تازہ ترین

لوک سبھا میں حزب اختلاف کا ہنگامہ ، کارروائی دوپہر 12 بجے تک ملتوی

تاریخ    24 جولائی 2021 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
نئی دہلی// (یو این آئی) کانگریس ، ترنمول کانگریس ، بائیں بازو اور کچھ دیگر اپوزیشن جماعتوں کی ہنگامہ آرائی کی وجہ سے جمعہ کے روز لوک سبھا میں وقفہ سوالات مکمل نہیں ہوسکا اور کارروائی دوپہر 12 بجے تک ملتوی کرنی پڑی۔ صبح ایوان کی کارروائی جیسے ہی شروع ہوئی تو اپوزیشن ارکان نعرے بازی کرنے لگے۔ اسپیکر اوم برلا نے انہیں چپ کراتے آج سے شروع ہونے والے ٹوکیو اولمپکس کے لئے ہندوستانی دستے کو مبارکباد دی ۔ اس کے بعد انہوں نے وقفہ سوالات کی کارروائی شروع کی۔ اسی دوران اپوزیشن ارکان اپنے ہاتھوں میں تختیاں لیے نعرے بازی کرتے ہوئے اسپیکر کی کرسی کے پاس آ گئے۔ وہ مبینہ جاسوسی کے الزامات ، کسانوں کے مسائل اور دیگر موضوعات پر حکومت سے جواب مانگ رہے تھے اور ’ڈاون ، ڈاون‘ کے نعرے بلند کررہے تھے۔اسپیکر اوم برلا نے ان سے  کووڈ -19 پروٹوکول پر عمل کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ ماسک لگائیں اور اپنی نشستوں پر جائیں۔ شور وغل کے درمیان  ہی  جنگلات، ماحولیات  اور موسمیاتی تبدیلی کے وزیر بھوپندر یادو اور صحت اور خاندانی بہبود کے وزیر منسکھ مانڈویہ نے اپنی وزارتوں سے متعلق سوالات کے جواب دیئے۔ مسٹر مانڈویہ ابھی کووڈ ویکسین سے متعلق سوال کا جواب دے رہے تھے جب اپوزیشن کی نعرہ بازی تیز ہوگئی۔ مسٹر برلا نے ایک بار پھر ان ممبروں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل کی ، جب ان کی اپیل کا کوئی اثرنہیں تو انہوں ںے  صبح 11.16 بجے ایوان کی کاروائی دوپہر 12 بجے تک ملتوی کردی۔