تازہ ترین

مزید خبریں

تاریخ    28 جولائی 2021 (00 : 12 AM)   


نیوز ڈیسک

2021-22میں 8ہزار کلومیٹرسڑکوں پر میگڈم بچھانے کا ہدف: چیف سیکریٹری  

سری نگر//چیف سیکرٹری ڈاکٹر ارون کمار مہتا نے محکمہ تعمیرات عامہ (آر اینڈ بی )کے کام کاج اور فلیگ شپ پروگرام ، پردھان منتری گرام سڑک یوجنا ( پی ایم جی ایس وائی ) کے تحت پیش رفت کا جائزہ لینے کے لئے ایک میٹنگ کی صدارت کی۔ میٹنگ میں پرنسپل سیکرٹری پبلک ورکس ( آر اینڈ بی ) ڈیپارٹمنٹ ، محکمہ کے متعلقہ اَفسران اور ڈائریکٹر جنرل بجٹ نے شرکت کی۔میٹنگ کو بتایا گیاکہ اِس وقت محکمہ جموںوکشمیر میں 41,584کلومیٹر سڑک کی مسافت برقر ار رکھے ہوئے ہے جس میں نیشنل ہائی ویز ، پی ایم ایس وائی اور آر اینڈ بی سڑکیں اور 1,343 پُل شامل ہیں۔میٹنگ کو مزید بتایا گیا کہ گزشتہ مالی سال کے دوران محکمہ نے آر اینڈ بی ، ایم اِی ڈی ، ڈی آئی کیو سی سیکٹروں اور مغل روڈ پروجیکٹ سے وابستہ 1,289 سکیمیں مکمل کی ہیں جن پر 1,638روپے صرف کیا گیا ہے ۔پی ایم جی ایس وائی کے تحت محکمہ نے 272 سکیموں کے تحت 3,167کلومیٹر دیہی سڑکیں مکمل کرنے کی حصولیابی درج ہے ۔چیف سیکرٹری نے محکمہ کو ہدایت دی کہ رواں مالی سال پی ایم جی ایس وائی اولّ اوردوم کے تحت 4,200 کلومیٹر سڑک کی لمبائی مکمل کی جائے جس میں بالترتیب 800 کلومیٹر اور صوبہ کشمیر اور صوبہ جموں میں 3,400 کلومیٹر دیہی سڑک شامل ہیں ۔اس طرح جموں وکشمیر میں پی ایم جی ایس وائی کے پہلے دو مراحل کا اختتام ہوگا۔جس سے مرحلہ سوم کے آغاز کی راہ ہموار ہوگی جس کے لئے 1,750 کلومیٹر سڑکوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔محکمہ کو مزید کہا گیا ہے کہ وہ بالخصوص تمام سیاحتی مقامات اورعوامی سہولیات کے آس پاس سڑکوں کے معیار کی باقاعدہ نگرانی کو یقینی بنانے کے لئے ایک ایسا طریقہ کار تیار کریں جس میں وہ یقینی بنایا جاسکے۔محکمہ کو مزید کہا گیا ہے کہ وہ جموںوکشمیر میں سڑکوں کی بلیک ٹاپنگ کو ترجیح دیں ۔ محکمہ 2021-22 کے دوران 8,000 کلومیٹر سڑک مسافت کی میکڈامائزیشن کرے گا جس میںسے اَب تک 2,700 کلومیٹر مکمل ہوچکا ہے۔چیف سیکرٹری نے غیر اعزازی کاموں ، فارسٹ کلیرنس ،اراضی کے حصول ، کوالٹی سٹینڈاڈ اور یوٹیلٹی شفٹنگ سے متعلق امور کا بھی جائزہ لیا۔
 
 

بیوپل پاٹھک کوٹرانسپورٹ محکمہ کااضافی چارج تفویض

سرینگر// لیفٹنٹ گورنر کی سربراہی والی حکومت نے محکمہ دیہی ترقی و پنچایتی راج کے پرنسپل سیکریٹری بیوپل پاٹھک کو محکمہ ٹرانسپورٹ کے انتظامی سیکریٹری کا اضافی چارج تفویض کیا ہے۔محکمہ عمومی انتظامی کے کمشنر سیکریٹری منوج کمار دیویدی کی جانب سے منگل کو جاری سرکاری حکم نامہ میں کہا گیا’’ انتظامیہ کے مفاد میں اس بات کا حکم دیا جاتا ہے کہ پرنسپل سیکریٹری دیہی ترقی و پنچایتی راج محکمہ بیوپل پاٹھک، انتظامی سیکریٹری ٹرانسپورٹ ہردیش کمار کااضافی چارج اس عرصے تک سنبھالے گے جس عرصے تک وہ لال بہادر شاستری نیشنل اکیڈامی آف ایڈمنسٹریشن،مسوری تربیت پر رہیں گے‘‘۔
 
 

خواتین کیخلاف جرائم | بارہمولہ میں24سال سے روپوش 2 ملزم گرفتار

بارہمولہ//بارہمولہ پولیس نے 1997 سے گرفتاری سے بچنے کیلئے روپوش دوملزموں کو گرفتار کیا ہے۔ایس ایچ او بارہ مولہ کی قیادت میں پولیس کی ایک ٹیم نے دوملزموں کو گرفتار کیا جوکافی عرصہ سے روپوش تھے۔اُن کی شناخت خورشیداحمدآہنگر ولدنذیراحمد آہنگر اورطارق احمد میر ولدعبدالخالق میر کے طور کی گئی۔وہ پولیس تھانہ بارہ مولہ کو1997کے ایف آئی آر نمبر50کے سلسلے میں مطلوب تھے۔گرفتار ملزموں کو عدالت میں پیش کیاگیا جہاں سے انہیں جیل منتقل کیا گیا۔قابل ذکر ہے کہ 4مارچ1997کو تین ملزموں کیخلاف متعلقہ دفعات کے تحت خواتین کیخلاف جرائم کے الزام میں ایف آئی آر درج کیاگیاتھااور3اپریل 1997کو عدالت ان کے خلاف چالان پیش کیاگیاتھا۔سماعت کے دوران مذکورہ افراد کو مفرور قراردیاگیاتھا۔
 
 

انتظامیہ کی توجہ نوجوانوں کو بااختیار بنانے پر مرکوز | اعلیٰ سطحی میٹنگ میں مشیر فاروق خان نے مختلف اسکیموں کی عمل آوری کاجائزہ لیا

سری نگر//لیفٹینٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے یہاں سول سیکرٹریٹ میں نوجوانوں پر مبنی مختلف سکیموں پر عملدرآمد کیلئے کوارڈینیشن کیلئے لیبر اینڈ ایمپلایمنٹ ( ایل اینڈ ای ) ڈیپارٹمنٹ اور مشن یوتھ جے اینڈ کے کی میٹنگ منعقد کی ۔ میٹنگ میں سیکرٹری قبائلی امور اور سی ای او مشن یوتھ جے اینڈ کے ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری ، سیکرٹری ایل اینڈ ای سشما چوہان ، ڈپٹی ڈائریکٹر مشن یوتھ محمد مقبول ، مشیر کے او ایس ڈی محمد اشرف حکاک اور متعلقہ محکموں کے دیگر اعلیٰ افسران نے شرکت کی ۔ مشیر فاروق خان نے میٹنگ کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مشن یوتھ کو جموں و کشمیر کے نوجوانوں تک پہنچنے کا ایک منڈیٹ حاصل ہے تا کہ وہ معاشرے میں اپنی مجموعی ترقی کیلئے ان سے مشغول ہو سکے اور ان کو جموں و کشمیر کی پیش رفت کیلئے اہم اسٹیک ہولڈر بنائے ۔ مشیر نے کہا کہ لفٹینٹ گورنر منوج سنہا کی قیادت میں نوجوانوں کی مشغولیت پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے اور ان کو بااختیار بنانے کیلئے متعدد اقدامات اٹھائے گئے ہیں ۔ انہوں نے مزید کہا کہ مشن یوتھ ایک خصوصی تنظیم کے طور پر قائم کیا گیا تھا تا کہ نوجوانوں کے بااختیار اور ترقی کیلئے کام کرنے والے مختلف سرکاری محکموں کی کوششوں میں ہم آہنگی اور افادیت لائی جا سکے ۔ مشیر خان نے کہا کہ نوجوان نسل کی ترقی کیلئے ایل اینڈ ای ڈیپارٹمنٹ اور مشن یوتھ جموں و کشمیر کا اہم کردار ہے اور انہیں جموں و کشمیر کے نوجوانوں کیلئے مختلف سکیموں کے نفاذ کیلئے مستقل ہم آہنگی کی ضرورت ہے ۔ مشیر خان نے افسران پر زور دیا کہ وہ ضلعی یوتھ سنٹرز کے قیام کے عمل کو تیز کریں تا کہ نوجوانوں کی شمولیت کیلئے ایک متحرک میڈیم قائم ہو اور یہاں کے نوجوانوں کو بہتر مواقع مہیاء ہوں ۔ میٹنگ کے دوران خطاب کرتے ہوئے سی ای او مشن یوتھ ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری نے کہا کہ مشن یوتھ کا خیال ہے کہ وہ نوجوانوں کیلئے امیدوں اور امنگوں کے اظہار کے ساتھ جموں و کشمیر میں نوجوانوں کو اپیل کرنے والا ماحول تیار کریں ۔ سیکرٹری ایل اینڈ ای ڈیپارٹمنٹ سشما چوہان نے میٹنگ میں بات کرتے ہوئے اس بات پر روشنی ڈالی کہ دونوں ایجنسیوں کے مابین کوششوں کا قریبی رابطہ اور ہم آہنگی یہاں کے نوجوانوں کی ترقی اور بااختیار بنانے کے مقصد کو حاصل کرنے کا ایک اہم راستہ ہے ۔
 
 

گورنمنٹ پریس کو جدیدخطوط پراستوار کرنے کی ہدایت 

سری نگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے سٹیشنری اینڈ سپلائیز ، گورنمنٹ پریس اور اے آرآئی اینڈ ٹریننگ محکموں کے کام کاج کا جائیزہ لینے کیلئے منعقدہ ایک میٹنگ کی صدارت کی ۔ میٹنگ میںمحکمہ سٹیشنری اور سپلائیز ڈیپارٹمنٹ کے کام کاج ، مین پاور منیجمنٹ ، وسائل کا زیادہ سے زیادہ استعمال ، مالی پوزیشن کے علاوہ عملے کی دستیابی اور محکمہ سے متعلق مختلف دیگر امور پر مفصل بحث ہوئی ۔ مشیر نے متعلقین سے محکمہ کے حوالے سے اٹھائے گئے مختلف فیصلوں کے نفاذ کیلئے جلد اور فوری اقدامات کرنے پر زور دیا ۔ مشیر کو سیکرٹری اے آر آئی اینڈ ٹریننگ ڈیپارٹمنٹ عبدالمجید بھٹ نے محکمہ کے کام کاج کے بارے میں بتایا ۔ مشیر کو جموں /سرینگر میں گورنمنٹ  پریس اور حکومت سے متعلق تمام اسائنمنٹس کی پرنٹنگ اور اشاعت کے سلسلے میں پریس کے کام کاج کے بارے میں بھی آگاہ کیا گیا ۔ اس موقع پر مشیر خان نے متعلقہ افراد کو پریس کو جدید خطوط پر استوار کرنے اور منافع بخش افادیت پیدا کرنے کیلئے بہترین طریقہ کار اپنانے پر زور دیا ۔ میٹنگ میں ڈائریکٹر جنرل اسٹیشنری اینڈ سپلائیز ڈاکٹر عبدالکبیر ڈار ، مشیر کے او ایس ڈی محمد اشرف ہکاک اور دیگر اعلیٰ افسران نے بھی شرکت کی ۔ 
 
 

سپر بازاروں کے کاروبار کو فروغ دینے کیلئے نقش راہ تیار کریں |  سیکریٹری اِمداد باہمی کی حکام کو تاکید

سری نگر//سیکرٹری اِمداد باہمی یشامڈگل نے  جموں وکشمیر میں کوآپریٹیو سپر بازاروں کے کاروبار کو فروغ دینے کے لئے روڈ میپ تیار کرنے کے لئے اَفسروں پر زور دیا۔اُنہوں نے اَفسران سے کاروباری اِداروں کو جدید خطوط پر استوار کرنے کے لئے کہا۔اِن خیالات کا اِظہار سیکرٹری نے جموںوکشمیرکے کوآپریٹیو سپر بازاروں کے کام کاجائزہ لینے کے لئے منعقدہ میٹنگ کے دوران کیا۔ میٹنگ میں رجسٹرار کوآپریٹیو ز، ایڈیشنل رجسٹرار کوآپریٹیو ز جموں، ڈپٹی رجسٹرارز ، اسسٹنٹ رجسٹرارز ، جنرل منیجرز اور محکمہ کے دیگر اَفسران نے شرکت کی۔یشا مدگل نے اَفسران پر زوردیا کہ وہ ان سپر بازاروں کی تزئین و آرائش کے لئے فنڈس جاری کرے۔ اُنہوں نے ان سے کہا کہ وہ آئی ٹی ٹولز کا اِستعمال کر کے ان کوآپریٹیو سٹوروں کے کاروبار کو بحال کریں۔ اُنہوں نے ان سے خالی جگہوں کو بہتر طریقے سے اِستعمال کرنے کو کہا کیوں کہ یہ سب جموں وکشمیر کے بڑے شہروں اور قصبوں میں اہم مقامات پر ہیں۔سیکرٹری نے اَفسران سے کہا کہ وہ ان سٹوروں کے احاطے کو حفظان صحت اور پُرکشش بنائیں تاکہ لوگ سپر بازاروں میں جانے کو ترجیح دیں۔انہوں نے ان سے جی ایم پورٹل پر تمام سپر بازاروں کو اندراج کرنے کو کہا تاکہ وہ سرکاری دفاتر اور دیگر تنظیموں کے ساتھ محفوظ کاروبار کرسکیں۔ انہوں نے انہیں مزید ہدایت دی کہ وہ ان سپر بازاروں کے سیلز عملے کی تربیت دیں تاکہ وہ صارفین کی بہتر خدمت کرسکے۔سیکرٹری نے اَفسران کو مزید ہدایت دی کہ سکین شدہ فائلوں کو سٹوروں پر بھیجیں اور دفتروں میں ناقابل استعمال اشیاء کو نیلا م کریں۔ اُنہوں نے ان سے کہا کہ اس کام کو ایک ماہ کے اندر مکمل کیا جائے تاکہ اِنتظامی معائینہ اس کے بعد کیا جائے ۔سیکرٹری کو جانکاری دی گئی کہ یوٹی میں سات سپر بازار ہیں جنہوں نے گزشتہ مالی برس کے دوران تقریبا ً 3038.44لاکھ روپے کا مجموعی کاروبار کیا ہے ۔ اِس عرصے کے دوران 52.93لاکھ روپے کا منافع ہوا ہے۔بعد میں سیکرٹری نے متعدد کوآپریٹو اداروں کا دورہ کیا جن میں سپر بازار سری نگر ، کشمیر کوآپریٹو پرنٹنگ پریس ، ایکسچینج روڈ اور جیکفیڈ کا گیس گودام کرسو ، پادشاہ باغ شامل ہیں۔
 
 
 

بانڈی پورہ میں سرگرم معاملات میں نمایاں کمی:ڈپٹی کمشنر | بڈگام میں7کووِڈ- 19مائیکروکنٹینمنٹ زونوں کے قیام کا اعلان

بانڈی پورہ//  بانڈی پورہ میں رواں ماہ کے دوران سرگرم معاملات میں غیر معمولی کمی واقع ہوئی ہے جبکہ بڈگام کے کئی علاقوں میں کورونامیں اُچھال آنے پر ضلع کمشنر کو لوگوں کو متنبہ کیا ہے ۔ضلع ترقیاتی کمشنر بانڈی پورہ نے آج میڈیاکو تفصیلات دیتے ہوئے کہا کہ ضلع میںرواں ماہ کے دوران مثبت معاملات میں نمایاں کمی واقع ہوئی ہے اور اَب مثبت معاملات کی شرح بھی کم ہو کر 0.09فیصد رہ گئی ہے۔اُنہوں نے کہا کہ یہ گہری جانچ اور مریض کوالگ تھلگ کرنے اور بڑے پیمانے پر ٹیکہ کاری مہم شروع کرنے کے بعد ہی ممکن ہوا ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ اِنتظامیہ کی طرف سے ضلع میں یومیہ تقریباً2000 ٹیسٹ کئے جاتے ہیں حالانکہ اس میں مثبت معاملات کی شرح کم ہے ۔اُنہوں نے کہا کہ ضلع میں اِس وقت 34سرگرم مثبت معاملات ہیں جن میں سے 4آئیسولیشن ہسپتال میں ہیں اور ایک تریشری نگہداشت ہسپتال میں ہے۔ڈاکٹر اویس نے کہا کہ وَبائی مرض ابھی ختم نہیں ہوا ہے۔ اُنہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ اگر ان میں کوئی علامات محسوس ہوں تو ان کا ٹیسٹ کرائیں تاکہ وہ مناسب دیکھ بال کرسکیں اور دوسروں کو بھی انفیکشن سے بچنے کے لئے الگ تھلگ رہ سکیں۔اُنہوں نے کہا کہ ضلع میں45 سے زیادہ عمر کے اَفراد کو ٹیکے لگانے کا ہدف مکمل ہوچکا ہے جبکہ اس وقت 18سے 45برس کی عمر کے اَفراد کی ٹیکے لگانے کا عمل جاری و ساری ہے ۔ اُنہوں نے کہا کہ صحت اَرکان دور دراز  مقامات کا دورہ کرکے عوام کو آگاہ کر کے انہیں کووِڈ حفاظتی ٹیکے لگانے کی اپیل کرتے ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ اَب تک 30 ہزار ٹیکے مہیا کئے جاچکے ہیں۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے لوگوں کو عید الاضحی کے دوران کووِڈ ایس او پیز پر عمل کرنے کی تعریف کی اور ان سے گزارش کی کہ وہ ایس او پیز اور کووِڈ مناسب طرزِ عمل پر عمل کرنا جاری رکھیں ۔ اُنہوں نے ایس او پیز پر خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جائے۔ادھرضلع ترقیاتی کمشنر بڈگام شہباز احمد مرزا نے آج ضلع کے کچھ علاقوں میں پائے جانے والے اس سپائیک کے بارے میں عوام کو متنبہ کیا جس کے نتیجے میں نئے سات علاقوں کو کووِڈ ۔19 مائیکرو کنٹین منٹ زون ( ایم سی زیڈز ) قرار دیا گیا ہے۔اِن باتوںکا اِظہار ضلع ترقیاتی کمشنر بڈگام نے آج ضلع میں موجودہ کووِڈ منظر نامے پر میڈیا اَفراد کو بریفنگ دینے کے دوران کیا۔تفصیلات دیتے ہوئے ڈی سی نے کہا کہ ضلع میں 51 سرگرم مثبت معاملات ہیں ۔اُنہوں نے کہا کہ اِس وقت مثبت معاملات کی شرح 0.5 فیصد سے نیچے رہ گئی ہے ۔اُنہوں نے ٹیکہ کاری مہم کے بارے میں کہا کہ بڈگام ضلع 45فیصد اور اس سے زیادہ عمر کے گروپوں کو ٹیکہ لگانے کا صدفیصد ہدف حاصل کرچکا ہے اور 18 برس عمر سے 44برس عمر کے زُمرے کی کووِڈ حفاظتی ٹیکے لگانے کی مہم جاری و ساری ہے اور اس عمر کے گروپ کے لوگوں کو جلد از جلد ٹیکے لگانے کی اپیل کی گئی ہے۔ڈپٹی کمشنر بڈگام نے کووِڈ۔19 وَبائی مرض کا پھیلائوروکنے کے لئے ٹیکہ کاری مہمات میں بڑے پیمانے پر شرکت کرنے پر زور دیا۔اُنہوں نے ضلعی عوام سے پھر ایک بار اپیل کی کہ کووِڈ مناسب طرزِ عمل ( سی اے بی )،تمام لازمی کووِڈ۔19ایس او پیز پر من و عن سختی سے عمل کریں اور بالخصوص گنجان جگہوں پر غیر ضروری اجتماعات سے اجتناب کریں۔ اُنہوں نے کہا کہ کچھ لوگوں کو بغیر ماسک پہننے ہوئے دیکھا گیا ہے جس سے کووِڈ ۔19 انفیکشن پھیلنے کا امکانی خطرہ پیدا ہوتا ہے ۔ عوام کو چاہیئے کہ وہ کووِڈ مناسب طرزِ عمل مکمل طورپر اپنائیں۔
 
 
 

کووِڈ- 19رہنماخطوط کی خلاف ورزی | 3478سے 4لاکھ روپے سے زائد جرمانہ وصول

سرینگر//کوروناوائرس کی دوسری لہر کومزیدپھیلنے سے روکنے کیلئے پولیس کی جاری مہم کے تحت گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران3478افراد سے چا رلاکھ تیس ہزارچھ سوپچاس روپے جرمانہ وصول کیاگیاجبکہ کولگام میں کورونا رہنماخطوط کی خلاف ورزی کرنے پر23دکانیں سربمہر کی گئیں۔کورونا رہنماخطوط کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف پولیس کی مہم جاری رہے گی اور پولیس نے عوام الناس سے اپیل کی ہے کہ وہ کووِڈ-19سے بچائو کی گائیڈ لائنز پر سختی سے عمل کریں اور ہر حال میں ماسک کا استعمال کرنے کے علاوہ صاف ستھرائی کا دھیان رکھیں۔
 
 

سرینگرجموں شاہراہ کی مرمت | آج ٹریفک بند رہے گا

سرینگر//ضروری مرمت کے پیش نظر بدھ کو سرینگر جموں شاہراہ ٹریفک کی آمد رفت کیلئے بند رہے گی۔ سی این آئی کے مطابق سرینگر جموں شاہراہ پر ضروری مرمت کے پیش نظر آج یعنی بدھ کو ٹریفک کی نقل و حمل معطل رہے گی اور کسی بھی گاڑی کو شاہراہ پرچلنے کی اجازت نہیں ہو گی ۔ محکمہ ٹریفک کی جانب سے جاری کردہ ایڈ وائزری کے مطابق سرینگر جموں شاہراہ ضروری مرمت کے پیش نظر بدھ کو ٹریفک کی نقل و حمل کیلئے بند رہے گی اور کسی بھی گاڑی کو نہ تو سرینگر سے جموں اور نہ ہی جموں سے سرینگر آنے کی اجازت ہو گی ۔ خیال رہے کہ اس سے قبل بھی شاہراہ ضروری مرمت کے پیش نظر ٹریفک کی آمد رفت بند رہتی تھی ۔ محکمہ ٹریفک کے ایک سنیئر آفیسر نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ بدھ کو سرینگر جموںشاہراہ پر ضروری مرمت کے پیش نظر کسی بھی گاڑی کو چلنے کی اجازت نہیںہو گی ۔ انہوں نے کہا کہ اس ضمن میں پہلے ہی حکمنامہ جاری کردیا گیا ہے جس دوران تمام مسافروں اور فوجی اہلکاروں کو بھی ہدایت دی گئی ہے کہ وہ بدھ کے روز شاہراہ پر سفر کرنے سے گریز کریں۔ اس کے علاوہ تمام مسافروں سے تاکید کی گئی ہے کہ سفر سے پہلے محکمہ ٹریفک سے رابطہ ضروری کریں۔
 

پی ڈی پی کا 22واں یوم تاسیس آج | محبوبہ مفتی کی والد کے مزار پرحاضری

سرینگر//پیپلز ڈیموکرٹیک پارٹی  کی صدر محبوبہ مفتی نے منگل کو بجبہاڑہ کا دورہ کرکے وہاں اپنے والد کے مقبرے پر حاضری دی ۔ سی این آئی  کے مطابق پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی دیگر پارٹی لیڈران کے ہمراہ منگل کو بجبہاڑہ پہنچ گئیں جہاں انہوں نے سابق وزیر اعلیٰ  مرحوم مفتی محمد سعید کے مزار پر حاضری دے کر ان کے لئے دعائے مغفرت کی۔ اس موقعہ پر اگرچہ میڈیا نمائندوں نے محبوبہ مفتی سے بات چیت کرنے کی کوشش کی تاہم انہوں نے بات نہیں کی ۔قابل ذکر ہے کہ پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی کا 22واں یوم تاسیس آج یعنی  28 جولائی کو منایا جارہا ہے۔ پی ڈی پی کا قیام 28 جولائی 1999 کو عمل میں آیا تھا۔
 
 

صدر جمہوریہ کا دورہ جموں وکشمیر خوش آئند : الطاف بخاری

سری نگر//یواین آئی//جموں و کشمیر اپنی پارٹی کے صدر سید محمد الطاف بخاری نے صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کے دورہ جموں و کشمیر کو خوش آئند قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ موصوف صدر جمہوریہ کو اس دورے سے یہاں کے معاملات کا گہرائی سے تجزیہ کرنے کا موقعہ ملے گا۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان بہتر تعلقات جموں و کشمیر کے لئے سب سے اچھی بات ہے ۔موصوف صدر نے ان باتوں کا اظہار منگل کے روز یہاں نامہ نگاروں کے ساتھ بات کرنے کے دوران کیا۔انہوں نے کہا،’’صدر جمہوریہ کی جموں وکشمیر آمد انتہائی خوش آئند بات ہے اس دورے سے انہیں یہاں کے معاملات کو گہرائی سے تجزیہ کرنے کا موقعہ ملے گا‘‘۔ہندوستان اور پاکستان کے درمیان بات چیت کا سلسلہ شروع ہونے کے بارے میں پوچھے جانے والے ایک سوال کے جواب میں بخاری نے کہا،’’ہمارے وزیر اعظم اور وزیر خارجہ اس کے بارے میں بہتر جانتے ہیں تاہم دونوں ہمسایہ ملکوں کے درمیان بہتر تعلقات خاص طور پر ہمارے لئے اچھی بات ہے‘‘۔انہوں نے اسمبلی نشستوں کی سرنو حد بندی کے بارے میں پوچھے جانے پر کہا کہ ریاستی درجے کی فوری بحالی کے بعد یہاں اسمبلی انتخابات منعقد ہونے چاہئے تاکہ جمہوریت بنیادی سطح پر استوار ہوسکے ۔
 
 

عوام عتاب کا شکار : کمال

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے معاون جنرل سیکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال نے کہا ہے کہ جموں وکشمیر کے عوام گزشتہ کئی برسوں خاص کر 5اگست 2019سے برابر عتاب، ظلم وستم کی چکی میںپسے جارہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ لوگوں کی اقتصادی اور معاشی حالات ناگفتہ بہہ ہے اور ناقابل بیان ہے ۔ انہوںنے کہاکہ لوگوں پر زبردستی فرمان ٹھونسے جارہے ہیں جو بالکل غیر آئینی اور غیر جمہوری ہے۔ کمال نے کہاکہ جمہوری اور آئینی اداروں کوتہس نہس کیاگیا اس طرح سے لوگوں کو جمہوری اور آئینی حقوق سے محروم کیاگیا ہے۔پارٹی عہدیداروں سے خطاب کرتے ہوئے کمال نے کہاکہ جب تک نہ لوگوں کو حاصل خصوصی اختیارات35Aاور دفعہ370،جو آئین ہند کے تحت حاصل تھے، بحال نہیں کئے جاتے، تب تک ریاست میں تعمیر و ترقی نہیں ہوسکتی۔ 
 
 
 

ندرگنڈپیرباغ میںرہائشی فلیٹوں کی تعمیرکی اجازت منسوخ

سرینگر//جموں وکشمیر اسپیشل ٹربیونل نے سرینگر میونسپل کارپوریشن کو ہدایت کی ہے کہ ندرگنڈ پیر پاغ آبی پناہ گاہ میں رہائشی مکانوں کی تعمیر کے لئے مالک اراضی کو سال 2019 میں اس وقت کے جوائنٹ کمشنر منصوبہ بندی کی جانب سے فراہم کئے گئے اجازت منسوخ کردی جائے۔ ٹربیونل نے کہا ہے کہ آبی ذخیرے کی ہیت بحال کرنے کیلئے یہاںغیر قانونی طریقے سے کھڑا کئے گئے ڈھانچوں کو فوری طور پر ہٹایا جائے اور اس کی شان رفتہ بحال کرنے کیلئے فوری اقدامات اُٹھائے جائیں۔ معلوم ہوا ہے کہ سابق جوائنٹ کمشنر پلاننگ سرینگر میونسپل کارپوریشن نے ندر گنڈ میں آبی اول پر چھ منزلہ اور آٹھ بلاک کے رہائشی فلیٹوں کی تعمیر کیلئے اجازت دی تھی۔یہ علاقہ ایک فلڈ چینل کے بطور استعمال کیا جاتا ہے جو سیلاب کے وقت پانی کا بہائو کم کرنے میں مدد دیتا ہے ۔  ٹریبونل نے کہا ہے کہ اُس وقت کے جوائنٹ کمشنر نے تمام اصولوں اور تعمیراتی قوانین و دیگر ضابطوں کو بالائے طاق رکھ کر غیر قانونی طریقے سے مورخہ 16اکتوبر2019کواجازت دی ہے اور اس اجازت نامہ سے ماسٹر پلان کی خلاف ورزی بھی کی گئی ہے ۔ یہ اجازت نامہ مجاز حکام کی منظوری کے بغیر ہی اجرا کیا گیا ہے اور اس طرح سے آبی ذخیرہ کے زوال پذیر ہونے کا یہ ذمہ دار ہے ۔ حکمنامہ میں ویٹ لینڈ پر غیر قانونی طریقے سے تعمیر کی گئی عمارات کو فوری طور پر ہٹانے کی ہدایت دی گئی ہے اور اس کیلئے کمشنر ایس ایم سی کو متعلقہ محکمہ مال ، سرینگر ڈیولپمنٹ اتھارٹی ، چیف انجینئر آبپاشی اور فلڈ کنٹرول سے رابطہ قائم کرنے کی بھی ہدایت کی گئی ہے ۔ ٹریبونل نے اس معاملے کی اگلی سماعت کیلئے 2اگست 2021مقرر کی گئی ہے اور سرینگر  میونسپل کارپوریشن کوہدایت دی ہے کہ وہ اس معاملے میں مفصل رپورٹ پیش کریں ۔ 
 
 
 
 
 
 

اپنی پارٹی کا آتشزدگان سے اظہار یکجہتی

سرینگر //اپنی پارٹی کے ضلع صدر سرینگر نورمحمد شیخ نے پالپورہ نور باغ میں شبانہ آتشزدگی کے واقع پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ۔ ایک بیان میں شیخ نے کہا کہ اس طرح کے واقع نے متاثرین کی امیدوں کو چکنا چور کردیا ہے جن کو دوبارہ بحالی کی ضرورت ہے تاکہ انہیں مزید تکلیف کا سامنا نہ کرنا پڑے۔انہوں نے کہا ’’ضلع انتظامیہ کو فوری طور پرمتاثرین کے حق میں امدادی رقم فراہم کی فراہم کی جانی چاہئے اور متعلقہ حکام کو جلد از جلد ان کی بحالی کو یقینی بنانا چاہئے۔
 
 
 
 
 

 مولانا محمد شریف کے والد فوت |  جمعیت اہلحدیث کا اظہار رنج

سرینگر//راجوری کی معروف دینی شخصیت اور جمعیت اہلحدیث کے ناظم مولانا محمد شریف کے والد مولوی محمد شفیع انتقال کرگئے ۔اس سلسلے میں اپنے تعزیتی پیغام میں جمعیت کے صدر پروفیسر غلام محمد بٹ نے ان کی مغفرت اور جنت نشینی کیلئے دعاکی ۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم کی ساری زندگی متانت، مروت، سادگی، مودت اورکمال شرافت سے عبارت تھی اورواقعی ان کے سانحہ ارتحال سے ایک خلا پیدا ہوا ۔جمعیت کے نائب صدر ڈاکٹر عبداللطیف الکندی نے بھی مرحوم کی بلندی درجات کیلئے دعا کرنے کے ساتھ ساتھ اس موقع پر مولانا محمد شریف سے یکجہتی کا اظہار کیا۔ دریں اثنا جمعیت اہلحدیث ضلع پونچھ اور اس کی سبھی اکائیوں نے مرحوم کو خراج عقیدت پیش کیا ہے اور دعا کی ہے کہ اللہ تعالی انہیں کروٹ کروٹ جنت نصیب کرے اور سبھی سوگواران کو یہ صد مہ سہنے کی قوت و طاقت عطا ہو ۔
 
 
 

شیعیان کشمیرکے معاملات میں مداخلت ناقابل برداشت  | انجمن شرعی شیعیان اور شیعہ ایسوسی ایشن کا سخت ردعمل  

سرینگر// انجمن شرعی شیعیان کے صدر آغا سید حسن اور جموں و کشمیر شیعہ ایسو سی ایشن کے جنرل سیکریٹری عابد حسین انصاری نے ایک مشترکہ بیان میں شیعیان کشمیر کے معاملات میں غیر ریاستی عناصر کی دخل اندازی کے خلاف شدید رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ حکومت ہند یا گورنر انتظامیہ ان عناصر کے بہکاوے میں آکرکوئی ایسا اقدام نہیں کرے جو شیعہ فرقہ کے اصول و ضوابط کے منافی ہو اور جس سے شیعیان کشمیر کے مسلکی جذبات اور عقیدے کو کوئی ٹھیس پہنچے اور جو اقدام یہاں کی شیعہ برادری کی روش میں غیر متوقع تبدیلی کا پیش خیمہ ثابت ہو سکے۔ بیان میں واضح کیا گیا کہ شیعیان کشمیر سے متعلق کسی بھی حکومتی پالیسی کے حوالے سے مرکزی سرکارکو غیر ریاستی عناصر اور یہاں کے غیر معروف عناصر کے بجائے شیعیان کشمیر کی مسلمہ نمائندہ دینی و سیاسی تنظیموں کے ساتھ صلح و مشورہ کرکے ان کا موقف جاننے کی کوشش کرنی چاہئے ۔بیان میں کہا گیا کہ اگر شیعیان کشمیر کی نمائندہ دینی و سیاسی جماعتوں کو اعتماد میں لئے بغیرشیعہ موقوفات سے متعلق کوئی جبری فیصلہ نافذ کرنے کی کوشش کی گئی تو یہ حکومت ہند کی ایک بڑی سیاسی غلطی ہوگی جس کے دور رس منفی سیاسی اثرات مرتب ہوں گے ۔بیان میں کہا گیا کہ جو عناصر شیعیان کشمیر کے خیر خواہ بن کر مرکزی سرکار کو شیعیان کشمیر کے دینی معاملات میں مداخلت کی ترغیب دے رہے ہیں انہیں پہلے اپنے علاقوں میں شیعہ فرقے کی حالت زار اور دیگر پریشان کن معاملات کو سدھار نے کی کوشش کرنی چاہئے۔
 
 
 
 
 
 
 
 
 

ڈائریکٹر دیہی ترقی نے فلیگ شپ سکیموںکی پیش رفت کا جائزہ لیا

سرینگر//ناظم دیہی ترقی محکمہ کشمیر طارق احمد زرگر نے مختلف فلیگ شپ سکیموں اور کیپکس 2021-22 کے تحت حاصل ہونے والی پیش رفت کا جائزہ لینے کے لئے ایک میٹنگ طلب کی۔ میٹنگ میں صوبہ کشمیر کے تمام پروجیکٹ اَفسران ویج ایمپلائمنٹ ( اے سی ڈیز) اور ایگزیکٹیو انجینئران آر اِی ڈبلیو نے بذریعہ ورچیول موڈ شرکت کی۔دورانِ میٹنگ جانکاری دی گئی کہ سی ڈی اور پنچایت سیکٹر کے تحت 1,239 کاموں کے منظور شدہ ہدف میں سے 616 کام مکمل کئے جاچکے ہیں۔اِس کے علاوہ آر جی ایس اے کے تحت 12پنچایت بھون مکمل کئے گئے ہیں اور 86 پنچایت گھروں کی تعمیر کے لئے منظور ی دی گئی ہے۔میٹنگ کو مزید بتایا گیا کہ منریگا کے تحت 70,003 ہدف کے کاموں میں سے 10,515کام شروع کئے گئے ہیںاور اَب تک 22.28 لاکھ ایام کارپیدا کئے جاچکے ہیںجو کل ہدف کا  79 فیصد ہے اور پی ایم اے وائی ( جی )کے تحت 7,862 یونٹوں کے ہدف میں سے 6,793 یونٹ مکمل ہوچکے ہیں۔ناظم دیہی ترقی نے متعلقہ اَفسران کو ہدایت دی کہ وہ مقررہ وقت کے اندر اہداف کو حاصل کریں اور منریگا کے تحت اُجرت کی واگزاری کو مقررہ وقت پر یقینی بنائیں۔ اُنہوں نے ان سے نئے کام شروع کرنے کو بھی کہا تاکہ کووِڈ۔ 19 میں وبائی امراض کے دوران دیہی مزدوروں کو مدد فراہم کی جاسکے۔اِس سے قبل ناظم دیہی ترقی نے کیپکس 2021-22 کے تحت منظور شدہ ڈی ڈی سی اور بی ڈی سی آفس عمارتوں کی تعمیر کے لئے ڈی پی آر کی تیار ی کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے صوبہ کشمیر کے تمام ایگزیکٹیو انجینئران آر ای ڈبلیوز کی میٹنگ کی صدارت کی۔میٹنگ کو جانکاری دی گئی کہ رواں سال کے دوران10 ڈی ڈی سی آفس عمارتیں اور 24 بی ڈی سی آفس عمارتیں تعمیر کی جائیں گی۔
 
 
 

ڈی ڈی سی ممبر رفیع آباد اپنی پارٹی میں شامل |  نوجوانوں کو سرکاری نوکریوں سے آگے سوچنا چاہئے: الطاف بخاری 

سرینگر//ضلع بارہمولہ کے حلقہ رفیع آباد سے ڈی ڈی سی ممبر پرمجیت کور نے منگل کو پارٹی دفتر لالچوک سرینگر میں منعقدہ تقریب کے دوران اپنی پارٹی میں شامل اختیار کی۔ موصوفہ کا اپنی پارٹی صدر سید محمد الطاف بخاری نے خیر مقدم کرتے ہوئے اِس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ جموں وکشمیر کو ملک کا ترقی یافتہ خطہ بنانے میں نوجوان نسل مین اسٹریم سیاست میں شمولیت اختیار کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا’’اپنی پارٹی ایک ایسا سیاسی پلیٹ فارم ہے جوہر اُس شخص کے لئے کھلا ہے جوکہ جموں وکشمیر کے لوگوں کی خدمت کی خواہش رکھتا ہے۔ جموں وکشمیر کی دیگر روایتی سیاسی جماعتیں جوکہ خاندانی تسلط اور مکروہ اقربا پروری سے دوچار ہیں ،کے برعکس اپنی پارٹی اِس طرح کے برائیوں سے پاک ہے اور اس نے لوگوں کے مشکلات کو دور کرنے کے لئے ہمیشہ کوششیں کی ہیں‘‘۔بخاری نے کہاکہ روایتی سیاست کا  دوراب ختم ہواکیونکہ نوجوان اور لوگ اب ایک حقیقت پسندانہ طریقہ سے جموں وکشمیر کے لوگوں کی قیادت کرنا چاہتے ہیں۔ اپنی پارٹی کسی ایک شخص یا خاندان سے تعلق نہیں رکھتی، یہ جموں وکشمیر کے لوگوں کی جماعت ہے۔بخاری نے ڈی ڈی سی ممبروں پر زور دیا کہ وہ جموں وکشمیر میں تعلیم یافتہ نوجوانوں کی مدد کریں تاکہ وہ اپنے پاؤں پر کھڑے ہوسکیں۔انہوں نے کہا’’ہمیں اپنے تعلیم یافتہ نوجوانوں کو مدد فراہم کرنے کی ضرورت ہے جو موجودہ نظام سے مایوس ہیں۔اپنی پارٹی صدر نے جموں وکشمیر کے بے روزگار نوجوانوں پرزور دیاکہ وہ کچھ زیادہ سوچیں اور ایک باوقار زندگی جینے کیلئے روزگار کے امکانات تلاش کریں۔انہوں نے کہا’’تعلیم حاصل کرنے کا مقصد صرف یہی نہیں کہ ہم صرف سرکاری نوکریوں پر توجہ مرکوز کریں، ہمیں چاہئے کہ سرکاری نوکریوں سے کچھ آگے سوچیں اور ایسے مواقعے تلاش کریں جس سے ہم اچھی آمدنی کماسکیں اور دوسروں کو بھی روزگار فراہم کرسکیں‘‘۔ بخاری نے کہاکہ تعلیم یافتہ بے روزگرنوجوانوں کو چاہئے کہ وہ جموں وکشمیر کے معیشت کے روایتی شعبہ جات میںروزگار کے امکانات تلاش کریں، ہمارے ہاں باغبانی سیکٹر میں نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کی اچھی خاصی صلاحیت ہے، اسی طرح ہمیں دیگر مختلف شعبہ جات میں بھی روزگار تلاش کرنا چاہئے اور صرف سرکاری نوکریوں کا انتظار نہیں کرنا چاہئے‘‘۔ اس موقع پر پرمجیت سنگھ نے کہاکہ انہوں نے اپنی پارٹی کے عوامی فلاحی ایجنڈا سے متاثر ہوکر پارٹی میں شمولیت اختیار کی۔ پارٹی صدر کے علاوہ سینئر نائب صدر غلام حسن میر،سینئر پارٹی لیڈر محمد دلاور میر، جنرل سیکریٹری رفیع احمد میر، صوبائی صدر کشمیر محمد اشرف میر، ترجمان جاوید حسن بیگ، میڈیا ایڈوائزر فاروق اندرابی، پارٹی یوتھ لیڈر یاور میر، صوبائی سیکریٹری جاوید احمد مرچال، ضلع صدر بارہمولہ شعیب لون، ضلع صدر کپواڑہ راجہ منظور، اپنی پارٹی یوتھ ریاستی نائب صدر میر تجمل اشفاق (ڈی ڈی سی ممبر ٹنگمرگ) اور ڈی ڈی سی ممبر کنزر شیخ نذیر احمد بھی اس موقع پر موجود تھے۔
 
 
 

ایل جی سپر 75 سکالر شپ | طالب علموں کی مانگ پر سکیم میں توسیع:ڈاکٹر شاہد چودھری

سرینگر//مشن یوتھ جموںوکشمیر نے ہنرمند گریجویٹ طلاب کیلئے خصوی سکالرشپ سکیم ’’ سپر 75 بوائز‘‘ شروع کی ہے ۔ اِس نے مستعد طلاب کے لئے لیفٹیننٹ گورنر سکالر شپ ایوارڈ کے لئے درخواستیں طلب کی ہیں ۔یونیورسٹیوں اور کالجوں میں پوسٹ گریجویٹ کورسوں کے لئے ایک لاکھ روپئے کے وظیفے فراہم کئے جائیں گے۔یہ اِس ہفتے کے شروع میں طالب علموں کے لئے شروع کردہ سکیم ہے ۔مشن یوتھ اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے لئے سکیم کے تحت 150 ہونہار طلاب کو سہولیت فراہم کرے گا۔ سی اِی او مشن یوتھ اور سیکرٹری قبائلی اَمور محکمہ ڈاکٹر شاہد اِقبال چودھری نے کہا کہ محکمہ خزانہ سے منظوری حاصل کرنے کے بعد مشن یوتھ سوسائٹی نے اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کے لئے پسماندہ لڑکوںکے لئے سکالر شپ کے لئے لیفٹیننٹ گورنر کے جاری کردہ اَعلان کے مطابق ایل جی سپر 75 سکالر شپ کے لئے رہنما خطوط اور نوجوانوں کی طرف سے پیش کی گئی مانگ کی بنیاد پر سکالر شپ سکیم میں توسیع کی گئی ہے تاکہ طلباء کی تعداد برابر ہو ۔آن لائن موڈ کے ذریعے سکیم کے تحت درخواستیں طلب کی گئیں۔ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری نے مزید کہا کہ 75 تسلیم شدہ طالب علموں کو سرکاری تسلیم شدہ منسلک کالجوں اور یونیورسٹیو ں میں پوسٹ گریجویشن اور اَیدوانس سٹیڈی کورسوں کو کرنے پر فی کس طالبہ اور طالب علم کو ایک ایک لاکھ روپے کے وظیفے دئیے جائیں گے ۔اُمید واروں کی سکریننگ نوٹیفائیڈ کٹ آف تاریخ تک موصول ہونے والی آن لائن درخواستوں کی بنیاد پر کی جائے گی۔واضح رہے کہ ایل جی سپر 75 سکالر شپ کا مقصد معاشرے کے پسماندہ طبقات سے تعلق رکھنے والی باصلاحیت طالبات کو اِن کی تعلیمی خواہشات پر عمل پیرا ہونے کے لئے مالی مدد فراہم کرنا ہے ۔ اہلیت کے معیار میں جموںوکشمیر یوٹی پشتنی باشندہ 30 برس سے کم عمر ، خطہ افلاس سے نیچے / ترجیحی گھریلو زُمرے سے تعلق رکھتا ہے۔ طلباء کو پی جی کورسوں کے لئے سکالرشپ فراہم کی جائے گی جس میں مطالعہ اور تحقیق شامل ہیں۔ اس سکیم کے تحت صرف باقاعدہ وضع کورسوں کا احاطہ کیا جائے گا۔مشن یوتھ نے مزید مطلع کیا ہے کہ والدین یا روٹی کمانے والے خاندان کے کسی فرد کو کھو جانے والی طالبات کے لئے 10فیصدسکالرشپ کوٹا مختص کیا گیا ہے تاکہ اہلیت کے دیگر معیار کو پورا کیا جاسکے۔ مزید برآں خاندان کی آمدنی سے قطع نظر 40فیصد یا جسمانی طور معذور PwDs (معذور افراد) کے تحت خصوصی طور پر اہل لڑکیوں کے لئے 4فیصدسکالرشپ مخصوص کردی گئی ہیں۔درخواست گزار مشن یوتھ پورٹل http://www.jkyouthportal.inپر رجسٹریشن کرسکتے ہیں۔تعلیم اور اہلیت سے متعلق معاون دستاویزات اَپ لوڈ کرنے کے لئے آن لائن درخواست کو پُرکرنے کے لئے پورٹل پر ایک خصوصی فارم تشکیل دیا گیا ہے۔ سکالرشپ کے لئے اِندراج کرنے کی آخری تاریخ 7؍اگست 2021 ء ہے۔ او  ایس  ڈی  مشن یوتھ ، تابِش سلیم کو سکالرشپ سکیم کے لئے نوڈل آفیسر نامزد کیا گیا ہے۔
 
 
 

 تعلیمی اصلاحات سے متعلق تجویز | سرینگر کی استانی نے لیفٹیننٹ گورنرکا شکریہ ادا کیا

سرینگر//سرینگر سے تعلق رکھنے والی ایک سرکاری اُستانی صبیہ معراج نے جموںوکشمیر میں تعلیمی اِصلاحات سے متعلق اُن کی تجویز کاذکر کرنے پر لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا کا شکریہ اَدا کیا۔لیفٹیننٹ گورنر نے ’’ عوام کی آواز‘‘ ریڈیو پروگرام کے چوتھے قسط میں تعلیمی شعبے میں اِصلاحات سے متعلق تجاویز کا خیر مقدم کیا ہے اور یہ مشاہدہ کیا ہے کہ تمام تجاویز بہت دلچسپ ہیں اور ان سے دوررَس نتائج ثابت ہوں گے۔اپنے ماہانہ ریڈیو پروگرام’ عوام کی آواز‘ میں لیفٹیننٹ گورنر نے کچھ معزز شہریوں کا بھی ذکر کیا ہے جن میں سرینگر سے تعلق رکھنے والی صبیہ معراج کا بھی ذکر کیاہے ۔ صبیہ معراج نے سکولوں میں کمپیوٹر تعلیم کو لازمی بنانے ، تعلیمی شعبے اور پیشہ وارانہ تربیت کے سلسلے میں مختلف جدید اِقدامات اُٹھانے کی تجویز پیش کی تھی۔صبیہ معراج نے کہا’’ یہ بہت خوشی کی بات ہے کہ پروگرام ’’ عوام کی آواز‘‘ میں لیفٹیننٹ گورنر منوج سِنہا نے میرے نام کا تذکر کیا ہے اور اِس کووِڈ وبائی دور میں جموںوکشمیر میں نظام تعلیم کے فروغ کے لئے ان کی تجویز کو سراہا گیا ہے۔‘‘ صبیہ معراج اِس وقت گورنمنٹ ہائیر سکینڈری سکول پلپورہ سری نگر میں پڑھا رہی ہے ۔لیفٹیننٹ گورنر نے یہ بھی یقین دہانی کرائی تھی کہ انتظامیہ جامع نقطہ نظر کے ساتھ تعلیم کے میدان میں ترقیاتی تبدیلیاں کرنے ، اس کو مزید ہنر سے ہم آہنگ کرنے، ملازمت اور کاروباری صلاحیت کو آسان بنانے کے لئے پوری طرح پُرعزم ہے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ ان تمام تجاویز پر متعلقہ محکمے ضروری کارروائی کریں گے۔صبیہ معراج نے کہا،’’یہ واقعی بڑی خوشی کی بات ہے کہ لیفٹیننٹ گورنر نے میری عاجزانہ تجویز کا ذکر کیا ہے جس کے لئے میں اُن کا شکریہ ادا کرتی ہوں‘‘۔
 

 محکمہ سیاحت کے ڈائریکٹوریٹ میں ویڈیو کانفرنس سہولت کاافتتاح

سرینگر//سیکریٹری سیاحت و ثقافت سرمد حفیظ نے کشمیرڈویژن کے ٹورآپریٹروں کے آن لائن میٹنگوں اور ویبناروں کی سہولیت کے لئے ڈائریکٹوریٹ ٹوراِزم کشمیر کے دفتر میں ویڈیو کانفرنسنگ سہولیت کا اِفتتاح کیا۔دورانِ اِفتتا ح سیکریٹری نے اِس سہولت کی خوبیوں کے بارے میں بات کی اور کہا کہ اِس سے آن لائن محکمہ جاتی میٹنگوں کو آسان بنانے میں مدد ملے گی اور ٹور آپریٹروں کی ویب ناروںکی سہولیت ہوگی۔بعد میں سیکرٹری نے تمام ڈیولپمنٹ اٹھارٹیوں کے چیف ایگزیکٹیو افسران ، سیاحتی مقامات کے اَفسران ، ریزاٹ افسران ،سیاحتی افسران اور دیگر متعلقین کے ساتھ ایک میٹنگ کی صدارت کی۔اِس موقعہ ناظم سیاحت کشمیر ڈاکٹر جی این ایتو ، جوائنٹ ڈائریکٹر ٹوراِزم کشمیر اور دیگر افسران بھی موجو دتھے۔اِس موقع پر سیکریٹری سیاحت نے تمام سیاحتی مقامات کے سربراہوں سے تمام سیاحتی مقامات کی بہتر دیکھ ریکھ کرنے کی تاکید کی جب کہ ان سیاحتی مقامات کے آس پاس کے نئے ٹریکنگ روٹوں ،کی نشاندی پر زور دیا تاکہ مزید سیاح سائٹ دیکھنے کے علاوہ ایڈونچر ٹورزم کی طرف راغب ہوسکیں۔

حقانی ٹرسٹ کا غلام محی الدین نقیب سے اظہار تعزیت

سرینگر//حقانی میموریل ٹرسٹ نے منہاج الاسلام کے سربراہ غلام محی الدین نقیب کے برادر اکبر عبدالاحد میرکے انتقال پر تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ ٹرسٹ کے سرپرست اعلیٰ سید حمیداللہ حقانی اور جنرل سکریٹری بشیر احمدڈار نے انکی وفات پر تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مرحوم کی وفات ان کیلئے ذاتی صدمہ ہے۔انہوں نے مرحوم کی مغفرت کیلئے دعا کی ہے۔
 
 

سنٹرل کارڈی نیشن کمیٹی کا اظہار تعزیت

سرینگر// میونسپل کنٹریکٹرس یونین نے گزشتہ روز ایک حادثے کے دوران یونین کے سینئر رکن امتیاز احمد رینہ کے برادر فیروز احمد رینہ ساکن زیندار محلہ سرینگر کے انتقال پر صدمے کا اظہار کیا۔فیروز احمد رینہ کا گزشتہ روز کنہ کدل میں پیر پھسل کر دریائے جہلم میں موت واقع ہوئی اور تین روز بعد انکی نعش کو ٹاکن واری قمر واری میں دریائے جہلم سے بازیاب کیا گیا۔میونسپل کنٹریکٹرس یونین(سرتاج) کے صدر اور سینٹرل کنٹریکٹرس کارڈی نیشن کمیٹی کے سیکریٹری ارشد احمد بٹ کی قیادت میں ٹھیکیداروں کی ایک بڑی تعداد نے ان کی نماز جنازہ میں شرکت کی۔