یکم دسمبر سے مہنگائی کی مار

ماچس سے لیکر ایل پی جی سلنڈر اور موبائل ریچارج تک سب کچھ مہنگا

تاریخ    2 دسمبر 2021 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
نئی دہلی// بدھ سے دسمبر مہینے کی شروعات ہو گئی ہے اور یکم دسمبر سے عوام پر مہنگائی کی مار میں اضافہ ہونے جا رہا ہے۔ آج سے ماچس کی ڈبیا سے لے کر گیس سلینڈر، ٹی وی دیکھنا اور فون پر بات کرنا مزید مہنگا ہو جائے گا۔ یکم دسمبر سے ایل پی جی سلینڈر کیلئے اب زیادہ قیمت ادا کرنا ہوگی۔ سرکاری تیل کمپنیوں نے گیس سلینڈر کی قیمتوں میں 101 روپے کا اضافہ کر دیا ہے۔ یہ اضافہ کمرشل (تجارتی) سلینڈر پر کیا گیا ہے۔ تاہم گھریلو گیس کی قیمتوں میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے۔ تجارتی سلینڈر کے داموں میں اضافہ کے بعد دہلی میں اب یہ 2101 روپے میں دستیاب ہوگا۔دیاسلائی یعنی ماچس کی ڈبیا کے داموں میں 14 برسوں کے بعد اضافہ ہوا ہے۔ اب ماچس کی ڈبیا خریدنے کیلئے ایک روپے کے بجائے 2 روپے ادا کرنا ہوں گے۔ اس سے پہلے سال 2007 میں ماچس کی ڈبیا کے داموں کو 50 پیسے سے بڑھا کر ایک روپے کیا گیا تھا۔ ریلائنس جیو کا استعمال کرنے والے موبائل فون صارفین کو بھی جھٹکا لگنے جا رہا ہے۔ یکم دسمبر سے جیو کے 24 دن سے لے کر 365 دن تک کی ویلیڈٹی والے متعدد پلانز کے داموں میں اضافہ کیا گیا ہے۔ جیو کے صارفین کو ریچارج کیلئے اب 8 سے 20 فیصد تک زیادہ دام ادا کرنا ہوں گے۔ خیال رہے کہ بھارتی ایئرٹیل اور ووڈافون آئیڈیا نومبر کے آخر میں ہی اپنے ٹیرفس میں اضافہ کر چکی ہیں۔اگر آپ ایس بی آئی کا کریڈٹ کارڈ استعمال کرتے ہیں، اب آپ کے خرچ میں اضافہ ہونے جا رہا ہے۔ ایس بی آئی نے کریڈٹ کارڈ کی ای ایم آئی سے خریدداری کرنے پر یکم دسمبر سے اضافی 99 روپے وصول کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ 99 روپے آپ کو پروسیسنگ فیس کے طور پر اس وقت ادا کرنا ہوں گے جب آپ ایمیزون یا فلپ کارٹ جیسی ای کامرس ویب سائٹ سے کوئی چیز ای ایم آئی کے ذریعے خریدیں گے۔پی این بی نے بچت کھاتہ برداروں کو بڑا جھٹکا دیتے ہوئے انہیں حاصل ہونے والے سود کی شرح میں کمی کر دی ہے۔ بینک نے سالانہ شرح سود کو 2.90 فیصد سے گھٹا کر 2.80 فیصد کر دیا ہے۔ بینک کا یہ نیا فیصلہ یکم دسمبر یعنی آج سے نافذ العمل ہوگا۔
 

تازہ ترین