روہنگیا پناہ گزینوں کا فیس بک کیخلاف 150ارب ڈالر ہرجانے کا دعویٰ

کیلی فورنیا: میانمار کے روہنگیا پناہ گزینوں نے فیس بک پر 1 کھرب 50 ارب ڈالر ہرجانے کا مقدمہ دائر کیا ہے۔ میانمار کے روہنگیا پناہ گزینوں نے کیلی فورنیا کی عدالت میں فیس بک کے خلاف مقدمہ دائر کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ فیس بک پر نفرت انگیز مواد اور منافرت پر مبنی پوسٹوں کی وجہ سے روہنگیا برادری کو تشدد کا سامنا کرنا پڑا۔روہنگیا پناہ گزینوں کی جانب سے قانون دان فرموں ایڈلسن پی سی اور فیلڈز پی ایل ایل کی درخواست میں استدلال کیا گیا ہے کہ سماجی رابطے ویب سائٹ نفرت ا?میز پروپیگنڈے کو روکنے میں بری طرح بری طرح ناکام رہی جس کا خمیازہ معصوم جانوں کو بھگتنا پڑا۔قانونی فرموں نے شکایت میں مزید کہا ہے کہ اگر فیس بک امریکی قانون کی سیکشن 230 کو اپنے دفاع کے طور پر استعمال کرتی ہے تو ہم اپنے مقدمے میں میانمار کے قانون کے اطلاق کی کوشش کریں گے۔دوسری جانب دیگر قانونی ماہرین کا بھی کہنا ہے کہ امریکی عد

بلجیم میںکورونا پابندیوں کیخلاف پر تشدد مظاہرے

برسلز //یورپی ملک بلجیم کے دارالحکومت برسلز میں کورونا وبا پر قابو پانے کے لیے کیے گئے سخت اقدامات کے خلاف مظاہروں میں 8ہزار افراد نے شرکت کی۔ اس موقع پر پولیس نے مظاہرین کے خلاف آنسو گیس کا استعمال کیا، جب کہ مظاہرین کی جانب سے پولیس اہلکاروں پر جلتی ہوئی اشیا اور بوتلیں پھینکی گئیں۔ خبررساں اداروں کے مطابق فرانس اور نیدرلینڈز کے بعد دیگر یورپی ممالک میں بھی ویکسین کی مخالفت عروج پر ہے۔برسلز میں ہونے والے احتجاجی مارچ کے دوران پولیس نے خاردار تارلگا کر مظاہرین کو یورپی یونین کے ہیڈکوارٹرز کی جانب جانے سے روک دیا۔ 2ڈرون طیاروں اور ایک ہیلی کاپٹر کے ذریعے احتجاجی مارچ کی نگرانی کی گئی۔پولیس اورمظاہرین میں جھڑپوں میں پولیس اہلکاروں سمیت کئی افراد زخمی ہوئے۔ پولیس نے مظاہرین کومنتشر کرنے کے لیے تیز دھار پانی اور آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کی۔ دوسری جانب آکسفورڈ ایسٹرا زینیکا ویکسین کی

گیمبیامیںصدارتی انتخابات | اداما بارو ایک بار پھرکامیاب

بانجول //گیمبیا میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں موجودہ صدر اداما بارو نے واضح کامیابی حاصل کر لی۔ الیکشن کمیشن کے مطابق انہیں 53 فیصد سے زائد ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔ ان کے حریف امیدوار کو محض 28 فیصد ووٹ مل سکے۔ ان انتخابات کو اس مغربی افریقی ریاست میں فقط 4 سال پرانی جمہوریت کے لیے ایک امتحان کے طور پر دیکھا جا رہا ہے۔ یہ یحییٰ جامے کے بغیر پہلا الیکشن تھا۔ انہوں نے کئی برسوں تک ا?مرانہ طور پر سربراہ مملکت کی حیثیت سے حکومت کی۔  

اقوام متحدہ میں افغانستان کی نمائندگی کا فیصلہ ملتوی

اقوام متحدہ// اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے ایک قرارداد منظور کی جس کے تحت افغان طالبان اور میانمار کی فوجی حکومت کے نمائندوں کو تسلیم کرنے کا معاملہ غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کردیا گیا ہے۔امریکا، روس اور چین سمیت 9 ممالک پر مشتمل اقوام متحدہ کی کریڈنشلز کمیٹی کے معاہدے پر مشتمل قرارداد کو اقوام متحدہ کے رکن ممالک کے ووٹنگ کے بغیر اتفاق رائے سے منظور کرلیا۔گزشتہ ہفتے کمیٹی نے جنرل اسمبلی کے موجودہ سیشن کے لیے افغانستان اور ’میانمار کے نمائندوں کی شمولیت کو مؤخر کرنے‘ کی تجویز دی تھی، جنرل اسبملی کا موجودہ سیشن ستمبر 2022 میں ختم ہوگا۔9 ممالک پر مشتمل کریڈنشلز کمیٹی کی صدارت اس وقت سویڈن کے پاس ہے اور مستقبل قریب میں کمیٹی کا مزید کوئی اجلاس ہونے کی بھی امید نہیں ہے۔افغانستان اور میانمار کے معاملے پر اقوام متحدہ میں نئی اور پرانی حکومتوں کی جانب سے دو مختلف درخواستیں موجود

تازہ ترین