بھارت میں 100کروڑ ویکسین کی حد عبور

۔ 16جنوری سے شرو ع ہوئی سب سے بڑی ٹیکہ کاری مہم نے 279روز میں تاریخ رقم کرلی

تاریخ    22 اکتوبر 2021 (00 : 01 AM)   


پرویز احمد

 اُتر پردیش ٹیکہ لگانے والی ریاستوں میں اول اور جموں و کشمیر 20ویں نمبر پر

 
سرینگر // ملک کی 28ریاستوں اور 8مرکزی زیر انتظام علاقوں میں 16جنوری سے شروع ہونے والی  دنیا کی سب سے بڑی ٹیکہ کاری مہم نے  279 روز بعدجمعرات صبح 9بجے ایک تاریخی سنگ میل عبور کیا ۔ بھارت میںکورونا مخالف ویکسین لینے والے افراد کی تعداد 100کروڑ سے زیادہ ہوگئی ہے۔ مرکزی وزیر صحت نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر 100کروڑ لوگوں کی ٹیکہ کاری پر مبارک باد دی ہے۔ ملک میں  100کروڑ لوگوں کو ٹیکہ لگانے کی خوشی میں ٹرینوں اور بسوں میں ترنگا لگانے کے علاوہ دلی کے لال قلعہ پر 1400کلو گرام وزنی  سب سے بڑے ترنگے کو لہرایا جائیگا ۔ جمعرات کو ملک میں ویکسین لینے والوں کی تعداد 100کروڑ، 59لاکھ،99ہزار 286تک پہنچ گئی جن میں 71کروڑ 8لاکھ36ہزار154افراد کو پہلا ڈوز جبکہ 29کروڑ 51لاکھ 63ہزار 132افراد کوویکسین کے دونوں ڈوز دئے گئے ہیں۔ زیادہ آبادی کو ٹیکہ دینے والی ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں میں 12کروڑ 31لاکھ 98ہزار729افراد کے ساتھ اتر پردیش پہلے نمبرپر، مہاراشٹرا 9کروڑ 39لاکھ 78ہزار632کے ساتھ دوسرے نمبر، مغربی بنگال6کروڑ94لاکھ17ہزار 433افراد کے ساتھ تیسرے نمبر،گجرات 6کروڑ 80لاکھ10ہزار 473 افراد کے بعد چوتھے نمبر پر جبکہ مدھیہ پردیش6کروڑ،78لاکھ21ہزار 34افراد کو ٹیکہ دینے کے بعد 5ویں نمبر پر ہیں۔ 9ماہ کے دوران زیادہ آبادی کی ٹیکہ کاری کرنے والے ریاستوں اور مرکزی زیر انتظام علاقوں میں جموں و کشمیر 20ویں نمبر پر ہے جہاں ابتک 1کروڑ 40لاکھ 41ہزار 138افراد کو کورونا مخالف ویکسین دیئے گئے ہیں۔ جموں و کشمیر میں 3 مرحلوں میں ہونے والی ٹیکہ کاری میں پہلے مرحلے میں 2لاکھ 1ہزار683ہیلتھ ورکر،دوسرے مرحلے میں 6لاکھ 6ہزار 437 جبکہ 18سال سے زیادہ عمر کے زمرے میں آنے والے 1کروڑ 32لاکھ 20ہزار483کو ویکسین دیا گیا ہے۔ ملک میں 279دنوں کے دوران 100کروڑ سے زائد کا ہدف عبور کرلیا گیا ہے۔ جن میں پہلے 85دنوں کے دوران 10کروڑ، دوسرے 45دنوں کے دوران 20کروڑ، مزید29دنوں کے دوران 30کروڑ، مزید 20دنوں کے دوران 50کروڑ جبکہ مزید 76دنوں کے دوران یہ تعداد 100کروڑ کا ہندسہ پار کرگئی ہے۔نیتی آیوگ کے ممبر اوربھارت میں ٹیکہ کاری مہم کی سربراہی کرنے والے وے کے پال نے بتایا کہ بھارت میں 75فیصد بالغ آبادی کو پہلا ڈوز جبکہ 20فیصد آبادی ابھی بھی ٹیکہ کاری سے محروم ہے۔ملک میں اکتوبر میں روزانہ ویکسین لینے والوں کی تعداد 50لاکھ تک پہنچ گئی ہے۔ انہوں نے مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ اپریل اور مئی مہینوں کے دوران روزانہ متاثر ہونے والے افراد کی تعداد 40ہزار تک پہنچ گئی تھی جبکہ روزانہ 4ہزار سے زائد افراد فوت ہوئے۔ لیکن اب یہ تعداد کم ہوکر 15ہزار تک سمٹ گئی ہے ‘‘۔ادھر سرکاری اعداد و شمار کے مطابق گوا ، سکم ، چنڈی گڑھ ، اتراکھنڈ اور ہماچل پردیش جیسی چھوٹی ریاستوں میں پوری اہل آبادی کوویکسین کا پہلا ڈوز دیا گیا ہے جبکہ شمال مشرقی ریاستوں اور کچھ پہاڑی ریاستوں میں ٹیکہ کاری مہم کی رفتار اب بھی سست ہے ۔
 
 
 
 
 

اجتماعی جذبے کی فتح:وزیر اعظم 

بھارت مشن مضبوط ہوا: منوج سنہا

نیوز ڈیسک
 
نئی دہلی+سرینگر //وزیر اعظم نریندر مودی نے100کروڑ افرادکی ٹیکہ کاری مکمل ہونے پر مبارکباد دی ہے۔اپنے ایک پیغام میں  انہوں نے کہا ’’ہندوستان نے ایک تاریخ رقم کی اور ڈاکٹروں ، نرسوں اور ان تمام لوگوں کا شکریہ، جنہوں نے اس کارنامے کو حاصل کرنے کیلئے کام کیا‘‘۔ وزیراعظم نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہاکہ ہم ہندوستانی سائنس ، انٹرپرائز اور 130 کروڑ ہندوستانیوں کے اجتماعی جذبے کی فتح دیکھ رہے ہیں۔ انہوںنے لکھاکہ بھارت کو 100 کروڑ ویکسی نیشن پار کرنے پر مبارکباد۔ ہمارے ڈاکٹروں ، نرسوں اور ان تمام لوگوں کا شکریہ جنہوں نے یہ کارنامہ انجام دیا۔جموں و کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے سائنسدانوں ، ڈاکٹروں اور صحت کارکنوں کو ان کے باہمی تعاون اور کوششوں کے لئے مبارکباد دی۔ لیفٹیننٹ گورنر نے ٹویٹ کیا کہ معزز وزیر اعظم کی قابل قیادت میں ، ویکسی نیشن مہم نے کووڈ19 کے خلاف جنگ میں بھارت نے ایک نیا سنگ میل حاصل کیا ہے اور اتم نربھر بھارت مشن کو مضبوط کیا ہے۔انہوںنے ٹویٹ میں لکھا’’ سائنسدانوں ، ڈاکٹروں اور ہیلتھ ورکرز کو ان کے باہمی تعاون اورلگن کیساتھ 100 کروڑ ویکسین تک پہنچنے کیلئے مبارکباد‘‘۔
 

تازہ ترین