تازہ ترین

رعناواری اسپتال کے شعبہ امراض چشم میں ڈاکٹروں کی کمی | مریضوں کی جراحیاں منسوخ، معاملہ جلد حل کیا جائے گا : ناظم صحت

تاریخ    5 دسمبر 2021 (00 : 01 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //جواہر لال نہرو میموریل اسپتال رعناواری کا شعبہ امراض چشم ڈاکٹروں کی عدم دستیابی کی وجہ سے ٹھپ ہوگیا ہے۔ رعناواری اسپتال کے شعبہ امراض چشم میںہر ہفتہ 60سے 70 جراحیاں انجام دی جاتی تھیں لیکن ڈاکٹروں کی عدم دستیابی کی وجہ سے مریضوں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے۔ زیر علاج مریضوں نے بتایا کہ آنکھوں کے شعبہ میں دو سینئر ڈاکٹر موجود تھے ،جن میں سے ایک کا اچانک تبادلہ کیا گیا ہے جبکہ ایک اور سینئر ڈاکٹر 3دن قبل کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی وجہ سے قرنطین میں ہے۔محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ سوموار تک معاملہ حل کیا جائے گا۔ رعناواری اسپتال میں ہفتہ میں ہونے والے 250سے زائد جراحیوں میں شعبہ امراض چشم  کی 100سے زائد جراحیاں ہوتی ہیں جبکہ اسپتال کو شعبہ امراض چشم کی وجہ سے ہی ڈی این بی حالیہ دنوں ہی ملا ہے لیکن اسپتال کا یہ شعبہ اب ٹھپ ہوگیا ہے۔رعناواری سے تعلق رکھنے والے غلام محمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا’’اسپتال میں آنکھوں کے دو ہی سینئر ڈاکٹر موجود تھے جن میں ایک کا اچانک سب ضلع اسپتال ناگم تبادلہ ہوا ہے جبکہ دوسر ڈاکٹر 3دن قبل کورونا وائرس سے متاثر ہوا ہے اور ابھی قرنطین میں ہے‘‘۔غلام محمد نے بتایا کہ  پچھلے 3دنوں سے ڈاکٹروں کی عدم دستیابی کی وجہ سے وہاں کوئی بھی جراحی نہیں ہوئی ہے اور غریب مریض نجی کلنکوں پر جانے کیلئے مجبور ہے۔ نوڈل آفیسر رعناواری ڈاکٹر بلقیس نے بتایا کہ شعبہ امراض چشم میں ڈاکٹروں کی کمی کا معاملہ ہم نے ناظم صحت کے ساتھ اٹھایا ہے اور یہ جلد حل کیا جائے گا۔ ڈائریکٹر ہیلتھ سروسز کشمیر ڈاکٹر مشتاق احمد راتھر نے کہا کہ شعبہ کے ایک سینئر ڈاکٹر واپس عناواری بھیجا جارہا ہے اور سوموار کو رعناواری اسپتال میں  پھر سے کام کرنا شروع کردیں گے۔   
 

تازہ ترین