تازہ ترین

درس و تدریس کی بحالی| پیر سے ڈگری کالج کھولنے کا فیصلہ

متعلقہ ڈپٹی کمشنروں سے اجازت لینا لازمی قرار

تاریخ    11 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


بلال فرقانی
سرینگر// جموں کشمیر میں متعلقہ ضلع ترقیاتی کمشنروں کی مخصوص اجازت کے بعد ممکنہ طور پر آئندہ ہفتے درس و تدریس کیلئے کالج کھلیں گے۔ 5ستمبر کوریاستی ایگزیکٹو کمیٹی کی میٹنگ کے دوران اس بات کا فیصلہ لیا گیا تھا کہ جموں کشمیر میں10ویں و12ویں جماعت کے طلاب کیلئے اسکولوں کو کھولا جائے گا،تاہم مخصوص دن میں صرف 50 فیصد ٹیکہ لگائے گئے طلاب اور عملہ ہی حاضر رہے گا۔اس کے بعد جموں کشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے بھی اعلان کیا تھا کہ جموں کشمیر میں اسکولوں اور اعلیٰ تعلیمی اداروں کو جلد کھول دیا جائے گا۔ جمعہ کو محکمہ اعلیٰ تعلیم کی سیکریٹری سشما چوہان کی جانب سے ایک حکم نامہ جاری کیا گیا جس میں سرکار(محکمہ آفات سمایٰ،امداد و بازآبادکاری اور تعمیر نو محکمہ) کے حکم نامہ’’ اعلیٰ تعلیمی اداروں کو ٹیکہ لگائے گئے صد فیصد عملہ و طلاب،کے ساتھ محدود انداز میں درس و تدریس کی اجازت دی جائے گی‘‘ کا حوالہ دیتے ہوئے کہا گیا کہ جموں کشمیر میں کالجوں کو کھول دیا جائے گا۔آرڈر میں کہا گیا’’ جموں کشمیر کے سرکاری ڈگری کالج متعلقہ ڈپٹی کمشنروں کی مخصوص اجازت سے ذاتی طور پر درس و تدریس کیلئے سر نو کھلیں گے‘‘۔تعلیمی اداروں کے سربراہان کو من و عن کووڈ سے متعلق ضوابط و رہنما خطوط اور سماجی دوریوں کے نفاذکو یقینی بنانے کی تاکید کی گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ممکنہ طور پر جموں کشمیر میں پیر سے اعلیٰ تعلیمی اداروں کودرس و تدریس کیلئے کھول دیا جائیگا۔
 

تازہ ترین