تازہ ترین

سوشل ویلفیئرمیں 20برسوں سے کام کررہے سپروائزروں کی ہلپر

بیک جنبش قلم 918بر خواست

تاریخ    11 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر//محکمہ سماجی بہبود میں سپر وائزروں کے ساتھ کام کررہی918 خواتین ہلپرئوں کو بر خواست کردیا گیا ہے۔حکومت کا کہنا ہے کہ ان ہلپروں کو بغیر اجازت محکمہ کا حصہ بنایا گیا تھا۔آئی سی ڈی ایس کے مشن ڈائریکٹر کو سرکار کی جانب سے گزشتہ ماہ مطلع کیا گیا کہ وقت وقت پر آئی سی ڈی ایس کے افسران نے جن918ہلپروں کو کسی بھی منظور شدہ اسامی کے بغیر تعینات کیا، انہیں فوری طور پر بے دخل کیا جائے۔ آرڈر میں کہا گیا کہ یکم نومبر سے قبل ان ہلپر آف سپروائزر کو بے دخل کیا جائے،جنہیں بغیر کسی اہلیت کے سرکاری افسران نے تعینات کیا تھا۔ مزید کہا گیا ہے کہ گورنر کے مشیر کی سربراہی میں منعقدہ میٹنگ کے دوران واضح ہدایات دی گئی کہ اگر انکی خدمات کو31اگست کے بعد بھی جاری رکھا گیا،وہ افسران انکی تنخواہ و مشاہرے کی ادائیگی کیلئے از خود ذمہ دار ہونگے نیر انکے خلاف ضوابطی کارروائی بھی عمل میں لائی جائے گی۔ ان ہلپروئوں کا کہنا ہے کہ وہ پچھلے10 سے20برسوں تک محکمہ سماجی بہبود میں کام کررہے ہیں۔لیکن بیک جنش قلم انہیں بے دخل کیا گیا۔انہوں نے کہا کہ سرکار کا دعویٰ ہے کہ انہیں بغیر اجازت تعینات کیا گیا،تاہم انہیں محکمہ کے سربراہان نے محکمہ کی رضامندی سے تعینات کیا۔انہوں نے سوالیہ انداز میں پوچھا’’ اگر انہیں بغیر اجازت تعینات کیا گیا،تو سرکار نے20برسوں تک کس طرح محکمہ میں رکھا اور مشاہرے و تنخواہیں بھی واگزار کی گئیں۔انہوں نے کہا کہ ان افسران کے خلاف کیوں کارروائی عمل میں نہیں لائی جا رہی ہے جنہوں نے انہیں تعینات کیا،جبکہ وہ افسران آج اعلیٰ عہدوں پر تعینات ہیں۔انہوں نے کہا کہ وہ 2018تک مشاہرہ حاصل کررہے تھے جس کے بعد انکی ماہانہ اجرت بند کی گئی۔
 
 

یونین ٹریٹریز میں ملازمین کی تعیناتی

عذرات پیش کرنے میں توسیع

بلال فرقانی
 
سرینگر//سرکار نے مرکزی زیر انتظام خطوں جموں کشمیر اور لداخ میں سرکاری ملازمین کی تقسیم اور انتخاب میں عملے کی جانب سے عذرات اور فیصلوں پر سر نو نظر ثانی کے علاوہ ملازمین کی تفصیلات کی جانچ پیش کرنے کی تاریخ میں مزید توسیع کافیصلہ کیا۔جموں و کشمیر کو دو مرکزی علاقوں میں تقسیم کرنے کے بعد ، 12ہزارسے زیادہ سرکاری ملازمین نے لداخ  میں کام کرنے کا انتخاب کیا ہے جبکہ 467 ملازمین ، جو لداخ کے اقامتی ہیں ، نے جموں کشمیر کا انتخاب کیا ہے۔ جمعہ کو جنرل ایڈمنسٹریشن محکمہ کی جانب سے جاری ایک اور نوٹیفکیشن میں تبدیلی،شکایات اور عذرات پیش کرنے کی تاریخ میں مزید ایک ہفتے کی توسیع کا اعلان کیا گیا ہے۔ نوٹیفکیشن مین کہا گیا’’ اس موضوع سے متعلق 2ستمبر کو جاری نوٹیفکیشن کی پیش رفت میں نمائندگی،و ملازمین کی تفصیلات کی جانچ متعلقہ انتظامی محکموں میں پیش کرنے میں16ستمبر تک توسیع کی جاتی ہے‘‘۔ نوٹیفکیشن میں تمام انتظامی سیکریٹریوں سے درخواست کی گئی ہے کہ وہ محکمہ عمومی انتظامی میں معیاد بند مدت کے دوران نمائندگی کی حصولیابی کیلئے ایک منظم نظام قائم کرے۔
 

تازہ ترین