تازہ ترین

جموں کشمیر میں بھی کورونا وائرس بے قابو،4650نئے کیس

سرینگر//جموں کشمیر میں منگل کو کورونا وائرس کے4650نئے کیس سامنے آئے اس طرح مرکز کے زیر انتظام علاقے میں بھی یہ وائرس بے قابو ہوگیا ہے جس سے عوام و خواص میں تشویش لاحق ہوگئی ہے۔یہاں کورونا سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد191869تک پہنچ گئی ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق آج ظاہر ہونے والے کیسوں میں 3178کا تعلق وادی کشمیر جبکہ1463کا تعلق صوبہ جموں سے ہے۔ ذرائع نے مزید کہا کہ گذشتہ24گھنٹوں کے دوران جموں کشمیر میں کورونا میں مبتلائ37افراد کی موت بھی واقع ہوگئی۔ان میں12افراد وادی کشمیر میں جبکہ25افراد صوبہ جموں میں جاں بحق ہوگئے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق آج سرینگر ضلع میں1311،بارہمولہ میں352،بڈگام میں386،پلوامہ میں240،کپوارہ میں96،اننت ناگ میں417،بانڈی پورہ میں107،گاندر بل میں31،کولگام میں162اور شوپیان میں85کورونا کیس سامنے آئے۔ اسی طرح جموں ضلع میں آج598،ادھمپور میں220،راجوری م

جموں کشمیر میں مزید23کورونا ہلاکتیں

سرینگر//جموں کشمیر میں منگل کے روز مزید23افراد کورونا وائرس کی وجہ سے جاں بحق ہوگئے۔ نیوز ایجنسی جی این ایس کے مطابق اس طرح یہاں کورونا ہلاکتوں کی مجموعی تعداد2444تک پہنچ گئی۔ آج 9افراد جموں میں جبکہ 14افراد وادی کشمیر میں از جان ہوگئے۔ آج وادی میںجاں بحق ہونے والے کورونا مریضوں کا تعلق سونہ وار سرینگر،پکھر پورہ بڈگام،پانپور پلوامہ،اننت ناگ،وتر گام بارہمولہ،حول سرینگر،بتہ مالو سرینگر،شانگس اننت ناگ،اننت ناگ،اشم بانڈی پورہ،ترال علاقوں سے تھا۔  

شمالی کشمیر کے سوپور میں فورسز اور جنگجوﺅں کے مابین معرکہ آرائی:پولیس

سرینگر//شمالی ضلع بارہمولہ کے سوپور علاقے میں منگل کو سیکورٹی فورسز اور جنگجوﺅں کے مابین معرکہ آرائی شروع ہوگئی۔ یہ معرکہ آرائی اس وقت شروع ہوئی جب فورسز نے نتھی پورہ علاقے کو محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا۔ پولیس نے اس واقعہ کی اطلاع ایک ٹویٹ کرتے ہوئے دی۔  پولیس کے مطابق فورسز کے محاصرے کے دوران طرفین میں گولیوں کا تبادلہ شروع ہوگیا جو آخری اطلاعات ملنے تک جاری تھا۔ پولیس کے مطابق علاقے کا محاصرہ سخت کرلیا گیا ہے اور فورسز آپریشن جاری ہے۔  

اگلے دس دن انتہائی اہم، متحدہ کاوشوں سے کورونا سے نجات ممکن:ایل جی سنہا

جموں// جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے منگل کے روزکورونا لہر کی روک تھام کے لئے افسروں، ڈاکٹروں اور دیگر طبی عملے کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا ” اگلے دس دن انتہائی اہمیت کے حامل ہیں“۔ انہوں نے کہا ” اگر ہم نے ان دس دنوں کے دوران مل کر اسی لگن و محنت سے کام کیا تو ہم اس مصیبت سے ضرور چھٹکارا پائیں گے“۔ ان کامزید کہنا تھا” ہمارے افسروں، ڈاکٹروں اور دیگر طبی عملے کی متحدہ کاوشوں کا ہی نتیجہ ہے کہ ہمارے حالات ملک کے دیگر حصوں سے بہتر ہیں“۔  

کشمیر میں5 سے7مئی تک بارشوں کی پیش گوئی

سری نگر// وادی کشمیر میں خوشگوار موسم کے بیچ محکمہ موسمیات نے ایک بار پھر موسلا دھار بارشوں کی پیش گوئی کی ہے۔ متعلقہ محکمے کے ایک ترجمان کے مطابق وادی میں اگلے چوبیس گھنٹوں کے دوران ہلکے درجے کی بارش ہوسکتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وادی میں 5 سے 7 مئی تک موسلا دھار بارشیں ہونے کا امکان ہے۔  

کورونا نے قہر ڈھایا| 51فوت،3733متاثر

  سرینگر //9مارچ 2020کو جموں و کشمیر میں کورونا وائرس متاثرہ شخص کی تصدیق کے بعد سوموار کو پہلی مرتبہ وائرس نے 51افراد کی جان لی ہے جن میں 35 جموںاور 16افراد کشمیر میں فوت ہوگئے۔ متوفین کی مجموعی تعداد 2400کا ہندسہ پار کرکے 2421ہوگئی ہے۔ اس دوران مزید 3733افراد وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور متاثرین کی مجموعی تعداد 1لاکھ 87ہزار219تک پہنچ چکی ہے۔ گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے 31ہزار 655افراد کے ٹیسٹ کئے گئے جن میں 3733افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں جن میں 1294جموں جبکہ 2439کشمیر صوبے سے تعلق رکھتے ہیں۔ کشمیر سے تعلق رکھنے والے 2439متاثرین میں 21افراد بیرون ریاستوں سے سفر کرکے لوٹے  جبکہ 2418افراد مقامی سطح پر وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ تازہ 2439متاثرین میں سرینگر میں 1136، بارہمولہ میں 232، بڈگام میں 208، پلوامہ میں 296، کپوارہ میں 64، اننت ناگ میں 145،&n

وادی میں 18ہزار لیٹر فی منٹ آکسیجن پیدا کرنے کی صلاحیت

سرینگر //کشمیر کے 10اضلاع میں قائم15سرکاری اسپتالوں میں18ہزار لیٹر فی منٹ کے حساب سے آکسیجن پیدا کرنے کی صلاحیت موجود ہے جن میںسکمز صورہ اور سکمزبمنہ میں 5480، جی ایم سی سرینگر میں 4530اور محکمہ صحت کے 10اسپتالوں میں 7900لیٹر فی منٹ کے حساب سے آکسیجن پیدا ہوتا ہے۔ وادی میںآکسیجن پیدا کرنے کی موجودہ صلاحیت سے مجموعی طور پر3279 مریضوںکو ایک ہی وقت میں آکسیجن فراہم کیا جا سکتا ہے۔ سکمز صورہ اور جے وی سی بمنہ میں 5480لیٹر فی منٹ سے آکسیجن پیدا ہوتا ہے اور اس سے 835بیماروں کو متواتر طور پر 24گھنٹے آکسیجن فراہم کیا جاسکتا ہے۔سکمزصورہ کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر فاروق احمد جان نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا ’’ اسپتال میں قائم آکسیجن پلانٹوں کی صلاحیت 3980 لیٹر فی منٹ کے حساب سے پیدا کرنے کی صلاحیت موجود ہے جو اسپتال میں دستیاب 750بستروں کو 24گھنٹے آکسیجن فراہم کرسکتا ہے‘&ls

پلوامہ میں مزدور کو ٹرین نے کچل ڈالا

سرینگر//پلوامہ میں ایک ریلوے مزدور کام کے دوران گزرتی ٹرین کی زد میں آکر کچلا گیا۔ادھر کنگن میں ایک تیز رفتار گاڑی کی زد میں آکر ایک لڑکی لقمہ اجل بن گئی۔ ضلع پلوامہ کے کاکہ پورہ علاقے میں 44پوائنٹ کے نزدیک ریلوے مزدور محمد اقبال ڈار ولد عبدالمجید ڈار ساکن وائلو کوکرناگ تیز رفتار ٹرین کی زد میں آکر موقعے پر ہی لقمہ اجل بن گیا ۔پولیس نے اس سلسلے میں ایک کیس زیر دفعہ 174سی آر پی سی درج کرلیا ۔ نعش کو آخری رسومات کیلئے ورثاء کے حوالے کی گئی ہے ۔ادھرو سطی کشمیر میں ایک 14سالہ لڑکی خالدہ بانو دختر انگریز علی ساکن پتی مامر کنگن کو ایک تیز رفتار گاڑی نے زور دار ٹکر مار کر شدید زخمی کردیا اگرچہ بچی کو فوری طور پر نزدیکی ہسپتال پہنچایا گیا تاہم وہ زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ بیٹھی۔  

کورونا کے جھٹکے | سیاحتی شعبہ کی بحالی کی اُمیدیں ایک بار پھر معدوم

سرینگر //رواں سال 25 مارچ کو سیاحوں کی آمد ورفت کیلئے کھولا گیا ایشیاء کا سب سے بڑا باغ گل لالہ میں 2لاکھ 25ہزار سیاحوں نے سیر کی جس میں سے 70ہزار سیلانی بیرون ریاستوں سے کشمیر آئے تھے۔لیکن کشمیر کے مغل باغات سیاحوں کی آمد کے انتظار میں ہیں اور حکومتی احکامات پر عملدر آمد کرتے ہوئے ان باغات کے دروازے مقفل کردیئے گئے ہیں۔ کورونا کی دوسری لہر کے دوران سیاحتی شعبہ کی بحالی کی اُمید ایک بار پھر گم ہو گئی ہے ۔محکمہ فلوریکلچر ڈائریکٹر فاروق احمد راتھر نے کشمیر عظمیٰ کیساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ حکام کی کوششوں کی بدولت اس سال باغ گل لالہ میں سیاحوں کی ریکارڈ تعداد دیکھی گئی۔ 30ہیکٹر اراضی پر پھیلے اس باغ میں 64اقسام کے 15لاکھ ٹولپ لگائے گئے تھے ۔انہوں نے کہا کہ باغ کی دیکھ ریکھ پر محکمہ کو قریب 70لاکھ کا خرچہ ہوتا ہے کیونکہ اس کے ٹولپ ہالینڈ سے کشمیر لائے جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ رواں سال&

نائب تحصیلدار اور پروفیسر برطرف

 سرینگر//لیفٹیننٹ گورنر کی سربراہی والی انتظامیہ نے مزید2سرکاری ملازمین کو '’’ریاست کی سلامتی کے مفاد میں‘‘ ملازتوں سے برطرف کردیا ہے۔ تین روز میں یہ دوسری کارروائی ہے۔ اس سے قابل کرالہ پورہ کپوارہ کے سرکاری ٹیچر ادریس جان کو ملازمت سے برطرف کرنے احکامات صادر کئے گئے تھے۔دو دن کے بعد اب مزید دو سرکاری افسران کو نوکریوں سے بر خواست کیا گیا ہے ۔ ان میں ایک نائب تحصیلدار اور ایک اسسٹنٹ پروفیسر شامل ہیں۔حکومت نے ایک آرڈر میں کہا ہے کہ لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے ، کیس کے حقائق اور حالات پر غور کرنے کے بعد ، مشاہدہ کیا کہ دستیاب معلومات کی بنیاد پر ، نذیر احمد وانی نائب تحصیلدار پلوامہ ملازمت سے برطرف کیا جاتا ہے۔ حکم نامہ میں کہا گیا لیفٹیننٹ گورنر آئین  ہند کے دفعہ 311 کی شق (2) کی دفعات (2) کے تحت اس بات سے مطمئن ہیں کہ ریاست کی سلامتی کے مفاد میں