تازہ ترین

شیری بارہمولہ میں پولیس اہلکار مردہ پایا گیا

بیروہ کے طالب علم کی لاش پنجاب یونیورسٹی میں لٹکتی ہوئی ملی

تاریخ    14 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


فیاض بخاری+ارشاد احمد
بارہمولہ+بڈگام//ضلع پونچھ سے تعلق رکھنے والے ایک زیر تربیت پولیس اہلکار کی لاش شیری بارہمولہ ٹریننگ کالج جبکہ بیروہ کے طالب علم کی لاش لدھیانہ پنجاب میں ہوسٹل میں لٹکتی پائی گئی۔پولیس اہلکار محمد یونس آکھور ولد محمد انصار ساکن سرنکوٹ، شیری بارہمولہ میں زیر تربیت تھا۔ پولیس اہلکار کی لاش پیر کی صبح کیمپ میں پُر اسرار طور پر پائی گئی ۔ پولیس نے دفعہ 174سی آر پی سی کے تحت کیس درج کر کے تحقیقات شروع کردی ہے۔ ادھر RIMTیونیورسٹی لدھیانہ گوبند گنڈ منڈی پنجاب میں بی ایس سی ریڈیولاجی کے تھرڈ سمسٹر میں زیر تعلیم20سالہ عمر دیو ولد عبدالاحد دیو ساکن چیوڈارہ بیروہ کی لاش کالج ہوسٹل کی چھت پر سولر پلانٹ سے لٹکتی پائی گئی۔ مذکورہ طالب علم کے افراد خانہ کاکہنا ہے کہ اُن پر اُس وقت قیامت ٹوٹ پڑی جب انہیں یہ اطلاع ملی کہ عمر دیو کی لاش سولر پلانٹ سے لٹکی ہوئی ملی ہے۔ مذکورہ طالب علم کے فیس بک کے آخری پوسٹ میں لکھا گیا ہے ’’By by‘‘۔اسکے بھائی شوکت دیو نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ہم دعویٰ کیساتھ کہہ رہے ہیں کہ اسکے بھائی کو قتل کیا گیا ہے کیونکہ 10 روز قبل اس کا چند کشمیری طلبہ سے جھگڑا ہوا تھا جس کی جس کی باضابطہ طور پر رپورٹ منڈی گوبند گڑھ پولیس اسٹیشن میں درج کی گئی ۔