چنائو کا ٹائم فریم نہیں دیا گیا: مظفر بیگ

مسائل کا حل جمہوری نظام میں: الطاف بخاری

تاریخ    25 جون 2021 (00 : 01 AM)   


نیوز ڈیسک
 نئی دہلی //پیپلز کانفرنس کے مظفر حسین بیگ نے کہا کہ حکومتی فریق نے آگاہ کیا ہے کہ جموں و کشمیر میں اسمبلی انتخابات جاری حد بندی کے عمل کی تکمیل کے بعد ہوں گے۔انہوں نے کہا ، "ہمیں بتایا گیا کہ حد بندی کا عمل پہلے مکمل کرلیا جائے گا اور اس کے بعد جموں و کشمیر میں اسمبلی انتخابات کے انعقاد پر زور دیا جائے گا۔"تاہم ، انہوں نے کہا ، انتخابات کے انعقاد کے بارے میں کوئی ٹائم فریم نہیں دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا ، "تقریبا  ہر ایک نے میٹنگ میں جموں وکشمیر کے ریاست کی بحالی کے مطالبے کو اٹھایا ،" انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعظم نے سیاسی رہنماؤں کے ذریعہ اٹھائے جانے والے ہر مسئلے کو غور سے سنا۔اپنی پارٹی کے سربراہ سید الطاف بخاری نے میٹنگ کے دوران کہا کہ دفعہ370 اور 35Aکی عدالت عظمیٰ میں جلد سماعت، ریاستی درجہ کی بحالی، میرٹ پر حد بندی، جموں وکشمیر کے شہریوںکواراضی ، نوکریوں اور قدرتی وسائل کو آئینی تحفظ، نوجوانوں کے لئے پالیسی، بہتر بین علاقائی رابطہ اور جلد اسمبلی انتخابات کرانے کی ضرورت ہے کیونکہ جموں وکشمیر کے مسائل کا حل جمہوری نظام میں مضمر ہے۔پروفیسر بھیم سنگھ نے آئین ساز اسمبلی کے قیام پر زور دیتے ہوئے کہا کہ دفعہ 370کے خاتمے کی تصدیق آئین ساز اسمبلی کے ذریعہ کرانا لازمی ہے۔تب تک یہ عمل ادھورا رہے گا۔ انہوں نے بھی جموں کشمیر میں اسمبلی انتخابات فوراً کرنے کی وکالت کی۔
 

تازہ ترین