مزید خبریں

تاریخ    22 اکتوبر 2021 (00 : 01 AM)   


 

کشمیر سے آنے والے غیر مقامی مزدور

مختلف این جی اوز ریلوے سٹیشن پرخدمت میں مصروف

جموں// ریلوے پولیس اور مختلف غیر سرکاری و سماجی اداروں نے حالیہ ٹارگیٹ ہلاکتوں کے بعد وادی کشمیر سے فرار ہونے والے غیر مقامی لوگوں کے توی ریلوے اسٹیشن پہنچنے پر ان کے لئے کئے جانے والے انتظامات کا جائزہ لیا۔ایک پولیس افسر نے کہا کہ ایس ایس پی جموں ریلویز عارف رشو جن کے ہمراہ ایس ڈی پی او ریلویز روہت دیو جموال اور دیگر عہدیداران تھے ، نے ریلوے اسٹیشن توی کا دورہ کیا اور وہاں کشمیر سے فرار ہونے والے غیر مقامی لوگوں کے لئے کئے جانے والے انتظامات کا جائزہ لیا۔ انہوں نے بتایا کہ کہ موصوف ایس ایس پی نے موقع پر ریلوے حکام اور سیول انتظامیہ کے افسران سے بات چیت کی۔ان کا کہنا تھا کہ رضا کار گروپوں بشمول ٹریڈرس ویر ہاؤس ایسو سی ایشن اور جموں و کشمیر خلصہ ایڈ نے ان لوگوں کے طعام و دیگر سہولیات کے لئے ریلوے پولیس کا ہاتھ بٹایا۔بتادیں کہ حالیہ ٹارگیٹ ہلاکتوں کے بعد کشمیر سے ہزاروں کی تعداد میں غیر مقامی لوگ فرار ہو کر جموں پہنچے ہیں۔
 

 جوڈیشل آفسر عصمت دری کیس میں مجر م قرار 

 عدالت نے سزا کا تعین 23 اکتوبر کومقرر کیا ہے 

 جموں//جموںکی ایک فاسٹ ٹریک عدالت نے ایک سابق جوڈیشل افسر کو عصمت دری کی ایک کیس میں مجر م ٹھہرا یا ہے تاہم عدالت نے سزا کا تعین 23 اکتوبر کومقرر کیا ہے۔جوڈیشل افسرراجیش ابرول پر 2018 میںرنبیر پینل کوڈ کی دفعہ 376 کے تحت فرد جرم عائد کی گئی۔ وہ ریاستی ہائی کورٹ میں چھٹی کے ریزرو کے طور پر تعینات تھے۔ عدالت میں پیش کی گئی کیس ڈائر ی کے مطابق جموں کے جانی پورہ پولیس اسٹیشن میں 12 جنوری2018کو ایک خاتون کی شکایت پر اسکے خلاف پولیس تھا نہ جانی پورہ جموں میں ایک ایف آ ئی آ ر زیر نمبر6/2018 تحت سکشن420 ، 376 درج کیا گیا۔ اور ہائیکورٹ کے اجازت کے بعد اسکے خلاف چیف جوڈیشل مجسٹر یٹ جموں کی عدالت میں چالان پیش کیا گیا ،بعدمیں یہ کیس فاسٹ ٹر یک عدالت میں منتقل ہوا۔ آ ج اس کیس کی حتمی سماعت تھی جس دوران فاسٹ ٹریک عدالت کے پرازیڈ نگ آ فیسر خلیل چود ھر ی نے ملزم کو عصمت دری کے اس کیس میں مجرم ٹھہرایا تاہم عدالت نے اس کی سزا کا تعین 23 اکتوبر کومقرر کیا ہے۔
 
 

امت شاہ کی ریلی میں خواتین کو جوش و خروش سے حصہ لینے کی اپیل

جموں// جموں و کشمیر بی جے پی خاتون مورچہ کی ریاستی صدر سنجیتا ڈوگرہ نے جموں و کشمیر کی خواتین سے مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ کی ریلی میں شرکت کی اپیل کی ہے۔انہوںنے کہا کہ امت شاہ کے استقبال کے لیے بی جے پی مہیلا مورچہ کی کارکنان ، تمام خواتین ریلی میں پہنچیں تاکہ ہم مرکزی وزیر داخلہ کے ان کے مضبوط اور جرات مندانہ قدم کے لیے شکریہ ادا کریں۔ انہوں نے کہا کہ کروا چوت 24 اکتوبر کو خواتین کے لیے سب سے بڑا دن ہے اور بہت مصروف ہونے کے باوجود خواتین کو اس ریلی میں آنا چاہیے تاکہ ہم تین طلاق جیسے قوانین کو منسوخ کرنے ، خواتین کو ان کے حقوق دینے اور ہر میدان میں خواتین کو آگے لانے پر ان کا شکریہ ادا کریں ۔ سنجیتا نے کہا کہ مرکز کی حکومت نے نہ صرف ہندو بہنوں بلکہ دیگر   مسلم بہنوں کے لیے بھی بڑے اور تاریخی فیصلے کیے ہیں ، اس لیے ان سے بھی اپیل ہے کہ وہ ریلی میں شرکت کریں۔ ڈوگرہ نے کہا کہ امیت شاہ آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد پہلی جلسہ عام سے خطاب کے لیے یہاں آرہے ہیں اور یہ ایک تاریخی لمحہ ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی مہیلا مورچہ ٹیم کو امیت شاہ کی بات لوگوں تک پہنچانے کے لیے ہر ممکن کوشش کرنی ہوگی۔
 

 

تازہ ترین