تازہ ترین

مرکزی وزیر دفاع کا اگلی چوکیوں کا جائزہ

کپوارہ میںباغبان، یوتھ کلب ، پی آر آئی ، انتظامیہ کے ساتھ بات چیت

تاریخ    11 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
کپوارہ //جموں و کشمیر کیلئے مرکزی حکومت کے ’عوامی رابطہ پروگرام ‘کے ایک حصے کے طور پر مرکزی وزیر مملکت برائے دفاع اور سیاحت اجے بھٹ نے سرحدی ضلع کپوارہ کا تفصیلی دورہ کیا ۔ وزیر موصوف نے لائن آف کنٹرول پر اگلی چوکیوں کا دورہ کیا اور علاقے میں سیکورٹی کے منظر نامے کا جائیزہ لیا ۔ انہوں نے فوج کے افسران اور فوجیوں سے تبادلہ خیال کیا ۔ بعد میں وزیر نے ہارٹیکلچر بیس سٹیشن چوگل کا دورہ کیا جس نے 184 کنال اراضی میں توسیع کی ۔ انہوں نے ہارٹیکلچر ڈیپارٹمنٹ کے سٹال کا معائینہ کیا اور پھلوں کی مختلف اقسام ، انگور ، اخروٹ ، نامیاتی شہد دیکھا اور پھلوں کی مختلف اقسام کے بیجوں کی نرسریوں کا دورہ کیا ۔ انہوں نے خواتین سیلف ہیلپ گروپس اور مقامی پی آر آئی کے علاوہ ترقی پسند آرکیڈسٹ اور کسانوں کے ساتھ بھی بات چیت کی ۔ وزیر نے کہا کہ کشمیر میں صوفی سنتوں کے عظیم آداب اب بھی زندہ ہیں جیسا کہ ان کی آمد کے دوران یہاں کے لوگوں کے آداب سے ظاہر ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر واقعی زمین پر جنت ہے اور وزیر اعظم نریندر مودی کی سربراہی میں حکومت علاقے کی بالخصوص سرحدی ضلع کپواڑہ کی مجموعی ترقی فراہم کر کے اس کی خوبصورتی کو برقرار رکھنے کی ہر ممکن کوشش کر رہی ہے ۔ انہوں نے یقین دلایا کہ بارڈر ٹورازم ، ایکو ٹورازم اور ہارٹیکلچر ٹورازم کو ترجیح دی جائے گی ۔ وزیر نے بوائز ہائیر سکینڈری سکول کنڈی خاص میں 72 لاکھ روپے کے مصنوعی ہینڈ بال کورٹ کا سنگِ بنیاد رکھا اور یوتھ کلب کے ارکان اور مقامی پی آر آئی کے ساتھ بات چیت کی ۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے وزیر نے مرکزی معاونت والی سکیموں کو فہرست میں شامل کیا اور تمام شراکت داروں کی طرف سے ان سکیموں کے بہتر استعمال کی ضرورت پر زور دیا ۔ انہوں نے کشمیری عوام کو دعوت دی کہ وہ دہلی میں مہمان کے طور پر ان سے ملیں تا کہ وہ وہاں پارلیمنٹ ہاوس اور دیگر چیزیں دیکھ سکیں ۔ انہوں نے نوجوانوں پر زور دیا کہ وہ اپنی صلاحیتوں کو ممکنہ انداز میں استعمال کریں اور اپنے اور قوم کیلئے اعزاز حاصل کریں ۔ 
 
 

مرکزی وزیر زراعت کا  زعفران سپائس پارک کا دورہ 

نیوز ڈیسک
 
سری نگر//مرکزی وزیر زراعت و بہبودِ کساناں نریند ر سنگھ تومر کے ساتھ وزیر مملکت زراعت اور بہبود کساناں کیلاش چودھری اور وزیر مملکت زراعت سشری شوبھا کرندلاجے نے آج تفصیلی تبادلہ خیال کیا۔اُنہوں نے اِنڈین اِنٹرنیشنل ٹریڈ زعفران سپائس پارک پانپور کا دورہ کیا اور وہاں پروسسنگ یونٹ کے مختلف شعبوں کا معائینہ کیا۔اُنہوںنے پار ک میں ڈرائنگ ، گریڈنگ ، پیکنگ اور اِی نیلامی مراکز کا بھی معائینہ کیا۔مرکزی وزیر زراعت نریندر سنگھ تومر نے کہا کہ مرکزی حکومت کسانوں کو ہرممکن مدد فراہم کے لئے تیار ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ سپائس پارک کے قیام سے زعفران کی پیداوار سے آمدنی دوگنی ہوگئی ہے ۔ وَفد نے کسانوں کو یقین دِلایا کہ حکومت کسانوں کے جائز مطالبات کو حل کرنے کے لئے مسائل کو ترجیحی بنیادوں پر اُٹھائے گی۔