تازہ ترین

رام باغ سرینگرمیں شوٹ آئوٹ| 3ملی ٹینٹ جاں بحق

پل کے نزدیک ناکے کے دوران سیکورٹی فورسز سے اچانک آمنا سامنا

تاریخ    25 نومبر 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر// رام باغ چوک میں بدھ کی سہ پہر مختصر فائرنگ ہوئی جس کے بعد پولیس نے 3 جنگجوئوں کی ہلاکت کو دعویٰ کیا۔یہ واقعہ سہ پہر تقریباً 5بجے پیش آیا۔اُس وقت رام باغ میں گاڑیوں اور لوگوں کی بھار ی بھیڑ تھی اور چھاپڑی فروشوں کے آگے بھی بری تعداد میں لوگ خریداری کررہے تھے۔پولیس نے کہا ہے کہ مہلوکین میں پائین شہر کا عسکری کمانڈر مہران بھی شامل ہے جو عید گاہ علاقے میں 2ٹیچروں کی ہلاکت میں ملوث تھا۔

واقع کیسے ہوا؟

پولیس نے بتایاکہ کچھ جنگجوئوںکے حرکنات و سکنات کے بارے میں انہیں مصدقہ طور پر اطلاع ملی جس کے بعد رام باغ کراسنگ، برزلہ پل اور باغات چوک میں ناکے لگائے گئے اور مشکوک گاڑیوں کی چیکنگ کی جاتی رہی۔بتایا گیا ہے کہ سولنہ کی طرف سے رام باغ پل کراس کرنے کے بعد نیلے رنگ کی ایک ویگنار گاڑی کو رکنے کا اشارہ کیا گیا لیکن واپس فائر کیا گیا اور جوابی کارروائی میں شوٹ اوٹ کے دوران 3ملی ٹینٹوں کی ہلاکت ہوئی۔پولیس کے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر اس بات کی تصدیق کی گئی کہ رام باغ علاقے میں مختصر شوٹ اوٹ میں 3عسکریت پسند مارے گئے جن کی شناخت کی جارہی ہے۔واقعہ کے فورا بعد سڑک سنسان ہوئی اور سولنہ کے علاوہ بازلہ اور باغات کے علاوہ نٹی پورہ چوک میں گاڑیاں روک دی گئیں اور تینوں ملی ٹینٹوںکی لاشیں پولیس کنٹرول روم پہنچائی گئیں۔ بعد میں سرک پر پڑے خون کے دھبے دھوئے گئے اور کافی دیر کے بعد گاڑیوں کی آمد و رفت بحال کی گئی۔اس کے فوراً بعد مقامی خواتین اور دیگر کئی لوگ یہاں جمع ہوئے اور انہوں نے ہلاکتوں کیخلاف احتجاج کیا۔ وہ نعرے لگارہے تھے ۔کافی دیر تک یہاں نعرے بازی کا سلسلہ جاری رہا جس کے بعد پتھرائو بھی ہوا۔نوجوانوں نے سیکورٹی فورسز پر پتھرائو کیا اور یہاں پر تشدد جڑپیں کافی دیر تک جاری رہیں۔ مظاہرین کو فورسز نے بعد میں منتشر کیا ۔ادھر نواب بازار جمالٹہ میں بھی پتھرائو کے واقعات پیش آئے تاہم ان پر فوری طور قابو پایا گیا۔پولیس نے مہلوک جنگجوئوںکے بارے میں بتایا کہ انکی شناخت مہران یاسین شالہ ولد محمد یاسین شالہ ساکن جمالٹہ نزدیک کاکہ صاحب آستان کنہ مزار مہاراج گنج، باسط احمد ڈار ولد مرحوم عبدالرشید ڈار ساکن ریڈونی پائین کیموہ اور منظور احمدمیر ولد مرحوم سنا اللہ میر ساکن ببہ ہار پلوامہ کے طور پر ہوئی ہے۔مہران کے بارے میں  پولیس میں گمشدہ رپورٹ 19مئی 2021کو ڈالی گئی تھی اور وہ 18مئی سے ہی سرگرم ہوا تھا۔باسط احمد ڈار کے بارے میں پولیس ریکارڈ میں اسکی گمشدگی کی رپورٹ 2مئی 2021کو ڈالی گئی لیکن وہ 26اپریل سے ہی سرگرم ہوا تھا۔منظور احمد میر کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ وہ 6جون 2021کو سرگرم ہوا تھا جبکہ اسکی گمشدگی کی رپورٹ 22جون کو ڈالی گئی تھی۔ادھرپولیس کے ترجمان نے آئی جی پی کشمیر وجے کمار کے حوالے سے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ’’ رام باغ سرینگر میں مختصر شوٹ آوٹ کے دوران تین جنگجوئوںکو ہلاک کر دیا گیا ۔ ٹویٹ میںپولیس نے لکھا کہ  رام باغ سرینگر علاقے میں مسلح جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد جموں کشمیر پولیس نے پل کے نزدیک ناکہ بٹھایا تو وہاںسے جنگجوئوں کا گذر ہوا اور فرار ہونے کی کوشش میں گولیوں کے تبادلے میں تین جنگجوئوں کی ہلاکت ہوئی۔
 

تازہ ترین