تازہ ترین

سرینگر کے کالجوں میں آج پھر ٹیکہ کاری ہوگی

۔15ستمبر سے قبل تمام طلاب کیلئے ویکسین لینا لازمی: ڈپٹی سی ایم او

تاریخ    8 ستمبر 2021 (00 : 01 AM)   


پرویز احمد
سرینگر //سرینگر ضلع کے تمام کالجوں میں طلاب ، تدریسی عملہ اور غیر تدریسی عملہ کی ٹیکہ کاری کا سلسلہ بدھ سے شروع ہوگا۔چیف میڈیکل آفیسر سرینگر کی جانب سے جاری کئے گئے ایک سرکیولر میں کہا گیا ہے کہ عالمی وباء کورونا وائرس کی تیسری ممکنہ لہر کو دیکھتے ہوئے سرینگر ضلع میں بدھ کو تمام کالجوں میں ٹیکہ کاری بوت قائم کئے گئے ہیں۔ چیف میڈیکل آفیسر سرینگر نے اپنے حکم نامہ میں لکھا ہے کہ طلاب اور عملہ کیلئے بدھ کو تمام کالجوں میں پہلا اوردوسرا ڈوز ویکسین دینے کا انتظام کیا گیا ہے جہاں طلاب اور تدریسی و غیر تدریسی عملہ ویکسین لے سکتے ہیں۔ ڈپٹی چیف میڈیکل آفیسر سرینگر ڈاکٹر نگہت نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا’’ حکومت نے ڈگری کالجوں کو 16ستمبر سے کھولنے کا منصوبہ بنایا ہے اسلئے 15ستمبر سے قبل تمام طلاب، تدریسی و غیر تدریسی عملہ کوکورونا مخالف ویکسین لینے ہونگے۔ انہوں نے کہا کہ چند کالجوں میں 50فیصد جبکہ چند کالجوں میں35فیصد طلاب اور عملہ کو کورونا مخالف ویکسین دیئے گئے ہیں۔ ڈاکٹر نگہت نے کہا کہ کورونا مخالف ویکسین نہ لینے والے طالب علموں کو کالجوں میں داخل ہونے کی اجازت نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ضلع میں ہی لوگوں کو کورونا مخالف ویکسین کے سلسلے میں جو خدشات ہیں وہ سبھی غلط ہیں۔ ڈاکٹر نگہت نے کہا کہ پوری دنیا میں لوگوں نے کورونا مخالف ویکسین لگایا ہے اورکہیں سے کسی نے بانجھ پن کی شکایت نہیں کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا مخالف ویکسین نہ لینے والے لوگ وائرس پھیلانے کا سبب بنتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تمام لوگوں کو کورونا مخالف ویکسین لینا چاہئے ۔