تازہ ترین

نیوزی لینڈ کو 372رنز سے شکست

ہندوستان نے گھریلو میدان پر لگاتار 14ویں سیریز جیتی

تاریخ    7 دسمبر 2021 (00 : 01 AM)   


ممبئی/آف اسپنروں روی چندرن اشون اور جینت یادو کے چار چار وکٹوں کی بدولت ہندوستان نے نیوزی لینڈ کو دوسرے کرکٹ ٹسٹ کے چوتھے دن صبح کے سیشن میں 167 رن پرڈھیر کرکے 372 رنوں سے بڑی جیت حاصل کی اوردومیچوں کی سیریز کو 1-0 سے جیت لیا۔ ہندوستان کی یہ لگاتار 14 ویں گھریلو سیریز جیت ہے ۔رنوں کے لحاظ سے یہ ہندوستان کی سب سے بڑی جیت بھی ہے ۔ آدھی ٹیم کل ہی پویلین لوٹ چکی تھی، جبکہ آدھی ٹیم نے آج پہلے سیشن میں ہی گھٹنے ٹیک دئے ۔ یہ میچ اعجاز پٹیل کے لیے یاد رکھا جائے گا جنہوں نے پہلی اننگ میں 10 وکٹیں لے کر اپنا نام تاریخ کے اوراق میں لکھوالیاتھا۔ دوسری جانب مینک اگروال جنہوں نے پہلی اننگ میں سنچری اور دوسری میں نصف سنچری بنائی۔ جینت یادو نے آج چار وکٹ لیے ۔ اس کے ساتھ ہی، اشون نے اننگ کا آخری وکٹ لیا، جو گھرریلو سرزمین پر ان کا 300 واں ٹیسٹ وکٹ تھا۔مینک اگروال کو پلیئر آف دی میچ اور اشون کو پلیئر آف دی سیریز کا ایوارڈ ملا۔ ہندوستان نے 2003 کے بعد پہلی بار آئی سی سی ٹورنامنٹ میں نیوزی لینڈ کو شکست دی ہے ۔ اس جیت کے ساتھ ہی ہندوستان نے ٹیسٹ چیمپئن شپ میں 12 پوائنٹس حاصل کر لیے اور اس نے ٹیسٹ چیمپئن شپ کے فائنل میں نیوزی لینڈ سے ملی شکست کا بدلہ لے لیا۔چوتھے دن جب کھیل شروع ہوا تو ہندوستانی ٹیم کو جیت کے لیے پانچ وکٹیں درکار تھیں اور نیوزی لینڈ کو جیت کے لیے 400 رنز چاہیے تھے ۔ تاہم دن کے پہلے ہی گھنٹے میں جینت یادو کی شاندار گیند بازی کی بدولت ہندوستانی ٹیم کو اپنی فتح تک پہنچنے کے لیے زیادہ انتظار نہیں کرنا پڑا۔ابتدائی چند اوورز میں کیوی بلے بازوں نے مثبت بلے بازی کرتے ہوئے کچھ گیندوں کو باونڈری لائن کے باہرپہنچایا۔ کانپور ٹیسٹ میں کیوی ٹیم کو مشکل صورتحال سے نکال کر میچ ڈرا کرانے والے بلے باز رچن روندر کا وکٹ آج سب سے پہلے گرا۔ انہیں جینت یادو نے دوسری سلپ میں کیچ آوٹ کرواکر ہندوستان کو جیت کے راستے پر بڑھادیا۔ رچن نے 50 گیندوں میں چار چوکوں کی مدد سے 18 رنز بنائے ۔اس کے بعد، جینت نے اپنے اگلے اوور میں کائل جیمیسن کو ایک آف اسپن گیند پرایل بی ڈبلیوکیا۔ اس کے ٹھیک دوگیند بعد ٹم ساؤتھی شاٹ لگانے کے لئے چہل قدمی کرتے ہوئے کریز سے باہرآئے لیکن گیند ان کے پیڈپر لگنے کے بعد وکٹ پر لگی اوروہ بولڈ ہوگئے ۔ اس کے تین گیند بعد اپنے اگلے اوورمیں شارٹ لیگ پر سمرول کو جینت نے کیچ کراکے اپنا چوتھا وکٹ لیا۔اس کے بعد اشون نے آخری وکٹ لے کر ہندوستان کی جیت کو یقینی بنایا۔ ہندوستانی پچ پر یہ اشون کا 300واں وکٹ تھا۔ گھریلو پچوں پر سب سے زیادہ وکٹ لینے کے معاملے میں اب وہ صرف انل کمبلے سے پیچھے ہیں۔ ہینری نکولس نے کل شام کو اشون کی کئی گیندوں کو ڈفینڈ کیاتھا۔ آج صبح بھی وہ فرنٹ فٹ پراسٹرائک لیتے ہوئے کئی گیندوں کو بلاک کررہے تھے ۔ تاہم جیسے ہی انہوں نے چہل قدمی کرنے کی کوشش کی، اشون نے انہیں فلائٹ سے بیٹ کرتے ہوئے اسٹمپ آوٹ کرادیا۔ نکولس نے 111 گیندوں میں آٹھ چوکوں کی مددسے 44 رن بنائے۔ اشون نے 34رن دے کر چاروکٹ لئے جبکہ جینت نے 49 رن پر چاروکٹ جھٹکے ۔ اگرٹام بلنڈل کے رن آوٹ کوچھوڑ دیں تواس سیریز میں 36 میں 33 وکٹ ہندوستانی اسپنرس نے لئے ۔ پلیئرآف دی سیریز بنے اشون نے کل 70 رن دے کر 14وکٹیں حاصل کیں۔ (یواین آئی)
 

تازہ ترین