تازہ ترین

کورونا متاثرین میں پھر اُچھال

۔ 234متاثر، 89مسافر بھی شامل،ایک فوت،پہلی مرتبہ ضلع ریاسی سرفہرست

تاریخ    2 دسمبر 2021 (00 : 01 AM)   


پرویز احمد
سرینگر // جموں و کشمیر میں 9جولائی کے بعد بدھ کو پہلی مرتبہ روزانہ متاثر ہونے والی افراد کی تعداد 230سے زیادہ ہوگئی ہے۔ پچھلے 24گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے51ہزار 825ٹیسٹ کئے گئے جن میں 89مسافروں سمیت مزید 234افراد کی رپورٹیں مثبت آئی ہیں۔ اس سے قبل 9جولائی کو جموں و کشمیر میں 262افراد کی رپورٹیں مثبت آئی تھیں۔ متاثرین کی مجموعی تعداد 3لاکھ 37ہزار 86تک پہنچ گئی ہے۔اس دوران پچھلے 24گھنٹوں میں جموں و کشمیر میں ایک اور شخص کورونا وائرس سے فوت ہوگیا ہے۔ جموں و کشمیر میں متوفین کی مجموعی تعداد 4477ہوگئی ہے۔ گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس سے مزید 234افراد متاثر ہوئے ہیں جن میں جموں میں 116جبکہ کشمیر میں 118متاثر ہوئے ہیں۔ کشمیر میں متاثر ہونے والے سبھی118افراد مقامی سطح پر رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔ کشمیر میں متاثر ہونے والے سرینگر میں 63، بارہمولہ میں 28، بڈگام میں 3، پلوامہ میں 1، کپوارہ میں 5، بانڈی پورہ میں 6، گاندربل میں 6، کولگام میں 6جبکہ اننت ناگ اور شوپیان میں کسی کی رپورٹ مثبت نہیں آئی ہے۔ کشمیر میں متاثرین کی مجموعی تعداد 2لاکھ 11ہزار 922تک پہنچ گئی ہے۔ بدھ کو وادی میں مزید ایک شخص کورونا وائرس سے پیدا ہونے والے نمونیا سے فوت ہوگیا ہے۔ وادی میں متوفین کی مجموعی تعداد 2292ہوگئی ہے۔ جموں صوبے کے ، رام بن ،کٹھوعہ اور سانبہ میں کسی کی رپورٹ مثبت نہیں آئی ہے جبکہ دیگر 8اضلاع میں 116افراد کی رپورٹیں مثبت قرار دی گئی ہیں۔ جموں صوبے میں مثبت قرار دئے گئے 116افراد میں 89بیرون ریاستوں سے سفر کرکے جموں پہنچے جبکہ دیگر 27افراد مقامی سطح پر رابطے میں آنے کی وجہ سے متاثر ہوئے ہیں۔ جموں صوبے میں متاثر ہونے والے 116افراد میں جموں میں 20، ادھمپور میں 2، راجوری میں 2، ڈوڈہ میں 1، کشتواڑ میں 2، پونچھ میں 1 جبکہ ریاسی میں 88افراد وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ جموں صوبے میں متاثرین کی مجموعی تعداد 1لاکھ 25ہزار 164تک پہنچ گئی ہے۔ جموں صوبے میں مسلسل چوتھے دن بھی کورونا وائرس سے کسی کی موت نہیں ہوئی ہے۔ جموں صوبے میں  متوفین کی مجموعی تعداد 2185بنی ہوئی ہے۔  
 
 

غیر ملکی مسافروں کی وادی آمد

۔8گھنٹے تک قرنطین لازمی، 3مراکز قائم

پرویز احمد
 
سرینگر //کورونا وائرس کی اومیکرون ہیت کے پھیلائو کو دیکھتے ہوئے ضلع انتظامیہ سرینگر نے غیر ملکی مہمانوں کیلئے تین خصوصی قرنطین سینٹر قائم کئے ہیں ۔ صنعت نگر  میریج ہال اور دیگر 2ہوٹلوں کو قرنطین سینٹروں میں تبدیل کیا گیا ہے۔ سرینگر انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر تشخیصی ٹیسٹ کرانے کے بعد ، غیر ملکی مسافروں کو8گھنٹوں تک لازماًقرنطین سینٹر میں گزارنے ہونگے۔ جن مسافروں کی رپورٹ مثبت آئے گی یا جن مسافروں میںاومیکرون کی تصدیق ہوگی ان کو ڈی آر ڈی او کے خصوصی اسپتال میں علاج کیلئے بھیجا جائے گا۔ ضلع انتظامیہ سرینگر نے کورونا وائرس کی نئی ہیت کو دیکھتے ہوئے کئی اقدامات اٹھائے ہیں۔ سردیوں کے آمد کے ساتھ ہی کشمیر میں بین الاقوامی سیاحوں کے آمد کا سلسلہ شروع ہونے کی اُمید ہے اورمحکمہ سیاحت کئی پروگراموں کا انعقاد بھی کرنے جارہا ہے۔ 
 
 

بین الاقوامی پروازیں

 شروع کرنیکا فیصلہ التوا میں

یو این آئی
 
نئی دہلی//حکومت نے اس ماہ سے بین الاقوامی ائر لائنز شروع کرنے کے فیصلے کو تبدیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ کووڈ وبا میں کورونا کے نئے ویریئنٹ کے اثرات کو دیکھتے ہوئے بین الاقوامی پروازوں کے بارے میں فیصلہ بعد میں کیا جائے گا۔ڈائریکٹوریٹ جنرل آف سول ایوی ایشن نے بدھ کو یہاں ایک سرکیولرمیں بتایاکہ کورونا کے نئے ویریئنٹ سامنے آ رہے ہیں جس کی وجہ سے بدلتے ہوئے عالمی منظر نامے کو مدنظر رکھتے ہوئے تمام متعلقین کے ساتھ مسلسل رابطے کے ساتھ صورتحال پر کڑی نظر رکھی جا رہی ہے اور تجارتی بین الاقوامی پروازوں کے آغاز کی تاریخ کے حوالے سے مناسب وقت پر فیصلہ کیا جائے گا۔سول ایوی ایشن کے ڈائریکٹوریٹ جنرل نے 26 نومبر کو جاری ایک سرکیولر میں بتایا تھا کہ کمرشل بین الاقوامی پروازوں پر پابندی 14 دسمبر کی آدھی رات تک بڑھادینے کی بات کہی تھی اور اس سے قبل وزارت شہری ہوا بازی کے ذرائع نے 15 دسمبر سے تجارتی بین الاقوامی پروازیں شروع کرنے کی اطلاع دی تھی۔
 
 

۔2ملازمین مثبت

.JKB سوپور شاخ بند

غلام محمد
 
سوپور//حکام نے بدھ کے روز شمالی کشمیر کے سوپور قصبے میں جموں اور کشمیر بینک کی مرکزی شاخ کو بند کرنے کا حکم دیا جب اس کے دو عملے کے ارکان کو کوویڈ 19 مثبت پایاگیا۔ دو ملازمین کے کوویڈ 19 مثبت آنے کے بعد برانچ کو احتیاطی تدابیر کے طور پر بند کر دیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ متاثرہ ملازمین کے تمام پرائمری اور سیکنڈری رابطوں کو مشورہ دیا گیا ہے کہ وہ خود کو الگ تھلگ کریں اور کوویڈ 19 کا ٹیسٹ کروائیں۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ حکام نے گزشتہ دس دنوں سے قصبے کے کئی علاقوں کو کنٹینمنٹ زون قرار دے رکھا ہے جن میں الصفا کالونی، واطلب سانگری، جلال آباد 'اے' اور برامون محلہ روہامہ رفیع آباد شامل ہیں۔
 

تازہ ترین