تازہ ترین

واٹس ایپ کا گروپ کالز میں آسانی کیلئے نیا فیچر متعارف | ویڈیو کالز میں لوگوں کی تعداد 4 سے بڑھا کر 8 کردی

سائنس

تاریخ    26 جولائی 2021 (00 : 12 AM)   


ویب ڈیسک
مقبول ترین میسجنگ ایپ 'واٹس ایپ نے دنیا بھر میں ایک دوسرے سے رابطے کے لیے استعمال ہونے کے لیے گروپ کالز کے لیے نیا فیچر متعارف کرادیا ہے کہ اب صارفین کوئی بھی گروپ کال مِس نہیں کرسکیں گے۔واٹس ایپ کی جانب سے گروپ کالز سے متعلق صارفین کے لیے آسانیاں لاتے ہوئے اپنے بلاگ میں کہا گیا کہ ایک ایسے وقت میں جب ہم میں سے بہت سے لوگ ایک دوسرے سے دور ہیں، ایسے میں دوستوں اور اہلخانہ کے ساتھ ایک گروپ کال پر اکٹھے ہونے سے بہتر کوئی اور چیز نہیں ہے۔تاہم اس دوران اس سے زیادہ تکلیف دہ احساس کوئی نہیں جب آپ کسی خاص لمحے سے محروم رہ جائیں۔
واٹس ایپ کی جانب سے بلاگ پوسٹ میں کہا گیا کہ جیسے جیسے گروپ کالز کی مقبولیت میں اضافہ ہورہا ہے، سیکیورٹی اور اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن فراہم کرتے ہوئے صارفین کے تجربے کو بہتر بنانے پر کام کیا جارہا ہے۔میسجنگ ایپلی کیشن کی جانب سے کہا گیا کہ اب کوئی گروپ کال شروع ہو جانے کے بعد بھی صارفین اس کا حصہ بن سکیں گے۔
قابلِ شمولیت کالز (جوائن ایبل کالز) کسی گروپ کال کے آغاز کے ساتھ ہی اس کے جواب دینے کی ضرورت کو کم کر دیتی ہیں اور واٹس ایپ پر گروپ کالنگ کے دوران آمنے سامنے بات چیت جیسی آسانی پیدا کرتی ہیں۔
اب اگر فون کال کے بعد گروپ میں سے کوئی اسے نہیں اٹھا پاتا، تو اب جب وہ چاہیں گروپ کال کا حصہ بن سکتے ہیں۔علاوہ ازیں کال جاری رہتے ہوئے آپ کال ڈراپ-آف کرکے اسے ری-جوائن کرسکتے ہیں۔
صارفین کی آسانی کو مدنظر رکھتے ہوئے واٹس ایپ نے کال انفارمیشن اسکرین بھی تیار کی ہے تاکہ صارفیں یہ دیکھ سکیں کہ کال پر پہلے سے کون موجود ہے اور کسے مدعو کیا گیا ہے لیکن ابھی کال میں شامل نہیں ہوا۔اگر صارف کال کو نظر انداز کرنے کے لیے ’اگنور’ پر کلک کرتے ہیں تو واٹس ایپ میں کالز ٹیب سے، بعد میں بھی شامل ہوسکتے ہیں۔
خیال رہے کہ جوائن ایبل کالز کی سہولت واٹس ایپ کی جانب سے 19 جولائی کو متعارف کرائی گئی ہے اور سلسلے میں واٹس ایپ نے ویڈیو بھی جاری کی ہے۔واٹس ایپ نے ویڈیو کالز میں لوگوں کی تعداد 4 سے بڑھا کر 8 کردی ہے۔اس مقصد کے لیے کال میں شامل تمام افراد کو واٹس ایپ اپ ڈیٹ ورژن کی ضرورت ہوگی۔گروپ ویڈیو کال کے لیے کسی گروپ چیٹ میں جاکر کال کے آئیکون پر کلک کرنا ہوگا یا اضافی افراد کو مینوئلی ایک، ایک کرکے ایڈ کرنا ہوگا۔
واٹس ایپ کے مطابق ویڈیو یا آڈیو کالز اینڈ ٹو اینڈ انکرپٹڈ ہوں گی۔یہ فیچر فی الحال آئی او ایس ڈیوائسز کے لیے متعارف کرایا گیا ہے اور بہت جلد اینڈرائیڈ صارفین بھی اسے استعمال کرسکیں گے۔خیال رہے کہ حال ہی میں گوگل ڈو میں اس حد کو 12 افراد تک بڑھایا گیا تھا جبکہ ہاؤس پارٹی میں 8، اسکائپ اور فیس بک میسنجر کی رومز سروس میں 50 جبکہ زوم میں 100 افراد کو ویڈٰو کال میں شامل کیا جاسکتا ہے۔نئے کورونا وائرس کی وبا کے نتیجے میں ویڈیو کالنگ کی شرح میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے کیونکہ اربوں افراد گھروں تک محدود ہیں۔
فیس بک کی میسجنگ سروسز میں بھی ویڈیو کالنگ کرنے والے افراد کی تعداد میں نمایاں اضافہ ہوا اور یہی وجہ ہے کہ اس نئے فیچر کو متعارف کرایا گیا ہے۔اس سے قبل گزشتہ روز واٹس ایپ نے بتایا تھا کہ اس کے اقدامات کے باعث غلط معلومات پر مبنی پیغامات کو فارورڈ کرنے میں نمایاں کمی ہوئی ہے۔واٹس ایپ نے تین ہفتے قبل اپریل کے آغاز میں کورونا وائرس کی وبا سے متعلق غلط معلومات کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے فارورڈ پیغامات کی حد کو محدود کر دیا تھا۔
واٹس ایپ نے کسی بھی ایسے پیغامات کو فارورڈ کرنے پر پابندی لگادی تھی، جس پیغامات کو 5 بار فارورڈ کیا گیا ہو۔واٹس ایپ نے اعلان کیا تھا کہ کوئی بھی ایسے میسیج کو جو 5 بار فارورڈ ہو چکا ہو، اسے زیادہ سے زیاد مزید ایک بار فارورڈ کیا جاسکے گا۔واٹس ایپ انتظامیہ کا کہنا تھا کہ نئی پابندی کے بعد واٹس ایپ پر فارورڈ ہونے والے پیغامات میں 70 فیصد کمی دیکھی ہوئی ہے۔واٹس ایپ انتظامیہ نے اس عزم کا اعادہ بھی کیا کہ میسیجنگ ایپلی کیشن پلیٹ فارم غلط معلومات کے پھیلاؤ کی حوصلہ شکنی کے لیے ہر ممکن قدم اٹھانے کو تیار ہے۔
 

تازہ ترین