میدانِ حشر

تاریخ    7 نومبر 2021 (00 : 01 AM)   


سہی نہیں ہے نہ سہ سکیں گے
  نبی ؐ رحمت  ہماری  ذلت 
جزا کے دن جب اُٹھے گی خلقت
تو ڈھونڈ لے گی وہ اُن کی قُربت
 طویل سجدے میں کر رہے وہؐ
  بیان  ہونگے  خدا کی مدحت
عرق میں ڈوبے بدن کے اعضاء 
وہاں  پہ دیکھیں گے رب کی قُدرت
بلک رہیں ہونگے پیاس سے سب
نہ کوئی مہلت نہ ہوگی فُرضت
سما وہ کتنا عجیب ہوگا
نہ باپ بیٹے میں ہوگی اُلفت
فرشتے مومن کے ساتھ ہونگے
َِ  بَلا کی اُن کو ملے گی راحت
اور حال کیا ہوگامُنکروں کا 
اُنہیں تو ہوگی فقط عُقوبت
سجے گا میداں حساب کا جب
اُٹھائینگے سر رسولِ رحمتؐ
 خدا کی چاہت سے جسکو چاہے
کرینگے اُن کی وہ خود شفاعت
دُعا ہے تُم سے خلوصِ دل سے
خلوصِ دل سے خلوصِ دل سے
 خدائے اعظم  رفیقِ اعظم 
نوازنا  واں ہمیں بھی عزت
 
طُفیلؔ شفیع 
 گورنمنٹ میڈیکل کالج سرینگر
موبائل نمبر؛6006081653
 

تازہ ترین