تازہ ترین

کولکتہ نائٹ رائیڈرز اور دہلی کیپٹلس بڑی نیلامی سے چھٹکارا حاصل کرنا چاہتے ہیں

تاریخ    3 دسمبر 2021 (00 : 01 AM)   


ممبئی//کولکتہ نائٹ رائیڈرز (کے کے آر) کے چیف ایگزیکٹیو وینکی میسور اور دہلی کیپٹلس کے پارتھا جندل کے مطابق، انڈین پریمیئر لیگ (آئی پی ایل) کی بڑی نیلامی اب اتنی نتیجہ خیز نہیں رہی ہے ۔ دو بڑی ٹی ٹوئنٹی ٹیموں کے سربراہان کا یہ سخت بیان منگل کے روزآیا۔ موجودہ آٹھ ٹیموں نے آنے والی بڑی نیلامی سے قبل اپنے کچھ کھلاڑیوں کو برقرار رکھا ہے ۔ میسور کو لگتا ہے کہ بڑی نیلامی 'سب کے لیے یکساں' نہیں رہی ہے ۔ آئی پی ایل کے آغاز کے تین سال بعد 2011 میں پہلی بڑی نیلامی کے موقع پر جندل نے کہا کہ تین سال تک کئی کھلاڑیوں پر وقت اور پیسہ لگانے کے بعد انہیں کھونا "دل دہلا دینے والا" تھا۔ منگل کے روز میسور نے کے کے آر کے ریٹین کھلاڑیوں پر بات کرتے ہوئے کرک انفو سے کہا، ‘‘ لیگ کے لئے ایک اہم موڑ آرہا ہے جہاں آپ کو یہ سوال کرنا ہوگا کہ کیا ایک بڑی نیلامی کی ضرورت ہے ۔ آنے والے نئے کھلاڑیوں کے لئے ڈرافٹ کیے جاسکتے ہیں یا باہمی رضامندی سے انہیں ٹریڈ (تجارت) کرسکتے ہیں، کھلاڑیوں کو لون پر بھیجا جاسکتا ہے اور ہم طویل عرصہ کے لئے ٹیم بنانے کی اجازت دے سکتا ہے ۔ ’’ دونوں ٹیموں نے زیادہ سے زیادہ چار کھلاڑیوں کو برقرار رکھا لیکن اس کے باوجود انہیں کئی بڑے کھلاڑیوں کو ڈراپ کرنا پڑا جو گزشتہ چند سیزن میں ٹیم کے اہم کھلاڑی تھے ۔ کے کے آر نے شبھمن گل، لوکی فرگیوسن، نتیش رانا اور راہل ترپاٹھی جیسے کئی کھلاڑیوں کا ساتھ چھوڑا جبکہ دہلی نے شکھر دھون، کگیسو ربادا اور روی چندرن اشون کو جانے دیا۔ کیپٹلز کے سابق کپتان شریس ایر نے نیلامی میں جانے کا فیصلہ کیا ہے اور جندل کو لگتا ہے کہ اس صورتحال کو روکا جا سکتا تھا۔ منگل کے روز براڈکاسٹر اسٹار اسپورٹس سے بات کرتے ہوئے جندل نے کہا، "شریس ایر، شیکھر دھون،کگیسو ربادا، اشون کو کھونا دل دہلا دینے والا تھا۔