تازہ ترین

تندرستی کے راز صبح کی سیر میں

فکرِصحت

تاریخ    16 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


مینا یوسف
صبح کی سیر صحت کے لئے بہت ضروری اور فائیدہ مند ہے۔یہ ایک اچھی عادت بھی ہے اور ایک جسمانی ورزش بھی۔جب آپ صبح اُٹھتے ہیں تو چہل قدمی کرنے کے لئے نکلتے ہیں تو فطرت کے خوبصورت ماحول کے علاوہ ٹھنڈی اور تازہ ہوا سے لطف اندوز ہوتے ہوئے تازگی آپ کے دماغ میں بس جاتی ہے اور آپ کو پورا دن متحرک رکھتی ہے۔ ساتھ ہی  ہماری جسمانی صحت پر شاندار اثرات مرتب کرتی ہے۔ماہرین کے مطابق صبح کی سیر یاچہل قدمی کے بے شمار فوائید ہیں جو وقت کے ساتھ ساتھ حاصل ہوتے ہیں۔خاص کر ان لوگوں کے لئے جو اپنے دن کازیادہ تر وقت بیٹھ کر گزارتے ہیں۔
مطالعے سے پتہ چلا ہے کہ ایک گھنٹہ پیدل چلنے سے انسان کی عمر  ۲ گھنٹے بڑھتی ہے۔اس کے علاوہ ماہرین کا کہنا ہے کہ روزانہ چہل قدمی کرنے سے نزلہ زکام کا اثرکم ہو سکتا ہے ۔اس کے علاوہ خون میں موجود الرجی کم ہوتی ہے۔صبح کی تازہ ہوا آپ کے پھیپڑوں کو مضبوط بناتا ہے۔جب آپ تیز چلتے ہیں توخون کی گردش پورے نظام کو بیدار کرتی ہے اور خون میں موجود شکر کو معمول پر لانے میں مدد کرتا ہے۔
اس کے علاوہ صبح کی سیر یا چہل قدمی کے بہت سے فائیدے ہیں۔
صبح کی سیر دل کی بیماری ،فالج اور ذیابطیس((diabetesکے خطرے کو کم کرنے میں مدد گار ثابت ہوتی ہے۔
یہ اضطراب ،ڈپریشن اور تنائو کو کم کرنے میں مدد گار ثابت ہوتی ہے۔نظام ہاضمہ کو تیز کرتا ہے اور عمل انہضام کو بہتر بناتا ہے ۔ہماری ہڈیوں اور ٹانگوں کو مضبوط کرتا ہے۔جسمانی تال میل کو قائم کرتا ہے اور اچھی نیند میں مدد کرتا ہے۔تازہ ہوا میں چہل قدمی کرنے سے جسم سے زہریلے مواد خارج کرنے میں مدد کرتا ہے۔وزن کو کم کرنے میں مدد کرتا ہے۔دماغ کو چوکس اور فعال رکھتا ہے۔ تخلیقی صلاحیت میں اضافہ کرتا ہے۔
ماہرین کے مطابق جب آپ چہل قدمی کررہے ہوتے ہیں تو آپ کا دماغ روز مرہ کی معمولی اشیاء کے بجائے تخلیقی سوچ کی طرف متوجہ ہوتا ہے اورآپ کی یاداشت کے لئے مفید ثابت ہوتا ہے۔ ہم اپنااکثر وقت گھروں میں ہی یا موبائیل فون،ٹیلی ویژن کے سامنے ہی گزارتے ہیں۔جس سے ہمارا جسم سُست اور زیادہ وقت بیٹھے رہنا موت کو جنم دیتا ہے اور ہم کئی بیماریوں کا شکار ہو جاتے ہیں ۔اس لئے ہر ایک انسان کو چاہئے کہ چہل قدمی کو اپنا معمول بنائے اور روزانہ تیس(۳۰)منٹ کی نقل وحرکت یا ورزش کو اپنا مقصدِ زندگی بنائیں۔
(صفاپورہ،مانسبل)