تازہ ترین

ڈبل انجن کی حکومت ہوتی ہے تو کام بھی دوگنی رفتار سے ہوتا ہے:مودی

تاریخ    7 دسمبر 2021 (17 : 05 PM)   


یو این آئی
گورکھپور//وزیر اعظم نریندر مودی نے اترپردیش کے گورکھپور میں گذشتہ 20سال سے کھاد کارخانہ بند پڑے رہنے کے لئے گذشتہ حکومتوں کی منشی کو خاطی قرار دیتے ہوئے منگل کو کہا کہ مفاد عامہ کے کاموں کے لئے حکومت کی سوچ جب ایماندار ہوتی ہے تو کوئی بھی روکاوٹ نہیں ڈال سکتا مودی نے یہاں کھاد کارخانہ، نو تعمیر شدہ ایمس اور آئی سی ایم آر کے جدید ریسرچ سنٹر سمیت دیگر ترقیاتی پروجکٹوں کا افتتاح کرتے ہوئے کہا’ جب غریب۔ استحصال زدہ۔محروم طبقات کی فکر کرنے والی حکومت ہوتی ہے تو وہ محنت بھی کرتی ہے نتائج بھی لا کر دکھاتی ہے۔
 
انہوں نے کہا کہ گورکھپور میں کھاد کارکھانہ، ایمس اور میڈیکل ریسرچ سنٹر کا شروع ہونا یہ پیغام دے رہا ہے کہ جب ڈبل انجن کی حکومت ہوتی ہے تو کام بھی تیز ہوتا ہے ۔جب سوچ ایماندار ہوتی ہے تو کوئی بھی روکاوٹ نہیں ڈال سکتا ہے۔ اس موقع پر اترپردیش کی گورنر آنندی بین پٹیل، ریاست کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ، نائب وزیر اعلی کیشو پرساد موریہ اور ڈاکٹر دنیش شرما سمیت مرکزاور ریاستی حکومت کے مختلف وزرا اور سینئر افسران موجود تھے۔
انہوں نے کہا’ پانچ سال پہلے میں یہاں ایمس اور کھاد کارخانے کا افتتاح کرنے آیا تھا۔ آج ان دونوں کا ایک ساتھ افتتاح کرنے کا موقع بھی آپ نے مجھے دیا ہے۔ آئی سی ایم آر کے ریجنل میڈیکل ریسرچ سنٹر کو بھی آج اپنی نئی بلڈنگ ملی ہے۔ میں یوپی کے لوگوں کو مبارک باد دیتا ہوں۔۔
اس سے پہلے وزیر اعظم مودی نے اپنے خطاب کا آغاز پوروانچل میں بولی جانی والی پھوجبورپی زبان سے کرتے ہوئے گورکھپور کے لوگوں دیوتا کے مترادف قرار دیتے ہوئے ان سے خیر سگالی کا اظہار کیا۔مودی نے ملک میں کھاد کے غلط استعمال کو روکنے کے لئے کئے گئے اقدام کا ذکر کرتے ہوئے کہا’ ہم نے یوریا کا غلط استعمال روکا، یوریا کی 100فیصدی نیم کوٹنگ کی۔ ہم نے کروڑوں کسانوں کو’سائل ہیلتھ کارڈ’ دئیے تاکہ انہیں پتہ چل سکے کہ ان کے کھیت کو کس طرح کی کھاد کی ضرورت ہے۔
انہوں نے کہا کہ یوریا کے پروڈکشن کو بڑھانے کی ضرورت کے پیش نظر ہی بند پڑے کھاد پلانٹس کو دوبار شروع کرنے پر طاقت لگائی۔ مودی نے کہا کہ کھاد پلانٹ کے سنگ بنیاد کے وقت انہوں نے کہا کہ تھا کہ اس کارخانے کی وجہ،گورکھپور پورے حلقے میں ترقی کا محور بن کر ابھرے گا آج یہ سچ ثابت ہورہا ہے۔ انہوں نے توقع کا اظہار کیا کہ یہ کارخانہ ریاست کے متعدد کسانوں کو وافر مقدار میں یوریا فراہم کرے گاْ۔ اس سے پوروانچل میں روزگار اور سوروزگار کے نئے مواقع پیدا ہونگے۔
 

تازہ ترین