تازہ ترین

جموں کشمیر ہر پہلو سے بدلا، اور بدل رہا ہے

آنے والے برسوں کے دوران بجلی کٹوتی سے آزاد ہونگے: لیفٹیننٹ گورنر

تاریخ    3 دسمبر 2021 (00 : 01 AM)   


مانٹیرنگ ڈیسک
سرینگر // لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے کہا ہے کہ دفعہ 370کی منسوخی کے بعد جموں کشمیر ہر پہلو سے بدلا اور بدل رہا ہے۔انہوں نے ایک نیوز چینل نیوز 18کو انٹر ویو دیتے ہوئے کہا ’’لوگ بخوبی جانتے ہیں کہ جموں کشمیر کس طرح بدل رہا ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ2018اور 2019میں 67000کروڑ روپے خرچ کئے  گئے4000کروڑ پچھلے سال مختلف ترقیاتی پروجیکٹوں پر خرچ کئے گئے۔ انہوں نے کہا کہ کل 25پروجیکٹوں پر کام چل رہا ہے جو مکمل ہونے جارہے ہیں۔انکا کہنا تھا کہ ابھی 11000نوجوانوں کو نوکری دینی ہے، تاکہ وہ روزگار کماسکیں۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ جموں کشمیرکسانوںکی آمدنی میں تیسرے پائیدان پر آگیا ہے،سڑکوں کی تعمیر کے سلسلے میں تیسرے درجے پر پہنچ گیا ہے،میکڈم بچھانے کیلئے 1100 کلو میٹر کا نشانہ عبور کرے اب 1500یا 1600سے زیادہ کلو میٹر مکمل کئے جارہے ہیں جو کہ پہلے نہیں ہوتا تھا۔انہوں نے کہا کہ کڑہ سے نئی دہلی ایکسپریس وے پربہت جلد کام شروع ہوگا، جبکہ پہلے کے مقابلے میں سرینگر ائر پورٹ سے جموں سے زیادہ پروازیں چل رہی ہیں اور اب شبانہ پروازیں بھی شروع ہوئی ہیں۔انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی پروازیں شروع ہو گئی ہیں۔بجلی  کے معاملے  پر انہوں نے کہا کہ پچھلے 4ماہ میں بجلی بنانے والی قومی کمپنیوں کیساتھ متعدد معاہدے کئے گئے ہیں اورآنے والے سالوں کے دوران جموں کشمیر بجلی کٹوتی سے آزاد ہوگی۔انہوں نے کہا کہ پہلے تین میڈیکل کالج ہوا کرتے تھے اب 7میڈیکل کالک کام کررہے ہیں،دو نئے کینسر انسٹی چیوٹ قائم کئے گئے ہیں،ایمز کی منظوری ہوئی ، آئی آئی ایم ہیں،۔لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ جموں کشمیر میںبڑے پیمانے میں سرمایہ کاری آرہی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ نئی دہلی کواندازہ تھا کہ 15یا 20ہزار کروڑ آئیں گے لیکن50000ہزار کروڑ کی سرمایہ کاری آرہی ہے۔انکا کہنا تھا کہ ٹورازم اور جموں کشمیر ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں۔نومبر مہینے میں 13لاکھ سیاح آئے، اکتوبر میں 11لاکھ آئے تھے۔انہوں نے کہا کہ370ہٹنے سے اقتصادی بحالی ہوئی،نوکریاں ملی ، تعلیم ملی،  ذات پات کا خاتمہ ہوا۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کو تعمیر و ترقی نظر آرہی ہے، پورا نظام بدل گیا ہے،لوگوں کو بدلی صورتحال نظر آرہی ہے، ایک مثبت ماحول پیدا ہوا ہے۔انہوں نے کہا کہ جموں کشمیر ہر پہلو سے تبدیل ہوگیا ہے اور یہ تبدیلی آنے والے ایام کی مثبت عکاسی کررہی ہے۔