تازہ ترین

دنیامیں کورونا وائرس سے30.19 لاکھ سے ز ائد افراد ہلاک

واشنگٹن / ریو ڈی جنیرو / نئی دہلی// دنیا میں کورونا وائرس (کووڈ-19) کی وبا دن بہ دن خوفناک شکل اختیار کرتی جارہی ہے اور اب تک 30.19 لاکھ سے زیادہ افراد وائرس کی وجہ سے ہلاک جبکہ 14.14 کروڑ سے زیادہ لوگ اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ امریکہ کی جان ہاپکنز یونیورسٹی کے سائنس اینڈ انجینئرنگ سنٹر (سی ایس ایس ای) کے جاری کردہ تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق دنیا کے 192 ممالک اور خطوں میں کورونا متاثرین کی تعداد بڑھ کر 141404847 ہوگئی ہے ، جبکہ اب تک اس جان لیوا وبا سے ، 3019330 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ جان لیواعالمی وبا کورونا وائرس سے سب سے زیادہ اور بری طرح متاثرامریکہ میں کورونا کا قہر لگاتار بڑھتا جارہا ہے ، اور متاثرہ افراد کی تعداد تین کروڑ 16 لاکھ سے تجاوز کرچکی ہے جبکہ 5 لاکھ 67 ہزار 217 مریض فوت ہوچکے ہیں۔ کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے معاملہ میں ہندوستان دنیا میں دوسرے نمبر پر

اسرائیل میں گھر سے باہر ماسک لگانا ضروری نہیں

تل ابیب// اسرائیل کی وزارت صحت نے ملک میں کامیاب ٹیکہ کاری کے سبب مریضوں کی تعداد میںکافی کمی آنے کے بعد لوگوں کے لئے کھلی ہوا میں ماسک لگانیکی پابندی ہٹاد دی ہے۔وزارت نے سنیچر کو کہا ’’پورے ملک میں کورونا مریضوں کی تعداد میں کمی آنے پر ہیلتھ ڈائرکٹر ہیزی لیوی کو پابندی کو منسوخ کرنے کے حکم پر دستخط کرنے کی ہدایت دی ہے تاکہ لوگوں کے لئے سنیچر سے کھلے میں ماسک لگانا ضروری نہیں ہوگا‘‘۔وزارت نے لوگوں کو گھر سے باہر بھیڑ بھاڑ والے مقامات اور دیگر تقاریب میں ماسک لگانے کی صلاح دی اور زور یکر کہا کہ ماسک ابھی بھی گھر کے اندر پہننے کی ضرورت ہے۔ لیکن لوگوں کے لئے کھلے علاقوں اور جہاں بھیڑ نہ ہو، ماسک پہننا ضروری نہیں ہے۔واضح رہے کہ اسرائیل نے گزشتہ 20 دسمبر سے کورونا وائرس کے خلاف ٹیکہ کاری مہم شروع کی تھی اور دنیا میں اسرائیل سب سے تیزی سے ویکسین لگانے والے ممالک میں

مسجد حرام : معتمرین کی نقل و حرکت منظم کرنے کے لیے 750 اہل کار

ریاض //حرمین شریفین کے امور کی جنرل پریذیڈنسی نے مسجد حرام میں مجمع کو کنٹرول کرنے اور منظم رکھنے کے لیے 750 اہل کاروں کو تعینات کیا ہے۔حرم مکی میں مجمع اور بھیڑ کو منظم کرنے کی ذمے دار انتظامیہ کے ڈائریکٹر اسامہ الحجیلی کے مطابق چوبیس گھنٹے کام کرنے کے لیے 750 اہل کار موجود ہیں جو مسجد حرام میں معتمرین کو اعلی ترین خدمات پیش کرنے میں مصروف ہیں۔ اس کا مقصد معتمرین کو پرسکون ماحول فراہم کرنا ہے تا کہ وہ اپنے مناسک پورے اطمینان اور سہولت کے ساتھ ادا کر سکیں۔الحجیلی نے بتایا کہ مذکورہ 750 اہل کاروں کو مختلف مقامات پر تقسیم کیا گیا ہے۔ ان میں مطاف کا صحن، پہلی منزل پر مطاف، طواف کے بعد نماز کی جگہ، زمینی اور پہلی منزل کی سعی کی گجہ، شاہ فہد توسیع اور مسجد حرام میں معتمرین اور نمازیوں کے داخلے کے لیے مخصوص مقامات شامل ہیں۔ڈائریکٹر نے بتایا کہ جنرل پریذیڈنسی نے رمضان مبارک کے لیے اپنی پوری ا

دنیا میں کورونا متاثرین کے ایک دن میں 7.66لاکھ نئے معاملات

واشنگٹن،ریو ڈی جنیریو// دنیا میں کورونا وائرس (کووڈ۔19) وبا کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں اس وائرس سے 7.66لاکھ سے زیادہ لوگوں کے متاثر ہونے کے بعد متاثرین کی مجموعی تعداد 14.07کروڑ کے تجاوز کرگئی ہے جبکہ اس وائرس انفیکشن سے اب تک 30.11لاکھ سے زیادہ لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔امریکہ کی جان ہاپکنس یونیورسٹی کے سائنس اینڈ انجینئرنگ سنٹر (سی ایس ایس ای) کی طرف سے جاری تازہ اعدادو شمار کے مطابق دنیا کے 192ممالک اور علاقوں میں متاثرین کی تعداد بڑھ کر 14,07,30596تک پہنچ گئی ہے جبکہ اب تک اس وائرس سے 30,11,014لوگوں کی موت ہوچکی ہے۔عالمی طاقت سمجھے جانے والے امریکہ میں کورونا کا قہر بڑھ رہا ہے اور یہاں متاثرین کی تعداد تین کروڑ 16 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے جبکہ پانچ لاکھ 66ہزار 904مریضوں کی موت ہوچکی ہے۔دنیا میں کورونا متاثرین کے معاملہ میں ہندستان دوسرے نمبر پر پہنچ گیا

امریکا: فائرنگ کے واقعے میں 4 افراد کی ہلاکت پر سکھ برادری سراپا احتجاج

امریکا میں کوریئر کمپنی کے احاطے میں فائرنگ سے 4 افراد کی ہلاکت پر سکھ برادری سراپا احتجاج ہے اور اس نے امریکی حکومت سے تحفظ کی فراہمی کا مطالبہ کردیا ہے۔جمعرات کو رات گئے امریکی ریاست انڈیانا کے شہر میں ایک مسلح شخص نے مشہور کوریئر کمپنی کے احاطے میں فائرنگ کی تھی جس میں 8 افراد ہلاک ہوئے تھے اور بعد میں حملہ آور نے خود کو بھی گولی مار کر خود کشی کر لی تھی۔امریکی میں سکھ اتحاد نے اپنے بیان میں کہا کہ جمعرات کو ہوئے حملے میں سکھ برادری کے چار افراد ہلاک ہوئے جبکہ زخمیوں کا ہسپتال میں علاج جاری ہے۔متاثرین میں سے ایک کومل چوہان نے بتایا کہ مرنے والوں میں، میری دادی بھی شامل ہیں اور ہم امریکی حکومت سے اس اندوہناک واقعے کے بعد پوری سکھ برادری کی حفاظت اور تحفظ کی فراہمی کا مطالبہ کرتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ میرے خاندان کے متعدد افراد کوریئر کمپنی میں ملازمت کرتے ہیں اور ہم بہت غمزدہ ہیں، ہ

تازہ ترین