تازہ ترین

امریکی وزیر خارجہ کا دورہ افغانستان، فوجی انخلا پر تبادلہ خیال

کابل//امریکی وزیر خارجہ اینٹونی بِلنکن ایک غیر اعلانیہ دورے پر گزشتہ روز اچانک افغانستان پہنچ گئے۔ انہوں نے افغان صدر اشرف غنی کے ساتھ ملاقات میں امریکی افواج کے انخلا کے معاملے پر تبادلہ خیال کیا۔ امریکی وزیر خارجہ کے مطابق اس دورہ کا مقصد کابل حکومت کو یقین دلانا ہے کہ افغانستان سے امریکی فوجی دستوں کی واپسی کے بعد بھی واشنگٹن کابل کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لئے پرعزم ہے۔  

بائیڈن کی افغان استحکام کیلئے ہمسایہ ممالک سے مدد طلب

 واشنگٹن//امریکی صدر جو بائیڈن نے اپنے تمام فوجیوں کے انخلا کے بارے میں منصوبے کا خاکہ پیش کرتے ہوئے افغانستان کو مستحکم کرنے میں خطے کے ہمسایہ ممالک 'بالخصوص پاکستان سے تعاون طلب کرلیا۔اس نئے منصوبے کے تحت 2 ہزار 500 امریکی اور 7 ہزار 'نیٹو اتحاد کے فوجی بتدریج افغانستان سے نکلیں گے۔یہ منصوبہ یکم مئی سے شروع ہوگا اور 11 ستمبر 2021 کو اختتام پذیر ہوگا جو 'ستمبر 2001' میں امریکا میں ہونے والے حملے کی 20ویں برسی کا روز ہوگا جس کی وجہ سے افغانستان میں امریکا نے جنگ کا آغاز کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ 'ہم خطے کے دیگر ممالک بالخصوص پاکستان، روس، چین، بھارت اور ترکی سے افغانستان کی زیادہ سے زیادہ مدد کرنے کو کہیں گے کیونکہ افغانستان کے مستحکم مستقبل میں ان سب کا مفاد ہے۔جو بائیڈن نے کہا کہ 'اس منصوبے کی طویل عرصے سے ایک دوسرے کے ساتھ مل کر تیاری کی جارہی تھی'۔ان

امریکہ کیلئے چین سب سے سنگین خطرہ :ایف بی آئی

واشنگٹن//عالمی خطرے کی تشخیص کی سالانہ رپورٹ کے اجراء  کے ایک دن بعد امریکی انٹیلی جنس حکام نے سینیٹ کو چین سے بڑھتی ہوئی کشیدگی سمیت امریکا کو درپیش چیلینجز سء متعلق آگاہ کیا۔غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق نیشنل انٹلیجنس کے ڈائریکٹر ، ایورل ہینس نے سینیٹ کی سلیکٹ کمیٹی برائے انٹلیجنس کو بتایا کہ چین کی حیثیت امریکہ کے حریف کی سی ہے۔ اپنی بڑھتی ہوئی طاقت کو استعمال کرنے سمیت۔ وہ اپنی آمرانہ حکومت کے حمایت کے لئے عالمی اصولوں کو کالعدم کرنے کے لئے کام کر رہا ہے۔ایورل نے کہا کہ اگرچہ اس نے امریکا کے لئے ایک بہت بڑا چیلنج کھڑا کیا ہے تاہم اس کی اپنی معاشی ، ماحولیاتی اور آبادیاتی کمزوریاں ہیں جو اس کی بالادستی حاصل کرنے کی صلاحیت کو مزید پیچیدہ کرسکتی ہیں۔سی آئی اے کے ڈائریکٹر ولیم برنز نے سینیٹرز کو کہا کہ چین کے ساتھ ٹیکنالوجی کا مقابلہ مسابقت چینی کمیونسٹ پارٹی کے ساتھ ہماری

ترک صدرکی عام شہری کے گھر پر افطارمیں شرکت

انقرہ// ترک صدر رجب طیب ایردوگان اور ان کی اہلیہ خاتون اول امینہ ایردوان کی عام شہری کے گھر میں افطار کرنے کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہیں۔ترکی اردو نامی ٹویٹر ہینڈل پر ترک صدر اور ان کی اہلیہ کی چند تصاویر شیئر کی گئیں جن میں ان دونوں نے نہ صرف ایک عام شہری کے گھر پر افطار میں شرکت کی اور اہلخانہ کے ساتھ افطار کیا بلکہ اس موقع پر بچوں کو تحائف بھی دئیے۔صدر رجب طیب ایردوان اور خاتون اول امینہ ایردوان نے آج ایک عام شہری کے گھر پر افطار میں شرکت کی اور اہل خانہ کے ساتھ افطار کیا۔تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ افطار کے موقع پر پھل اور کھجوروں سمیت سادہ اشیا موجود تھیں جن سے تقریباً ہر عام انسان افطاری کرتا ہے۔ ترک صدر اور ان کی اہلیہ نے بھی اہلخانہ کے ساتھ سادہ افطاری کی۔ افطار کے بعد ترک صدر اور خاتون اول نے اہلخانہ سے چائے کی نشست پر تبادلہ خیال بھی کیا۔صدر رجب طیب ایردوان اور خ

پاکستان میں تحریک لبیک پاکستان کالعدم قرار

اسلام آبا د // پاکستان میںوزارت داخلہ نے تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کو کالعدم قرار دے دیا۔وزارت داخلہ نے تحریک لبیک پاکستان پر پابندی کا کا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔انسداد دہشتگردی ایکٹ 1997 کے تحت تحریک لبیک پاکستان کو کالعدم قرار دیا گیا۔نوٹی فکیشن کے مطابق تحریک لبیک پاکستان ملک میں دہشت گردی اور دوسرے گھناؤنے جرائم میں ملوث ہے۔وزارت داخلہ کے نوٹی فکیشن میں کہا گیا ہے کہ تحریک لبیک ملک میں لوگوں کو اکسا کر انتشار پیدا کرنے میں ملوث ہے۔اس سے پہلے وزیرداخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا تھا کہ تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کو ختم کرنے کے لیے کل سپریم کورٹ سے بھی رجوع کررہے ہیں۔اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے مجھے اور نورالحق قادری کو ٹی ایل پی سے متعلق تفصیلی ہدایات دیں۔شیخ رشید نے کہا کہ پولیس اہلکاروں نے جانوں کا نذرانہ دے کر امن کو یقینی بنایا،