اوڑی اسپتال میں حاملہ کی موت | ایس ڈی ایم تحقیقات کررہے ہیں

تاریخ    27 اکتوبر 2021 (00 : 01 AM)   


ظفر اقبال
اوڑی//اوڑی سب ضلع اسپتال میں گزشتہ دنوں ایک 24 سالہ حاملہ خاتون کی موت کے بعد ایس ڈی ایم اوڑی نے معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہے۔ ایس ڈی ایم اوڑی ہر ویندر سنگھ نے بتایا کہ وہ اس معاملے کی از خود تحقیقات کر رہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ وہ متاثرہ کنبے اور اسپتال عملے سے پوچھ تاچھ کر کے حقائق جاننے کی کوشش کر رہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ خاتون کے علاج میں لاپرواہی برتنے والے ڈاکٹروں کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے گی۔ ایس ڈی ایم نے بتایا کہ وہ جلدہی ایک تفصیلی انکوائری رپورٹ بنا کر ڈپٹی کمشنر کو روانہ کریں گے۔متوفی حاملہ کے شوہر افتخار حسین منہاس نے الزام لگایا تھا کہ اس نے اپنی حاملہ بیوی کو 18 اکتوبر کی صبح 5 بجے اوڑی سب ضلع اسپتال لایا تھا جہاں طبی عملہ کاکوئی اہلکار موجود نہیں تھا۔انہوں نے الزام لگایا کہ صبح 8 بجکر 30 منٹ پر ایک نرس آئی جو دیکھ کر واپس چلی گئی-انہوں نے بتایا کہ ان کی بیوی درد سے چلا رہی تھی مگر کسی نے توجہ نہیں دی- منہاس نے کہاکہ بار بار پکار لگانے کے بعد قریب 11 بجکر 30 منٹ پر ڈاکٹر اور دیگر عملہ مریض کے پاس آئے مگر اسکے کچھ دیر بعد اس کی بیوی فوت ہوگئی۔انہوں نے الزام لگایاکہ اسپتال عملہ کی لاپروائی کی وجہ سے اس کی بیوی کی موت  واقع ہوئی۔انہوں نے کہا اگر ڈاکٹروں نے اس کی بیوی کا بر وقت علاج کیا ہوتا یا پھر بارہمولہ منتقل کیا ہوتا ،تو اس کی بیوی کی جان بچ جاتی۔
 

تازہ ترین