تازہ ترین

سملر بانڈی پورہ جنگلات میں آپریشن | 3جنگجو جاں بحق

فوجی اہلکار شدید زخمی، 4سال بعد علاقے میں دوسری بڑی معرکہ آرائی

تاریخ    25 جولائی 2021 (00 : 01 AM)   


عازم جان
بانڈی پورہ //شمالی کشمیر بانڈی پورہ ضلع کے شوخ بابا سملر جنگل میں 4سال بعد دوبارہ جنگجو مخالف آپریشن شروع کیا گیا ہے جس میں سنیچر شام دیر گئے 3جنگجو جاں بحق جبکہ فوج کا ایک اہلکارشدید طور پر زخمی ہوا۔یہاں وسیع پیمانے پر آپریشن جاری ہے۔پولیس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ انہیں سملر سے ایک کلو میٹر دور شوخ بابا اور کوٹا ستھری کے مابین گھنے جنگل میں جنگجوئوں کی موجودگی کے بارے میں مصدقہ طور پر اطلاع فراہم ہوئی جس کے بعد جمعہ اور سنیچر کی در میانی شب14اور 13آر آر کے علاوہ 3بٹالین سی آر پی ایف کیساتھ پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ نے نالہ ہرل کے اوپر ہر مکھ پہاڑی سلسلے کو گھیرے میں لیا اور مشتبہ مقام کے ارد گرد گھیرا تنگ کیا۔سنیچر کی صبح اس گھنے جنگل میں آپریشن کا آغاز کیا گیا جس کے فوراً بعد طرفین کے درمیان معرکہ آرائی شروع ہوئی۔ہر مکھ پہاڑی سلسلے کے دامن میں واقع شوخ بابا اور کوٹا ستھری نامی دیہات کے لوگوں نے بتایا کہ سنیچر کی صبح 8بجے فائرنگ کا آغاز ہوا جو دن کے 12بجے تک جاری رہا۔سہ پہر کو پولیس نے اس بات کی تصدیق کی کہ فائرنگ کے تبادلے میں 2جنگجو جاں بحق ہوئے جبکہ شام کے وقت تیسرے جنگجو کی ہلاکت کی بھی تصدیق کی گئی۔پولیس کا کہنا ہے کہ  فائرنگ کے تبادلے میں 3فوجی اہلکار زخمی ہوئے تاہم شام دیر گئے جو بیان جاری کیا گیا اس میں صرف ایک اہلکار کے زخمی ہونے کی تصدفیق کی گئی ہے جسے بادامی باغ سرینگر لایا گیا ہے۔شام دیر تک پولیس نے کہا کہ انہیں ابھی تک کسی جنگجو کی لاش سپہرد نہیں کی گئی ہے کیونکہ یہ علاقہ بہت دشوار گذار ہے اور یہاں گھنے جنگل میں آسانی سے نقل و حرکت کرنا ممکن نہیں ہے۔یاد رہے کہ شوخ باباجنگل میں سال2018میں بھی ایک خونین معرکے کے دوران لشکر طیبہ سے وابستہ 5جنگجومارے گئے تھے ،اوریہ چار سال بعداس علاقہ میں دوسرا بڑا جنگجو مخالف آپریشن ہے ۔ سیکورٹی فورسزکوشبہ ہے کہ اس جنگل میں مزید جنگجو چھپے ہوئے ہیں ، لہٰذا آپریشن جاری رکھا گیا تھا۔سملر کا یہ جنگلاتی علاقہ ہر مکھ پہاڑی سلسلے میں پڑتا ہے جس کے دائیں جانب گاندربل کا جنگلاتی علاقہ آتا ہے۔
 

پونچھ کنٹرول لائن پر دھماکہ | فوجی ہلاک ، دوسرا شدید زخمی

نیوز ڈیسک
 
پونچھ//جموں کے پونچھ ضلع میں کنٹرول لائن کے نزدیک باردوی سرنگ دھماکے کے نتیجے میں ایک فوجی اہلکار ہلاک جبکہ دوسرا شدید طور پر زخمی ہو گیا ۔ پونچھ کے کرشنا گھاٹی سیکٹر میں جمعہ کی شام یہ واقعہ پیش آیا۔ ناگنی تکری پوسٹ کے نزدیک زیر زمین بچھائی گئی بارودی سرنگ زور دار دھماکے سے پھٹ گئی جس کی زد میں آکر 2فوجی شدید طور پر زخمی ہوئے۔ یہ دونوں اہلکار معمول کی گشت پر تھے ،جس دوران زیر زمین بچھائی گئی با رودی با سرنگ زور دار دھماکے کے ساتھ پھٹ گئی ۔ سپاہی کرشنا ویدیہ ساکن ہماچل پردیش موقعہ پر ہی ہلاک ہو ا جبکہ سورو کمار شدید طور پر زخمی ہو گیا جس کو علاج و معالجہ کیلئے راجوری منتقل کر دیاگیا ۔ یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ کنٹرول لائن کے نزدیک فوج نے زیر زمین باردی سرنگیں نصب کر رکھی ہیں اس لئے وہاں ایسے حادثے ہوتے رہتے ہیں۔