تازہ ترین

دنیا کی تیز ترین ٹیکہ کاری مہم میں برطانیہ پہلے پائیدان پر

 لندن //کووڈ 19 کے خلاف ویکسینیشن دنیا کی تاریخ کی سب سے بڑی مہم ہے جس کا آغاز ایک برس قبل 8 دسمبر 2020 کو برطانیہ سے ہوا۔اس وقت تک دنیا کی تقریباً آدھی آبادی کو ویکسین کی کم سے کم ایک خوراک لگ چکی ہے۔تاہم جہاں ایک طرف امیر ممالک اپنے شہریوں کو ویکسین کی تیسری خوراک لگارہے ہیں وہیں غریب ممالک ابھی تک پہلی خوراک کا انتظار کررہے ہیں۔ویکسینیشن مہم میں برطانیہ دیگر ممالک سے برتری حاصل کیے ہوئے ہے، روس اور چین نے پہلے ہی یہ مہم شروع کررکھی ہے جس میں مخصوص شہروں اور علاقوں کو ہدف بنایا گیا ہے۔ویکسینیشن مہم کے ابتدائی دنوں میں برطانیہ نے ایسٹرازینیکا ویکسین کا استعمال کیا۔ دیگر کئی امیر ممالک جیسا کہ امریکہ، کینیڈا، متحدہ عرب امارات نے 14 دسمبر کو یہ مہم شروع کی۔ ان کے بعد سعودی عرب، اسرائیل اور یورپی یونین نے مہینے کے آخر میں اس مہم کا آغاز کیا۔ان ممالک نے زیادہ تر امریکہ اور جرمنی

خواتین کو جائیداد میں حصہ دیں اور زبردستی شادی نہ کرائیں:طالبان

کابل//طالبان حکومت نے خواتین کے حقوق کے حوالے سے حکم نامہ جاری کیا ہے جس میں ہدایت کی گئی ہے کہ خواتین کو جائیداد میں حصہ دیا جائے اور شادی بھی اْن کی مرضی سے کرائیں۔ امارت اسلامیہ افغانستان کی جانب سے ایک حکم نامے میں شہریوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ لڑکیوں کی شادی کے لیے اْن کی رضامندی حاصل کرنا چاہیئے۔حکم نامے کی خلاف ورزی کرنے والوں کو سزائیں دی جائیں گی۔ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد کی جانب سے جاری حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ عورت کوئی جائیداد نہیں بلکہ ایک عظیم اور آزاد مخلوق ہے جسے کوئی بھی امن کے بدلے یا دشمنی ختم کرنے کے لیے دوسرے فریق کے حوالے کر سکتا ہے۔خواتین کو جائیداد میں حصہ اور شادی کے حوالے سے حکم نامے میں مزید کہا گیا ہے کہ خواتین کو زبردستی شادی پر مجبور نہیں کیا جانا چاہیے اور بیواؤں کو ان کے مرحوم شوہر کی جائیداد میں حصہ ملنا چاہیے۔ترجمان طالبان کے بیان میں عورتوں کو

شام میں بس پر حملہ

دمشق// شام کے مشرقی صوبہ در الزور میں آئل فیلڈ میں کام کرنے والے کارکنوں کی بس پر حملہ ہوا ہے۔ جس کے نتیجے میں کم ازکم 10 کارکن ہلاک  اورچند دیگر زخمی ہوئے ہیں۔فوری طور پر یہ واضح نہیں ہو سکا کہ ذمہ دار کون ہے جب کہ یہ حادثہ اس وقت پیش آیا جب کارکنان کو کام سے واپس لے جایا جا رہا تھا۔تیل کی دولت سے مالا مال شام کے اس صوبے میں ایسی کارروائیوں میں باقاعدگی سے سرگرم داعش گروپ  نے اس کارروائی کا دعویٰ کیاہے۔شام میں کام کرنے والی تنظیم آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے بتایا ہے کہ درالزور کے علاقے میں بس حملے میں دھماکہ خیز ڈیوائس استعمال کی گئی۔انہوں نے بتایا کہ یہ سانحہ  دیر ایزور کے اس علاقے میں پیش آیا  ہے۔  

لیبیا: سیف الاسلام قذافی انتخابات لڑنے کیلئے اہل قرار

جدہ //لیبیا کے سابق حکمران معمرقذافی کے بیٹے سیف الاسلام  صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کیلئے  اہل قرار دے دیے گئے ہیں۔ لیبیا کی عدالت نے سیف الاسلام قذافی کو صدارتی انتخابات لڑنے کیلئے اہل قرار دے دیا۔قذافی کے بیٹے سیف الاسلام نے صدارتی انتخابات کیلئے کاغذات نامزدگی جمع کرا دیے۔سیف الاسلام  نے گزشتہ ماہ انتخابی کمیشن کی جانب سے ان کی درخواست کو مسترد کیے جانے کے خلاف سبھا کی عدالت میں  اپیل دائر کی تھی۔واضح رہے کہ گزشتہ ماہ  لیبیا کے الیکشن کمیشن نے سیف الاسلام قذافی کو  2015 میں جنگی جرائم کے الزامات سزائے یافتہ ہونے کی وجہ سے  ان کا نام صدارتی انتخابات میں شامل اْمیدواروں کی فہرست  سے خارج کردیا تھا۔خیال رہے کہ لیبیا کے پہلے براہ راست صدارتی انتخابات کا پہلا مرحلہ 24 دسمبرکو ہوگا۔