تازہ ترین

جموں وکشمیر کا پُر امن حل ضروری

ترقی میں رکائوٹ کا بہانہ بنا کر خصوصی پوزیشن کی منسوخی ہوئی :محبوبہ مفتی

تاریخ    15 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


عشرت حسین بٹ
 پونچھ //جموں وکشمیر کی سابقہ وزیر اعلیٰ اور پی ڈی پی کی صدر محبوبہ مفتی نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر کے مسلے کا پُر امن حل اشد ضروری ہوگیا ہے جبکہ مرکزی حکومت نے ترقی کا بہانہ بنا نے دفعہ 370کو منسوخ کیا ہے لیکن زمینی سطح پر تعمیر وترقی کا کوئی نام و نشان موجود نہیں ہے ۔ان خیالات کا اظہار موصوفہ نے سرحدی ضلع پونچھ کے اپنے تین روز دورے کے شروع میں سرنکوٹ میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کیا ۔محبوبہ مفتی نے کہاکہ انتخابات میں حصہ لینا ان کا مقصد نہیں ہے جبکہ جموں وکشمیر کی خصوصی پوزیشن کی بحالی ان کا مشن ہے ۔موصوفہ نے کہاکہ مرکزی حکومت کی جانب سے جموں وکشمیر کے سلسلہ میں اٹھائے گئے قدم کے بعد افرا تفری کا ماحول پیدا ہو ا ہے جبکہ مقامی عوام ہر طرح کے مسائل کا شکار ہو گئے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ مرکزی سرکار نے غیر آینی طور پر جموں و کشمیر کی شناخت کو ختم کر کے یہاں کی ریاست کے ٹکڑے کئے ہیں جس کی وجہ سے یہاں کے عوام مصیبت سے دوچار ہیں ۔محبوبہ کا کہنا تھا کہ مرکزی سرکار یہ دعو یٰ کر رہی تھی کہ دفعہ 370 کی منسوخی کے بعد جموں و کشمیر میں ترقی ہوگی تاہم دفعہ کی منسوخی کے بعد مذکورہ نعرہ پوری طرح سے جھوٹ ثابت ہوا ہے ۔موصوفہ نے کہا کہ کرپشن پہلے سے زیادہ بڑھ گیا ہے۔انہوں نے کہا 'لوگوں کو اپنی ہی زمینوں سے کھدیڑا جا رہا ہے۔ جموں میں گجر بکروال بھائیوں کو نکالا جا رہا ہے۔پی ڈی پی صدر نے کہا کہ جموں و کشمیر میں ریت اور بجری نکالنے کے لئے بھی باہر سے لوگ لائے جا رہے ہیں نیز سرکاری ملازمتوں کے لئے باہر سے لوگ آ رہے ہیں۔ان کا مزید کہنا تھاکہ کہیں سڑک بن رہی ہے نہ کہیں ترقی نظر آ رہی ہے۔ اور پھر کہا جارہا ہے کہ دفعہ 370 ترقی یقینی بنانے کے لئے ہٹایا ہے۔سرنکوٹ میں پارٹی کارکنوں کے اجلاس کے دوران محبوبہ مفتی کی موجود گی میں کئی کارکنوں نے دیگر پارٹیوں کو چھوڑ کر پی ڈی پی میں شمولیت اختیار کر لی ۔اس موقعہ پر پارٹی صدر کے ہمراہ یوتھ کواڈر نیٹر محمد ساقب ،ایڈو کیٹ ماجد خان، پارٹی ضلع صدر پونچھ شمیم گنائی ،پارٹی سنیئر لیڈر راجندر منہاس، رشید قریشی، معروف خان، ندیم خان، جاوید چوہدری و دیگران بھی موجود تھے ۔