تازہ ترین

خا نہ کعبہ میں طواف دوبارہ شروع

مکہ المکرمہ//حرم شریف میں مطاف کے حصے میں طواف کا سلسلہ دوبارہ شروع کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے تاہم اس دوران کم لوگوں کا اجتماع ہی طواف کر سکے گا۔کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے سعودی حکومت نے 23 مارچ سے 21 روز کے لیے جزوی کرفیو کا اعلان کر رکھا ہے۔اس سے قبل حفاظتی اقدامات کے تحت تمام مساجد بشمول مسجد الحرام اور مسجد نبوی کے اندرونی اور بیرونی حصے میں پنجگانہ نماز اور نماز جمعہ کی ادائیگی پر مکمل پابندی عائد کی جا چکی ہے۔سعودی حکام نے اس سے قبل وائرس سے بچائو کے لیے خانہ کعبہ کے اطراف سپرے کے لیے مطاف خالی کرایا تھا اور طواف کے عمل کو روک دیا گیا تھا جب کہ بعد میں مطاف کو زائرین کے لیے کھولا گیا تو انہیں کعبہ کے قریب جانے کی اجازت نہیں دی گئی۔  

سعودی عرب کی مسلمانوں سے حج کی منصوبہ بندی نہ کرنے کی اپیل

ریاض //سعودی عرب نے دنیا بھر کے مسلمانوں کو صلاح دی ہے کہ وہ فی الحال حج بیت اللہ کی منصوبہ بندی نہ کریں ، کوروناوائرس کے تیزی کے ساتھ پھیلنے کے پیش نظر سعودی حکومت نے اگرچہ فی الحال حج 2020کو موقوف کرنے کا فیصلہ نہیں کیا ہے تاہم دنیا بھر کے مسلمانوں کوسے کہا گیا ہے کہ وہ فی الحال دنیا بھر کی صورتحال واضح ہوجانے تک انتظار کریں ۔ الجزیرہ میں نشر ایک خبر کے مطابق سعودی عرب کی حکومت میں حج اور عمرہ کے وزیر محمد صالح بنٹے نے ایک ٹی وی انٹرویو میں لوگوں سے اس سال حج کے منصوبے ابھی سے نہ بنانے کی اپیل کی ہے۔ اس سے قبل ، یہاں سال بھر چلنے والے عمرہ کو گزشتہ ماہ سے ہی بند کر دیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ، دو ہفتہ قبل کورونا کے پیش نظر یہاں مساجد میں نماز ادا کرنے یا دیگر اجتماعی مذہبی پروگراموں پر بھی فی الحال پابندی عائد ہے۔صالح نے سرکاری ٹی وی چینل الخبریہ سے بات چیت میں دعوی کیا کہ سعودی عرب عمر

امریکہ میں2 لاکھ افراد کی موت کا خطرہ :وائٹ ہاؤس

واشنگٹن // امریکہ میں کورونا وائرس (کووڈ -19) سے دو لاکھ افراد کی موت ہو سکتی ہے ۔وائٹ ہاؤس کی فیڈ بیک کوآرڈی نیٹر ڈے بورا بیرکس نے منگل کو پریس کے نمائندوں کو بتایاکہ ہمارے یہاں کورونا وائرس سے مرنے والوں کی اصل تعداد ایک لاکھ سے دولاکھ ہو سکتی ہے ۔ ہمیں لگتا ہے کہ یہ ایک حد ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں واقعی یقین اور امید ہے کہ ہم روزانہ مزید بہتر کرسکتے ہیں۔محترمہ بیرکس نے ایک چارٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں اس وبا سے ایک لاکھ سے دو لاکھ لوگوں کی موت ہو سکتی ہے ۔جان ہاپکنز یونیورسٹی کے مطابق امریکہ میں کورونا وائرس (کووڈ -19) سے 3700 افراد کی موت ہو چکی ہے اور 185000 متاثر ہیں۔دنیا بھر میں کورونا وائرس (کوویڈ ۔19) کے پھیلنے میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔  

کرونا کا عالمی بحران | 41920ہلاکتیں ،متاثرین کی تعداد 852486 ہوگئی

بیجنگ / جنیوا // دنیا کے سب سے زیادہ (اب تک 185) ممالک میں پھیل چکے کورونا وائرس (کووڈ -19) کا قہر تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اس خطرناک وائرس سے دنیا بھر میں اب تک 41920 لوگوں کی موت ہو چکی  ہے جبکہ قریب 852486 لوگ اس سے متاثر ہیں۔ چین میں اب تک 81518 افراد کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے اور 3305 لوگوں کی اس وائرس کے زد میں آنے کے بعد موت ہو چکی ہے۔ اس وائرس کو لے کر تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں ہوئی موت کے 80 فیصد معاملات 60 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے تھے۔ کورونا کے سلسلے میں سب سے زیادہ سنگین صورتحال اٹلی اور اسپین کی ہے۔ عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ -19) سے بری طرح متاثر اٹلی میں اس انفیکشن سے مرنے والوں کی تعداد 12 ہزار کا ہندسہ پار کر 12428 پہنچ گئی ہے۔اسپین میں اس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 8464 ہو گئی ہے۔ تازہ اعداد و شمار کے مطابق اسپی