موت کے پانچ روز بعد پٹن کے شہری کا کورونا ٹیسٹ مثبت، اموات کی تعداد34

سرینگر//موت کے پانچ روز بعد شمالی کشمیر کے پٹن کے ایک بزرگ شہری کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد مرکز کے زیر انتظام جموں کشمیر میں مہلک وائرس سے مرنے والے افراد کی تعداد34ہوگئی ہے۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق ہامرے پٹن کا رہنے والا 86سالہ شہری29مئی کو انتقال کرگیا اور اُس کی کورونا ٹیسٹ رپورٹ بدھ کے روز مثبت آگئی۔ حکام نے مذکورہ شہری کی تجہیز و تکفین کورونا قواعد و ضوابط کے مطابق انجام دینے کی تلقین کی تھی کیونکہ اُس کا نمونہ سی ڈی اسپتال سرینگر روانہ کیا گیا تھا جو آج مثبت آگیا۔ ضلع کمشنر بارہمولہ ڈاکٹر جی این ایتو کے مطابق مذکورہ شہری کا انتقال پٹن ہیلتھ سینٹر میں ہی ہوا تھا۔ مذکورہ شہری کا کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد جموں کشمیر میں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد34ہوگئی ہے۔  

شاہ فیصل، سرتاج مدنی اور پیر منصور کا پی ایس اے منسوخ، عمر کا خیر مقدم

سرینگر//جموں کشمیر سرکار نے بدھ کو شاہ فیصل،سرتاج مدنی اور پیر منصور پر عاید پبلک سیفٹی ایکٹ منسوخ کردیا۔ تینوں مین سٹریم لیڈران گذشتہ برس ماہ اگست سے ایام اسیری کاٹ رہے ہیں جب مرکز نے جموں کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت ختم کرتے ہوئے اس کو مرکز کے دو زیر انتظام علاقوں میں تقسیم کیا تھا۔ خبر رساں ایجنسی کے این او کے مطابق تینوں لیڈران پر عائد پی ایس اے منسوخ کیا گیا ہے اور اُن کی رہائی کسی بھی وقت متوقع ہے۔ آئی اے ایس ڈگری یافتہ شاہ فیصل سرکاری نوکری چھوڑ کر سیاست میں آئے ہیں جبکہ مدنی اور منصور پیپلز ڈیمو کریٹک پارٹی کے سینئر لیڈران میں شامل ہیں۔ مدنی پی ڈی پی  صدر محبوبہ مفتی کے ماموں بھی ہیں۔  دریں اثناءجموں کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبد اللہ نے فیصل،مدنی اور منصور پر عاید پبلک سیفٹی ایکٹ منسوخ کئے جانے کا خیر مقدم کرتے ہوئے محبوبہ مفتی، علی محمد ساگر ا

سکول کھولنے کا منصوبہ ملتوی کیا جائے:جتیندر سنگھ بنام جموں کشمیرسرکار

 سرینگر //وزیر اعظم کے دفتر میں تعینات وزیر مملکت ڈاکٹرجتیندر سنگھ نے جموں کشمیر سرکار سے کہا ہے کہ وہ سکول کھولنے اور گاڑیوں کا رجسٹریشن ٹیکس وصولنے کے منصوبے ملتوی کرے۔ جتیندر سنگھ کی طرف سے یہ اقدام محکمہ سکول ایجوکیشن کے اُس فیصلے کے بعد سامنے آیا ہے جس میں سکولوں کے سربراہان سے کہا گیا تھا کہ وہ احتیاطی تدابیر کے ساتھ سکول کھولنے کی تیاریاں کریں کیونکہ حکومت ماہ جون کے وسط میں سکول کھولنے کا منصوبہ رکھتی ہے۔ جتیندر سنگھ نے بدھ کو ایک ٹویٹ کرتے ہوئے لکھا” میں نے جموں کشمیر یو ٹی سر کار کو تجویز دی ہے کہ سکول کھولنے اور گاڑیوں کا رجسٹریشن ٹیکس وصولنے کا فیصلہ ملتوی کیا جائے“۔ یاد رہے کہ محکمہ ایجو کیشن کو ماہ جون کے وسط میں تعلیمی ادارے کھولنے کے منصوبے کو لیکر پہلے ہی والدین کی طرف سے تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔  

پلوامہ میں مسلح تصادم شروع،انٹرنیٹ سروس معطل

سرینگر//جنوبی ضلع پلوامہ میں بدھ کی صبح جنگجوﺅں اور سیکورٹی فورسز کے مابین مسلح تصادم آرائی شروع ہوتے ہی انٹر نیٹ سروس معطل کی گئی۔ یہ تصادم آرائی آستان محلہ میں شروع ہوگئی جہا ں فوج، پولیس اور سی آر پی ایف کی مشترکہ ٹیم نے مصدقہ اطلاع ملنے کے بعد آپریشن کا آغاز کیا تھا۔ جونہی سیکورٹی فورسز کی تلاشی ٹیم نے مشکوک مقام کو گھیر کر اُس کی تلاشی شروع کی تو چھپے جنگجوﺅں نے گولیاں چلائیں جس کے بعد وہاں باضابطہ مسلح تصادم کا آغاز ہوگیا۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق علاقے میں جیش محمد سے وابستہ جنگجو فورسز کے محاصرے میں ہیں۔ مزید تفصیلات کا انتظار

سیموہ ترال میں مسلح تصادم، 2جنگجو جاں بحق

 ترال//ترال کے سیموہ گائوں میں کوخونریز جھڑپ کے دوران 2جنگجو جاں بحق ہوئے ۔ جھڑپ شروع ہوتے ہی ترال میں انٹر نیٹ خدمات معطل کی گئیں۔ قصبہ ترال سے 7کلو میٹر سیموہ نامی گائوںکی پمپوش کالونی بستی میں جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر 42 آر آر ،سی آر پی ایف 180 بٹالین اور پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ نے محاصرہ کیا۔ دوران شب محاصرہ کر نے کے بعد  صبح کے 5بجے تلاشی کارروائی شروع کی گئی لیکن اس دوران گائوں میں موجود جنگجوئوں نے تلاشی پارٹی پر فائر کھول دیا جس کے بعد طرفین کے درمیاں گولیوں کا تبادلہ شروع ہوا۔طرفین میں کافی دیر تک فائرنگ ہوتی رہی جس کے دوران ایک جنگجونزدیکی مکان کے صحن میں جاں بحق ہوا، جس کے فوراً بعد کشمیر پولیس زون نے اپنے ایک ٹویٹ میں اسکی ہلاکت کی صبح سویرے ہی تصدیق کی تھی جبکہ دوسرا جنگجوئوں مکان کے باہر آس پاس کسی گلی میں چھپ گیا تھا ،جس دوران فورسز کو یہ شب

مزید 2اموات، تعداد 33

 سرینگر //وادی میں مزید 2کورونا وائرس مریضوں کی موت کے بعد جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے مرنے والوں کی تعداد33ہوگئی ہے ۔وائر س سے فوت ہونے والے افراد میں 4جموں جبکہ 29کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر میں شعبہ امراض چھاتی کے سربراہ ڈاکٹر، 14حاملہ خواتین اور2پولیس اہلکاروں سمیت 117مشتبہ مریضوں کی رپورٹیں مثبت آئیں ہیں اور اسطرح جموں و کشمیر میں کورونا وائرس مریضوں کی تعداد 2718ہوگئی ہے جن میں 642جموں جبکہ 2076افراد کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔ منگل کو مثبت قرار دئے گئے 117مریضوں میں سے 15سرینگر، 11کولگام، 10کپوارہ،7بارہمولہ، 7شوپیان، 5بانڈی پورہ،8 بڈگام، 14پلوامہ، 13جموں، 9رام بن، 2کٹھوعہ،2ادھمپور، ایک سانبہ، 9پونچھ،3راجوری اور ایک کا تعلق ڈوڈہ سے ہے۔  شمالی کشمیر میں کورونا سے 2اموات سرحدی ضلع لولاب سے تعلق رکھنے والے25سالہ گھاٹ منشی پیر کو صدر اسپتا

۔72دنوں میں طبی و نیم طبی عملہ کے 17اراکین بھی متاثر

 سرینگر //سی ڈی اسپتال ڈلگیٹ میں شعبہ امراض چھاتی کے سربراہ سمیت کشمیر میں ابتک طبی و نیم طبی عملہ کے  17افراد کورونا وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ان میں 12ڈاکٹر ،3نرسیں ، 2نرسنگ آرڈرلی اور ایک ڈرائیورشامل ہیں۔ کورونا کیخلاف جنگ میں ہیرو کا رول ادا کرنے والے ڈاکٹر بھی وائرس کی لپیٹ میں آگئے ہیں۔18مارچ کو وادی میں سامنے آنے والے  پہلے کورونا کیس سے لیکر منگل 2جون تک مریضوں کا علاج کرنے والے معالجین بھی اسکی زد میں آگئے ہیں۔ان میں12ڈاکٹر بھی شامل ہیں جن میں سی ڈی اسپتال میں امراض چھاتی شعبہ کے سربراہ اور جموں کشمیر کے معروف ڈاکٹر نوید احمد شاہ بھی شامل ہے۔ ڈاکٹر نوید نے اسکی اطلاع خود سوشل میڈیا ٹویٹر پر دی کہ اسکا ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔ابتک 2مئی کو نیم طبی عملہ کے ایک رکن کے وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق کے بعد سے ابتک سپرسپیشلٹی اسپتال شرین باغ کے 2ڈاکٹر اور 3نرسیں، گورنمنٹ می

۔ 2جون کی مشاورتی کونسل حلف برداری کا کہا ہوا؟

سرینگر//نیشنل کانفرنس نائب صدر عمر عبداللہ نے سوالیہ انداز میں پوچھا ہے ’’عبوری سرکارکی حلف برداری کاکیا ہوا؟ ‘‘۔سابق وزیراعلیٰ عمرعبداللہ نے منگل کو مشاورتی کونسل کے قیام اور2جون کو اس کی حلف برداری سے متعلق حالیہ قیاس آرائیوں پر طنز کرتے ہو ئے سوال کیا ہے کہ یہ جعلی خبرپھیلانے والے اب کہاں ہیں؟۔ عمرعبداللہ نے سماجی رابطہ گاہ ٹوئٹر پراپنے ایک ٹویٹ میں کہاہے کہ کچھ لوگوں نے حالیہ دنوں یہ افواہ اُڑائی تھی کہ 2جون کوجموں وکشمیرمیں عبوری سرکارکوجموں میں حلف دلایاجائیگا ۔انہوں نے کہاکہ بے بنیادخبر والے اب کہاں ہیں؟ اورحلف برداری کاکیاہوا؟۔ عمرعبداللہ کاکہناتھاکہ ذرائع کاحوالہ دیتے ہوئے عبوری سرکارکی حلف برداری سے متعلق جعلی خبر پھیلانے والے میڈیا سے وابستہ افراداب کیاکہیں گے؟ ۔انہوں نے سوال کیاکہ شاید بے بنیادخبرپھیلانے والے خودبھول گئے ہیں کہ انہوں نے کیاکہااو

مؤثر رابطہ عامہ کیلئے میڈیا پالیسی 2020 کو منظوری

جموں//میڈیا میں حکومت کی کارکردگی کے بارے میں ایک مستقل بیانیہ کے قیام کیلئے جموں کشمیر حکومت نے میڈیا پالیسی 2020 کو منظوری دیدی ۔ میڈیا پالیسی منظور کرنے سے حکومت بہبودی اور ترقیاتی پیغامات عوام تک موثر انداز میں پہنچا سکتی ہے ۔اس کے علاوہ محکمہ اطلاعات و رابطہ عامہ جموں کشمیر کو میڈیا کے ساتھ ہم قدم رہنے اور ایک پیشہ ورتنظیم کے طور پر ابھارنے کیلئے معاون ثابت ہو گی ۔ عوام میں اعتماد قائم کرنے کیلئے تمام قسم کے میڈیا کو استعمال میں لانے ، میڈیا کی جانب سے عوامی شکایات پر توجہ مرکوز کرنے اور مختلف متعلقین کے مابین روابط کو مستحکم بنانا پالیسی کے چند کلیدی پہلو ہیں ۔ پالیسی کے تحت پہلی مرتبہ آڈیو ویزول اور الیکٹرانک میڈیا بشمول ایف ایم ، ریڈیو، سیٹ لائیٹ اور کیبل ٹی وی چینلوں کو ایمپینل کرنے کیلئے رہنما خطوط وضح کئے گئے ہیں ۔ میڈیا پالیسی میں سابق اشتہاری پالیسی کی خامیوں کو دور کرکے

جے اینڈ کے سٹیٹ کواپریٹو بینک کے سابق چیئرمین کی تلاش

جموں //اراضی گھٹالہ کے معاملہ میں انٹی کرپشن بیورو (اے سی بی ) نے سٹیٹ کواپریٹو بینک کے سابق چیئرمین کے خلاف نشاندہی نوٹس جاری کیا ہے اور اطلاع دینے والے کو انعام دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ جو بھی شخص اس کے بارے میں جانکاری دے گا اس کا نام ظاہر نہیں کیا جائے گا۔ 223کروڑ کے اراضی گھٹالہ معاملے میں ملوث ہونے کے الزام میں (اے بی سی ) نے سابق چیئرمین جموں وکشمیر کواپریٹو بینک کے خلاف نوٹس جاری کیا ہے ۔ جہلم کواپریٹو ہاوس بلڈنگ سوسائٹی  (JCHBS)ہلال احمد میر کو اراضی گھٹالہ معاملے میں 14مئی کو گرفتار کیا گیا تھا جس کے بعد اے سی بی نے سابق چیئرمین کے خلاف نشاندھی نوٹس جاری کیا ہے اور اس کے بارے میں اطلاع دینے والے کو انعام دینے کا بھی علان کیا ہے ۔اے سی بی کے ترجمان کے مطابق اگر اس کے بارے میں کسی شخص کو کوئی جانکاری ہے تو وہ ای میل ، وٹس ایپ ،اور ٹول فری نمبر پر رابطہ قائم کر

سابق مرکزی وزیر کا بعد از مرگ کورونا ٹیسٹ مثبت ،لداخ میں پہلی کورونا ہلاکت

لیہہ// لداخ میں کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق مرکزی وزیر پی نمگیال کا موت کے بعد کورونا وائرس ٹیسٹ مثبت آیا ہے۔ ان کا پیر کو یہاں مختصر علالت کے بعد 83 برس کی عمر میں انتقال ہوگیا۔وہ موت سے پندرہ دن قبل دہلی سے گھر آئے تھے۔ لداخ یونین ٹریری، جہاں اب تک کورونا وائرس کے 81 مثبت کیس سامنے آچکے ہیں، میں اس وبا سے متاثرہ کسی مریض کی موت کا یہ پہلا واقعہ ہے۔  

انڈیا کا نام بھارت کرنے سے متعلق درخواست پر سپریم کورٹ میں سماعت نہیں ہوسکی

نئی دہلی//ملک کا انگریزی نام’انڈیا‘کو تبدیل کر کے’بھارت‘یا’ہندوستان‘کرنے سے متعلق ایک درخواست پر سپریم کورٹ میں منگل کو بھی سماعت نہیں ہوسکی۔اب اس پر بدھ کو غور کیا جائے گا۔معاملے کی سماعت آج پہلے سے متعین تھی،لیکن چیف جسٹس شرد اروند بوبڑے کی عدم موجودگی کی وجہ سے اسے کل تک کے لئے ملتوی کردیا گیا۔ سپریم کورٹ ویب سائٹ پر اپلوڈ کی گئی ایک نوٹس کے مطابق،جسٹس بوبڑے کی غیرحاضری کے سبب ان کی صدارت والی تین رکنی بنچ کے سامنے ا?ج درج تمام معاملوں کی سماعت ملتوی کی گئی ہے۔اب ان معاملوں کی سماعت کل یعنی 3 جون کو ہوگی۔ان میں نمہ نامی شخص کی وہ درخواست بھی شامل ہے جس میں ملک کانام انڈیا کے بدلے بھارت یا ہندوستان کرنے کے لئے آئین کے آرٹیکل 1 میں ترمیم کی ہدایت کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ متعلقہ درخواست پر سماعت 29 مئی کو نہیں ہوسکی تھی،کیونکہ چیف

بارہمولہ کی خاتون کا کورونا سے انتقال، اموات کی تعداد32

سرینگر// شمالی کشمیر کے بارہمولہ کی ایک بزرگ خاتون منگل کے روز کورونا سے متاثر ہوکر انتقال کر گئی اس طرح جموں کشمیر میںمہلک وائرس کی وجہ سے جاں بحق افراد کی تعداد32ہوگئی ہے۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق مذکورہ خاتون کا تعلق بارہمولہ کے خانپورہ سے تھا اور اُس کا انتقال گذشتہ روز یعنی پیر کو ہوگیا جس کے ایک دن بعد اُس کی کورونا رپورٹ مثبت آگئی۔ جی ایم سی بارہمولہ کے پرنسپل ڈاکٹر سید مسعود کا حوالہ دیتے ہوئے خبر رساں ایجنسی نے لکھا کہ مذکورہ خاتون کئی دیرینہ امراض میں مبتلاءتھی اور آخر کار اُس کا کورونا ٹیسٹ رپورٹ بھی مثبت آگیا۔اُس کی میت کو لاش گھر میں رکھا گیا تھا اور اب اُسے قواعد و ضوابط کے مطابق دفنانے کیلئے ورثاءکے حوالے کیا جائے گا۔ ضلع کمشنر بارہمولہ جی این ایتو کے مطابق مذکورہ خاتون اُس55سالہ شخص کی والدہ نسبتی تھی جو کورونا میں ملوث ہوکر گذشتہ ہفتے انتقال کرگی

سیموہ ترال مسلح تصادم آرائی میں 2 جنگجو جاں بحق:پولیس

سرینگر//جنوبی کشمیر کے ترال علاقے میں منگل کو سیکورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران جنگجوﺅں اور فورسز کے مابین مسلح تصادم آرائی کے نتیجے میں2 جنگجو جاں بحق ہوگئے۔ پولیس کی طرف سے جاری ایک مختصر بیان میں بتایا گیا ہے کہ سیموہ ترال میں جو تصادم آج صبح سے جاری تھا اُس میں دوسرا جنگجو جاں بحق ہوگیا ہے جس کے ساتھ ہی یہ آپریشن ختم ہوگیا۔ پولیس کے مطابق یہ تصادم آرائی ضلع پلوامہ میں ترال کے سیموہ گاﺅں میں پیش آئی جہاں فورسز نے مصدقہ اطلاع کے بعد تلاشی آپریشن شروع کیا ۔اس دوران چھپے جنگجوﺅں نے فورسز کو گولیوں کا نشانہ بنایا جس کے بعد طرفین میں گولیوں کا شدید تبادلہ ہوا۔گولیوں کے اسی تبادلے کے دوران پہلے ایک اور بعد میں دوسرا جنگجوجاں بحق ہوگیا۔پولیس نے تاہم مارے گئے جنگجوﺅں کی شناخت کے بارے میں کچھ نہیں بتایا۔ پولیس ذرائع نے کہا کہ اس جنگجو مخالف آپریشن میں پولیس کے علاوہ فوج اور سی آر

ترال میں فورسز کارروائی کے دوران مسلح تصادم، ایک جنگجو جاں بحق

سرینگر//جنوبی کشمیر کے ترال علاقے میں منگل کو سیکورٹی فورسز کے آپریشن کے دوران جنگجوﺅں اور فورسز کے مابین مسلح تصادم آرائی کے نتیجے میں ایک جنگجو جاں بحق ہوگیا۔ پولیس کے مطابق یہ تصادم آرائی ضلع پلوامہ میں ترال کے سیموہ گاﺅں میں پیش آئی جہاں فورسز نے مصدقہ اطلاع کے بعد تلاشی آپریشن شروع کیا ۔اس دوران چھپے جنگجوﺅں نے فورسز کو گولیوں کا نشانہ بنایا جس کے بعد طرفین میں گولیوں کا شدید تبادلہ ہوا۔گولیوں کے اسی تبادلے کے دوران ایک جنگجو جاں بحق ہوگیا۔پولیس نے تاہم مارے گئے جنگجو کی شناخت کے بارے میں کچھ نہیں بتایا۔ خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق جنگجو کی ہلاکت کے بعد سے جائے تصادم پر خاموشی چھائی ہوئی ہے تاہم فورسز کا آپریشن جاری ہے۔ پولیس ذرائع نے کہا کہ اس جنگجو مخالف آپریشن میں پولیس کے علاوہ فوج اور سی آر پی ایف کے اہلکارحصہ لے رہے ہیں۔  

ایک دن میں ریکارڈ اموات، 3فوت

سرینگر //جموں و کشمیر میں پیر کو کورونا وائرس سے مزید 3افراد کی موت واقع ہوئی ہے۔اس طرح وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 31ہوگئی ہے جن میں سے 4جموں جبکہ 27کشمیر سے تعلق رکھتے ہیں۔کورونا وائرس بیماری پھوٹ پڑنے کے بعد وادی میں پہلی بارایک ہی دن میں 3افراد کی ہلاکت ہوئی ہے۔( کپوارہ کا ایک 25سالہ نوجوان جو صدر اسپتال میں زیر علاج تھا، پیر کی شام فوت ہوا ، اس کے نمونے تشخیص کیلئے بھیج دیئے گئے ہیں، اور حکام کا کہنا ہے کہ ٹیسٹ کے نتائج آنے کے بعد ہی لاش ورثاء کے حوالے کی جائیگی)۔ادھر سوموار کوایک ڈاکٹر ، 9حاملہ خواتین اور ایک ہی کنبہ کے 8  افراد سمیت مزید 155مشتبہ مریضوں کی ریورٹیں مثبت آئی ہیں۔جموں و کشمیر میں کورونا وائرس مریضوں کی  2601 تک پہنچ گئی ہے جن میں سے602جموں جبکہ1999مریضوں کا تعلق کشمیر سے ہے۔ مثبت قرار دیئے گئے 155افراد میں سے53رام بن،21ڈوڈہ،12اننت ناگ، 11کپوارہ، 10سرین

کشمیرمیں 70روز کے دوران 52حاملہ خواتین وائرس سے متاثر،ایک کی موت، 26زچگی کے بعد گھر روانہ،14نوزائد بچے تولد اور منفی قرار

 سرینگر //کشمیر میں 68دنوں کے دوران 52حاملہ خواتین وائرس سے متاثر ہوئی ہیں۔ ان حاملہ خواتین میں ایک کی موت واقع ہوئی ہے جبکہ51خواتین کو مختلف اسپتالوں میںعلاج و معالجے کیلئے داخل کیا گیاجن میں سے 26صحتیاب ہوکر گھر واپس لوٹ گئیں ہیں۔51حاملہ خواتین میں سے 14 کا زچگی عمل مکمل ہوگیا اور اُنکے ہاں14بچے تولد ہوئے جن کے نمونے منفی پائے گئے ہیں۔وادی میں 23مارچ سے کورونا وائرس متاثرین کیسز سامنے آنے شروع ہوگئے تھے۔ پچھلے لگ بھگ 70روز کے دوران31مئی تک52حاملہ خواتین وائرس سے متاثر پائی گئیں۔ ان خواتین میں سے 26اننت ناگ،15بارہمولہ،7کولگام،2گاندربل، ایک شوپیان اور ایک کا تعلق سرینگر سے ہے۔ ریاستی سرکار کی ہدایت پر جموں و کشمیر میں حاملہ خواتین کی سکریننگ کا عمل 16مئی کو شروع ہوا اور پہلے دن ہی ضلع اننت ناگ کے مختلف دیہات سے تعلق رکھنے والی12حاملہ خواتین کی رپورٹیں مثبت آئیں جبکہ 17مئی کو

نوشہرہ سیکٹر میں دراندازی کی کوشش،3جنگجوجاں بحق

نوشہرہ (راجوری)//نوشہرہ کے کبوتر گالا علاقے میں حد متارکہ پر دراندازی کی ایک بڑی کوشش ناکام بناتے ہوئے فوج نے 3جنگجوئوں کو جاں بحق کرنیکا دعویٰ کیا ہے۔اور ان کی تحویل سے امریکی ساختہ بندوق ایم۔16 اور دیگر اسلحہ بر آمد کیا گیا ہے۔دفاعی ذرائع نے بتایاکہ 28اور29مئی کی درمیانی شب کلال سیکٹر کے نزدیک حد متارکہ پر کبوتر گالا کے مقام پر بھاری ہتھیاروں سے لیس 6جنگجوئوں پر مشتمل ایک گروپ نے دراندازی کی کوشش کی تاہم اسی دوران ایک زور دھماکہ ہواجو امکانی طور پر کسی جنگجو کاپائوں زیر زمین بچھائی گئی بارودی سرنگ پر پڑنے سے ہوا۔ دھماکہ کی آواز سنتے ہی فوج نے مورچہ بندی کرلی اور 400میٹر علاقے کا محاصرہ کرکے تلاشی کارروائی شروع کی گئی اور بالآخر جنگجوئوں اور فوج کے درمیان جھڑپ ہوئی جس میں 3جنگجو ہلاک ہوئے۔ذرائع نے بتایاکہ نعشوں کو تحویل میں لینے کیلئے پچھلے تین روز کے دوران آپریشن جاری رہا تاہم پا

سکولوں کو جون کے وسط میں کھولنے کا امکان

سرینگر // کورونا وائرس کے باعث سکولوں کو جون کے وسط میں کھولنے کا امکان ہے اور جموں کشمیر سرکار نے ڈائریکٹر سکول ایجو کیشن جموں اور کشمیر کو لازمی احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی غرض سے ضروری لوازمات پورا کرنے کیلئے کہا ہے۔ڈائریکٹر فائنانس سکول ایجو کیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے جموں اور کشمیر کے ڈائریکٹروں کے نام یکم مئی کو ایک مکتوب روانہ کردیا ہے جس میں ان سے کہا گیا ہے ’’ حکومت اس بات کی کوشش میں ہے کہ جون کے وسط میں سکولوں کو کھولا جائے گا، مجھے اس بات کی ہدایت دی گئی ہے کہ آپ تک یہ بات پہنچائی جائے کہ سبھی سرکاری سکولوں میں کورونا وائرس کے پھیلائو سے بچنے کیلئے طلاب اور اساتذہ کیلئے ضروری احتیاطی بندوبست کیلئے لازمی چیزیں فراہم کی جائیں‘‘۔مکتوب میں مزید کہا گیا ہے ’’ اس ضمن میں سبھی سکولوں کے منتظمین کو ہدایات دی جائیں کہ وہ بار بار استعمال کرنے کے

۔11جون کو دبئی اور 26جون کو کرغستان کیلئے خصوصی پروازیں

سرینگر//وسط ایشیائی ملک کرغستان اور دبئی میں در ماندہ کشمیریوں کو لانے کیلئے  11 اور 26جون کو خصوصی پروازیں چلیں گی ۔ 11جون کو دبئی سے 168در ماندہ کشمیریوں کو جبکہ کرغستان کیلئے 26جون کو ائر انڈیا کی پرواز سے168 کشمیریوں کو واپس لایا جائیگا۔ شہری ہوا بازی کی وزارت کی طرف سے تیسرے مرحلے کیلئے وندے بھارت مشن کیلئے جاری پروگرام کے تحت دبئی سرینگر اور کرغستان سرینگر کیلئے پروازیں ان 70پروازوں میں شامل ہونگی جو 11جون سے 30جون تک مختلف ممالک میں درماندہ بھارتی شہریوں کو لائیں گی۔کرغستان میں در ماندہ کشمیری طلاب نے حال ہی میںکشمیر چیمبر آف کامرس کو 381در ماندہ کشمیریوں کی ایک فہرست مکمل تفصیلات کیساتھ بھیجی ہے، جو سرینگر کی پرواز کیلئے انتظار کررہے ہیں اور چیمبر  نے اس فہرست کو مقامی انتظامیہ کے سپرد کردیا ہے۔کرغستان کے مختلف کالجوں میں زیر تعلیم درماندہ کشمیری طلاب  میں سے اب

تازہ ترین