازہ ترین

بجبہارہ میں جنگجوﺅں کے حملے میں سی آر پی ایف اہلکار ہلاک

سرینگر//جنگجوﺅں کے ایک حملے میں منگل کو جنوبی کشمیر کے بجبہارہ قصبے میں ایک سی آر پی ایف اہلکار ہلاک ہوگیا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق سی آر پی ایف اہلکار،شیو لال نیتم جنگجوﺅں کی طرف سے پھینکے گئے گرینیڈ کی زد میں آگیا جس کی وجہ سے وہ زخمی ہوگیا۔ زخمی اہلکار کو اسپتال لیجایا گیا جہاں ڈاکٹروں نے اُسے مردہ قرار دیا۔  

کورونا : عید گاہ اور لال بازا ر کنٹین منٹ زون قرار دینے کے بعد سیل

سری نگر// سری نگر کے عیدگاہ اور لال بازار علاقوں کو آنے اور جانے والے تمام راستوں کومنگل کے روز سیل کیا گیا ۔اِن علاقوں کو سیل کرنے کا فیصلہ کورونا وائرس سے متاثرہ کئی اَفراد کے رِپورٹ موصو ل کرنے کے بعد لیا گیا۔  ضلع مجسٹریٹ سری نگر ڈاکٹر شاہد اِقبال چودھری ،جنہوں نے اِس سلسلے میں احکامات جاری کئے ، نے کہا کہ ان علاقوں کو سیل کرنے کا مقصد کورونا وائرس کی وَباءکو مزید پھیلنے سے روکنا ہے۔اُنہوں نے کہا کہ اس عمل سے ان علاقوں میں سروے کا کام بھی ممکن ہوجائے گا۔  اقبال چودھری نے کہا کہ سیل کئے گئے تمام علاقوں میں اشیائے ضروریہ و دیگر خدمات پہنچانے کے لئے باقاعدہ ایک منصوبے کی تشکیل یقینی بنائی گئی ہے۔اُنہوں نے کہا کہ سیلنگ آڈر پر سختی سے عمل آوری کے لئے باقاعدہ نگرانی عمل میں لائی جائے گی اور اِس کے علاوہ اِن علاقوں میں طبی ٹیموں کو بھی بھیج دیاجائے گا۔  شاہد اقب

جموں کشمیر میں کورونا وائرس کے مزید15کیس، ایکٹیو کیسوں کی تعداد118

سرینگر//جموں کشمیر میں منگل کے روز کورونا وائرس میں مبتلائ15مزید کیس سامنے آگئے۔سرکاری ترجمان روہت کنسل نے ایک ٹویٹ کرتے ہوئے بتایا کہ ان میں سے6کیس جموں صوبے میں جبکہ9کیس کشمیر صوبے میں سامنے آگئے ۔ روہت کنسل نے ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا”جموں کشمیر میں اب کورونا وائرس سے متاثرین کی تعداد125ہوگئی ہے، 118کیس ایکٹیو ہیں، جن میں جموں میں25اور کشمیر میں94کیس شامل ہیں، آج کشمیر میں9کیس سامنے آگئے اورجموں میں6 “۔ دریں اثناءحکام نے آج ہی سرینگر کے لالبازار اور عید گاہ علاقوں کو سیل کرکے لوگوں کے باہر یا اندر جانے پر مکمل پابندی عائد کردی۔سرکاری ذرائع نے کہا کہ یہ اقدام مذکورہ علاقوںمیں مہلک کورونا وائرس کے کئی کیس سامنے آنے کے بعد اٹھایا گیا ہے تاکہ اس وائرس کو پھیلنے سے روکا جاسکے۔  

سرینگر میں شب برات کے اجتماعات پر پابندی عائد

سرینگر//کورونا وائرس سے پیدا صورتحال اور جاری طبی ایمرجنسی کے نتیجے میں ضلع مجسٹریٹ سرینگر، ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری نے سرینگر میں شب برات کے سلسلے میں سبھی اجتماعات اور لوگوں کی نقل و حمل پر مکمل پابندی عاید کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔ یہ حکم دفعہ144سی آر پی سی کے تحت جاری کیا گیا ہے اور اس میں کہا گیا ہے کہ یہ آرڈر متعلقہ حکام کی سفارش پر جاری کیا گیا ہے۔ حکمنامے میں بتایا گیا ہے کہ یہ پابندیاں8اور9اپریل کی درمیانی شب کو نافذ رہیں گی اور ان کی خلاف ورزی کرنے والوں کیخلاف دفعہ188آئی پی سی اور دفعہ51 ڈیزاسٹر منیجمنٹ ایکٹ کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ ضلع مجسٹریٹ کے مطابق مذہبی اجتماعات پر پابندی کورو نا وائرس کوپھیلنے سے روکنے کیلئے عائد کی جارہی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ ضلع سرینگر کے ساتھ ساتھ وادی کے دیگر اضلاع میں بھی لوگوں کی نقل و حمل پر پابندیوں کا سلسلہ پہلے ہی سے

جموں صوبے کے اول تا9ویں اور11ویں جماعت تک طالب علموں کی ماس پروموشن کو منظوری

سرینگر//محکمہ سکولی تعلیم نے منگل کو جموں صوبے میں پڑنے والے جماعت اول تا 9ویں اور11ویں کے سبھی طالب علموں کو ماس پرموشن فراہم کرنے کے منصوبے کو منظوری دی۔ حکومت نے جموں کشمیر کے دونوں سرمائی زونوں میں 11ویں جماعت کے ششماہی امتحان میں شامل ہونے والے اُمیدواروں کو بھی ماس پروموشن کے زمرے میں لایا ہے ۔ یہ فیصلہ اُس منصوبے کے بعد لیا گیا ہے جو جے کے بورڈ آف سکول ایجو کیشن کی چیئر پرسن وینا پنڈتا نے4اپریل کو حکومت کے سامنے پیش کیا تھا۔ بورڈ کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے”کورونا وائرس سے پیدا صورتحال کو پیش نظر رکھتے ہوئے، حکام نے اُس منصوبے کو منظوری دی ہے جس کا مقصد لاک ڈاﺅن کے نتیجے میں بچوں کے تعلیمی کیریئر کو بچانا ہے“۔یہ فیصلہ تعلیمی سرگرمیاں معطل رہنے کی وجہ سے لیا گیا ہے۔ ڈائریکٹر سکول ایجو کیشن، جموں انورادھا گپتا نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا”او

آج سے 3دن تک بارشوں کا امکان :محکمہ موسمیات کی پیشگوئی

سرینگر//محکمہ موسمیات نے جموں کشمیر کے اکثر حصوں میں منگل سے گرج چمک کے ساتھ بارشوں کے ایک اور مرحلے کی پیشگوئی کی ہے۔محکمہ کے ڈائریکٹر سونم لاٹس نے کہا”فی الوقت خطے کے اندر آسمان ابر آلود ہے“۔ محکمہ کے مطابق اس بات کے قوی امکانات ہیں کہ آج سے جموں کشمیر میں بارشوں کا تازہ سلسلہ شروع ہوگا۔لوٹس نے کہا”گرج چمک کے ساتھ وقفے وقفے سے بارشوں کا سلسلہ اگلے تین دن جاری رہنے کا امکان ہے“۔ انہوں نے مزید کہا کہ11اور12فروری کو موسم زیادہ تر خشک رہنے کا امکان ہے۔لوٹس نے کہا”اس کے بعد13اور14اپریل کو ایک بار پھر موسم خراب ہوسکتا ہے،اس عرصہ کے دوران لداخ خطے کے ذانسکار اور کرگل علاقوں میں ہلکی برفباری بھی متوقع ہے“۔  

محبوبہ مفتی گھر منتقل، پی ایس اے کے تحت حراست کا سلسلہ جاری

سرینگر//سابق وزیر اعلیٰ اور پیپلز ڈیمو کریٹک پارٹی (پی ڈی پی)صدر محبوبہ مفتی، جو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت مقید ہیں، کو منگل کے روز اُنکے گھر منتقل کیا گیا۔ اس سے قبل محبوبہ کی منتقلی کے سلسلے میں محکمہ داخلہ نے ایک آرڈر جاری کردیا۔ محبوبہ کوگذشتہ برس5اگست کو احتیاطی حراست میں لیا گیا تھا تاہم اُن پراس سال6فروری کو پبلک سیفٹی ایکٹ عائد کیا گیا۔ محبوبہ مفتی مولانا آزاد روڑ پر واقع ایک سرکاری عمارت میں مقید تھیں ، جس کو سب جیل قراردیا گیا تھا۔محکمہ داخلہ کی جانب سے جاری آرڈر کے مطابق اُن کی منتقلی سے قبل محبوبہ کی سرکاری رہائش گاہ”فیئر ویو گپکار روڑ“ کو فوری طور پر سب جیل قرار دیا گیا ہے۔  

بابا غلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی میں نیا داخلہ عمل شروع،آن لائن درخواستیں طلب

سرینگر//بابا غلام شاہ بادشاہ یونیورسٹی راجوری نے انڈر گریجویٹ اور دیگر پیشہ ورانہ کورسز کیلئے نیا داخلہ عمل کو شروع کرتے ہوئے اہل اُمیدواروں سے آن لائن درخواستیں طلب کی ہیں۔ یونیورسٹی انتظامیہ نے اہل اُمیدواروں سے کہا ہے کہ وہ مختلف کورسز کیلئے2020-21سیشن کیلئے اپنی درخواستیں جمع کرائیں۔ یونیورسٹی نے جن شعبہ جات کیلئے اہل اُمیدواروں سے آن لائن درخواستیں طلب کی ہیں اُن میں پی جی/یو جی/بی ٹیک/اور ڈپلوما کورسز شامل ہیں۔اس سلسلے میں یونیورسٹی نے باضابطہ ایک نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اُمیدوار اپنی درخواستیںhttp://www.bgsbu.ac.in  پر جمع کراسکتے ہیں۔ اس کے علاوہ فون نمبرات7780927045 اور7006321557پر بھی رابطہ کیا جاسکتا ہے۔  

تازہ ترین