تازہ ترین

وزیر صنعت و حرفت کی تجارتی انجمنوں سے بات چیت

صنعتی شعبے کی ترقی کیلئے28ہزار کروڑ کی نئی سکیم پر تبادلہ خیال

تاریخ    17 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
سرینگر//مرکزی وزیر مملکت صنعت و حرفت سوم پرکاش نے ایس کے آئی سی سی میں جموں وکشمیر کے محکمہ صنعت و حرفت کی کارکردگی کا جائزہ لینے کے لئے ایک میٹنگ کی صدارت کی۔ سوم پرکاش نے کہا کہ جموںوکشمیر میں صنعتی شعبے کے لئے وسیع اِمکانات ہیں اور موجودہ حکومت نے اس صلاحیت کو استعمال کرنے کے لئے کئی سکیمیں شروع کی ہیں۔اُنہوں نے کہا کہ مرکزی وزیر داخلہ نے جموںوکشمیر کی صنعتی ترقی کے لئے 28,400کروڑ روپے کی نئی مرکزی شعبے کی سکیم کا اعلان کیا ہے اور جموںوکشمیر یوٹی میں اِس شعبے کی مجموعی ترقی کے لئے ایک بہترین سکیم ہے ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ مرکزی حکومت جموںوکشمیر میں صنعتی شعبے کی ترقی کے لئے پُر عزم ہے جس کا مقصد جموںوکشمیر کے نوجوانوں کے لئے روزگار کے مواقع پید اکرنا ہے۔وزیر نے نئی مرکزی سیکٹر سکیم کے مقاصد کو عام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔اُنہوں نے پرائم منسٹرس ایمپلائمنٹ جنریشن پروگرام ( پی ایم اِی جی پی ) اور اِنڈسٹریل ڈیولپمنٹ سکیم ( آئی ڈی ایس ) پر پیش رفت کا جائزہ لیتے ہوئے اَفسران کو ہدایت دی کہ وہ اِس بات کو یقینی بنائیں کہ تمام اِلتوا میں پڑے کیسوں کو بروقت نمٹایا جائے۔ وزیر مملکت نے مختلف تجارتی اِداروں کے نمائندوں سے بات چیت کی ۔وفد میں فیڈریشن چیمبر آف اِندسٹریز کشمیر، کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ اِنڈسٹری ، پی ایچ ڈی چیمبر آف کامرس اینڈ اِنڈسٹری ، کنفیڈریشن آف اِنڈین اِنڈسٹریز اور فیڈریشن آف اِنڈیشن چیمبر آف کامرس کے نمائندے شامل تھے۔ انہوںنے وزیر موصوف کے ساتھ صنعتی شعبے سے متعلقہ مختلف مسائل پر روشنی ڈالی اور مطالبہ کیا کہ نئی صنعتی سکیم کو موجودہ صنعتی یونٹ ہولڈروں تک بھی بڑھایا جائے ۔ اُنہوں نے سرمایہ کاروں کے ساتھ صنعت کاروں کو ہینڈ ہولڈنگ کرنے ، این پی اے اور دیگر مسائل کے حل کے لئے یک وقتی نرمی کا بھی مطالبہ کیا۔نمائندوں نے کشمیر کے صنعتی یونٹوں کے لئے ایس آئی بی اے ایل اور کریڈٹ ریٹنگ میں نرمی ، اگلے پانچ برسوں کے لئے اِنٹرسٹ سبونشن اور صنعتوں کے لئے اگلے پانچ برسوں کے لئے بجلی کے نرخ مقرر کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔وزیر مملکت نے نمائندوں کے ساتھ تبادلہ خیال کرتے ہوئے کہا کہ مرکزی حکومت جموںوکشمیر کی صنعتی اِکائیوں کی بحالی او رہینڈ ہولڈنگ کے لئے پُر عزم ہے اور اِس سمت میں حکومت نے جموںوکشمیر کی صنعتی ترقی کے لئے 28,400 کروڑ روپے کی نئی مرکزی شعبے کی سکیم کا آغاز کیا ہے ۔وزیر موصوف  نے تجارتی اِداروں کے نمائندوں کو یقین دِلایا کہ اِن کے تمام جائز مطالبات اور خدشات کو بغور جائزہ لیا جائے گا اور ترجیحی بنیادوں پر حل کیا جائے گا۔