تازہ ترین

محکمہ جنگلات کی مختلف اسامیوں کے لئے درخواستیں جمع کرنے والے امیداروں کا سری نگر میں احتجاج

تاریخ    9 دسمبر 2021 (28 : 06 PM)   


کشمیرعظمیٰ
سری نگر//محکمہ جنگلات کی مختلف اسامیوں کے لئے درخواستیں جمع کرنے والے امیداروں نے جمعرات کو یہاں پریس کالونی میں جمع ہوکر احتجاج درج کراتے ہوئے مطالبہ کیا کہ فاسٹ ٹریک بنیادوں پر بھرتی کاعمل شروع کیا جائے۔
انہوں نے سرکار کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اگر آنے والے دنوں میں ان کے مطالبے کو پورا نہیں کیا گیا تو صوبہ جموں اور کشمیر کے امیدوار سری نگر میں جمع ہو کر تا مرگ بھوک ہڑتال پر بیٹھیں گے۔احتجاجی محکمہ جنگلات اور سروس سیلکشن بورڈ کے خلاف جم کر نعرہ بازی کر رہے تھے۔
اس موقع پر ایک احتجاجی نے میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے محکمہ جنگلات میں فارسٹر اور فارسٹ انسپکٹر کی اسامیوں کے لئے سال2004،2010 اور سال2013 میں درخواستیں جمع کی تھیں۔
انہوں نے کہا کہ سال 2013 میں ہمارا ایک ٹیسٹ بھی لیا گیا اور سلیبس بھی فراہم کیا گیا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ تب سے ہم متعلقہ محکمے اور سروس سلیکشن بورڈ کے دفتروں کے چکر کاٹ رہے ہیں لیکن ہماری بات سننے کے بجائے ہماری توہین کی جا رہی ہے۔
موصوف احتجاجی نے کہا کہ ہم نے پیسہ جمع کرکے عدالت میں کیس بھی درج کیا اور سال2019 میں عدالت نے ہمارے حق میں فیصلہ سناتے ہوئے محکمے کو ہدایت دی کہ وہ فاسٹ ٹریک بنیادوں پر ہماری بھرتی کا عمل شروع کرے۔
انہوں نے کہا لیکن اس کے با وجود بھی محکمہ کوئی اقدام نہیں کر رہا ہے بلکہ ان اسامیوں کو پر کرنے کے لئے سر نو درخواستیں طلب کی جا رہی ہیں۔
احتجاجیوں نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے مداخلت کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا وہ ہماری فریاد کو سن لیں۔
انہوں نے کہا کہ اگر ہمارے مطالبے کو آنے والے دنوں میں پورا نہیں کیا گیا تو ہم صوبہ جموں اور کشمیر کے امیدوار سری نگر میں جمع ہو کر تامرگ بھوک ہڑتال شروع کریں گے۔
ان کا الزام تھا کہ اقربا پروری اور بیورو کریسی ان کے مستقبل کو ختم کر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ منظور نظر امیدواروں کے لئے ان اسامیوں کو پر کرنے کے لئے دوبارہ درخواستیں طلب کی جا رہی ہیں۔
 

تازہ ترین