تازہ ترین

کشمیری پنڈت جموں وکشمیر کی اخلاقیات کا لازمی حصہ

ان کی حساسیت کا احترام کیاجانا چاہئے : رانا

تاریخ    24 جولائی 2021 (00 : 01 AM)   


جموں//کشمیری پنڈتوں کو جموں وکشمیر اور خاص طور پر وادی کے شاندار اخلاقیات کا لازمی قرار دیتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے صوبائی صدر  دیویندر سنگھ رانا نے کہا کہ ان کی حساسیت کا احترام اور وقار کو ہر قیمت پر محفوظ کیا جانا چاہئے۔صوبائی صدر نے وزیر اعظم کے پیکیج کے تحت مقرر کشمیری مہاجر ملازمین کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے کہا "جموں و کشمیر کی تقدیر کو تشکیل دینے میں ساتھی بھائیوں کے ساتھ مل کر کشمیری پنڈتوں کے رو ل کو فراموش نہیںکیاجاسکتا ہے اور نہ ہی قوم اس کی متحمل ہوسکتی ہے‘‘۔انہوں نے کہا کہ پچھلے تین دہائیوں کے دوران کشمیری پنڈت اپنے وجود کا سب سے تکلیف دہ مرحلہ گزار چکے ہیں اور ستم ظریفی یہ ہے کہ معاشرے کے شاندار ماضی سے بے خبر ، ایک نسل اپنے گھروں اور آداب سے دور ہوگئی ہے۔ اسی سلسلے میں ، وادی میں نوجوان لڑکوں اور لڑکیوں کی بھرتی کے لئے وزیر اعظم کے پیکیج کو بہت اہمیت حاصل ہے۔انہوں نے انتظامیہ کے حالیہ فیصلے کے بعدنو بھرتی شدہ نوجوانوںکے معاملات کو سننے کے بعدکہا " بھرتی ہونے والے نیک نیتی کے سفیر ہیںاور انہیں فرقوںکے مابین دوریاں پاٹنے کی ذمہ داری کے ساتھ ساتھ معاشرے اور صوفیوں اور سنتوں کی سرزمین کی قدیم شان کو بحال کرنے اعتماد کے خسارے کو پورا کرنے کی بھی ذمہ داری ہے ہیں" ۔ان کے تشویش کو سانجھا کرتے ہوئے رانا نے کہا کہ اس قسم کے اقدامات اس زمرے کے تحت ملازمین کے لئے نقصان دہ ہوں گے۔ در حقیقت ، انتظامیہ کو ان ملازمین کی سہولت کے لئے ایک قدم اور آگے جانا چاہئے تھا ، جو وادی سے بے گھر ہونے والے افراد کی عزت اور وقار واپسی کی سمت ایک قدم ہے۔ انہوں نے کہا کہ تارکین وطن خصوصاًنوجوانوں کی بتدریج واپسی ان برادریوں کے مابین اخوت اور ہم آہنگی کو قائم کرنے میں بہت آگے بڑھے گی ، جو صدیوں سے ایک ساتھ رہ رہے ہیں۔صوبائی صدر نے وفد کو یقین دلایا کہ اس مسئلے کو پوری سطح پر بھرپور انداز میں اٹھایا جائے گا۔
 

تازہ ترین