تازہ ترین

اجتماعی کوششوں کے ثمرآورنتائج برآمد

کووڈ19 مثبت معاملات میں نمایاں کمی

تاریخ    19 جون 2021 (00 : 01 AM)   


اننت ناگ اورکپوارہ کے ڈپٹی کمشنروں کی میڈیا بریفننگ 

کپواڑہ//اننت ناگ اور کپوارہ اضلاع میں کووِڈ- 19مثبت معاملات کے سامنے آنے میں نمایاں کمی ہوئی ہے جبکہ صحت یاب ہونے والے مریضوں کی شرح میں بھی اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔ضلع ترقیاتی کمشنر اننت ناگ ڈاکٹر پیوش سنگلا نے کہا کہ ضلع میں کووِڈ۔19 صورتحا ل اور شفایابی کی شرح  بتدریج بہتر ہو رہی ہے  اور  میں مثبت معاملات  کے سامنے آنے میں نمایاں کمی اوراور صحتیابی کی شرح میںگزشتہ سات دِنوں کے دوران اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے۔ضلع ترقیاتی کمشنر اننت ناگ نے کہا کہ کووِڈ مناسب سی اے بی اور ایس او پیز انفیکشن میں اِضافے کو روکنے کے لئے بہت ضروری ہیںتاکہ کووِڈ وائرس کے پھیلائو پر مزید قابو پایا جاسکے۔ڈاکٹر سنگلا نے تفصیلات دیتے ہوئے کہا کہ ضلع میں صحتیابی کی شرح مزید 95 فیصد تک بڑھ گئی ہے جبکہ اِس عرصے میں مثبت معاملات کی شرح 3 فیصد سے بھی کم ہے ۔اُنہوں نے ویکسی نیشن کے بارے میں جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ اَب تک زائد اَز 2.5 لاکھ ٹیکے 45 برس عمر سے زیادہ ترجیحی اور 18 برس عمر سے 44 برس عمر تک ہائی رِسک/ کمزور گروپوں کو لگائے گئے ہیں ۔ اُنہوں نے مزیدکہا کہ آنے والے ہفتوں میں ہدف آبادی کی فیصد کو حاصل کرنے کے لئے ٹیکے لگانے کی کوششیں تیز کی جار ہی ہے۔ڈی سی نے کہا کہ سینئر اَفسران کی نگرانی میں ٹیکے لگانے کے لئے گھر گھر جا کر ٹیکہ کاری مہم کو تیز کی گئی ہے ۔ اس کے علاوہ ضلع بھر میں نمونے لینے میں تیزی لا کر یومیہ بنیاد پر 2200 سے زیادہ ٹیسٹ کئے جاتے ہیں۔ڈاکٹر پیوش سنگلا نے اہل لوگوں سے اپیل کی کہ وہ کووِڈ حفاظتی ٹیکے جلد از جلد لگائیں ۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے صورتحال پرقابو پانے کے لئے لائن ڈیپارٹمنٹ اور تمام شراکت داروں کی کاوشوں کا شکریہ اَدا کرتے ہوئے اُن پر زور دیا کہ وہ توجہ مرکوز اور پُرعزم رہیں تاکہ نتائج کو مستحکم کیا جاسکے۔ اس دوران ،اِن اضلاع میں کورونا سے بچائو کیلئے ٹیکہ کاری مہم بھی سرعت سے جاری ہے۔ان باتوں کا اظہار ان اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں نے میڈیا سے وابستہ افراد کو جانکاری دیتے ہوئے کیا۔ضلع ترقیاتی کمشنر کپواڑہ اِمام الدین نے کہا کہ ضلع اِنتظامیہ کووِڈ ۔19 صورتحال پر قابو پانے کے لئے محکمہ صحت ، پولیس ، مجسٹریٹ اور محکمہ تعلیم سمیت مختلف محکموں کی شمولیت کے ساتھ اِجتماعی طور پرکام کر رہی ہے ۔ اُنہوں نے ضلع میں روزانہ مثبت معاملات میںزبر دست کمی پر اِطمینان کا اِظہار کیا۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے تفصیلات دیتے ہوئے کہا کہ صحتیاب معاملات کی شرح میں 94.01 فیصد اِضافہ ہوا ہے جبکہ ضلع میں مثبت معاملات کی شرح 2.94 فیصد ہو گئی ہے ۔ اُنہوں نے محکمہ صحت کے اَفسران اور کووِڈ۔19 میں شامل تمام اَفراد کو اُن کی محنت اور اچھے نتائج برآمد ہونے پر مبارک باد دی ہے ۔اُنہوں نے جانکاری دیتے ہوئے کہا کہ ضلع میں مجموعی طور پر مثبت معاملات کی تعداد13,504 ہے جبکہ شفایاب مریضوں کی تعداد 12,696 ہے ۔ اُنہوں نے کہا کہ میں ضلع کووِڈ۔19 وَبائی بیماری سے 157 اَفراد کی موت واقع ہوئی ہے ۔ڈپٹی کمشنر نے ضلع کپواڑہ کے عوام سے اپیل کی کہ وہ کووِڈ۔19 کے وبائی بیماری کے خلاف بروقت کووِڈ حفاظتی ٹیکے لگائیںاور کووِڈ رہنما اَصولوں اور ایس او پیز پر من و عن سختی سے عمل پیرا رہیں۔اُنہوں نے میڈیا اَفراد سے بھی اپیل کی کہ وہ ضلع میں کووِڈ پر قابو پانے کی کوششوں کے ضمن میں مثبت جذبات کو فروغ دیں ۔
 
 
 

کووِڈ- 19گائیڈ لائنز کی خلاف ورزی

۔3911افراد سے5,64,570روپے جرمانہ وصول

سرینگر//کورونا وائرس کی دوسری لہر کا مقابلہ کرنے کیلئے اوراس متعدی بیماری کو پھیلنے سے روکنے کیلئے جاری رہنماخطوط کی خلاف ورزی کرنے کی پاداش میں پولیس نے وادی بھر میں3911افراد سے5,64,570روپے جرمانہ وصول کیا۔اس کے علاوہ کووِڈ- 19گائیڈ لائنز کی خلاف ورزی کرنے پر77گاڑیاں بھی ضبط کی گئیں۔کووِڈ گائیڈ لائنز کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف پولیس کی مہم جاری ہے تاکہ وادی میں  کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکا جائے۔اپنے ایک بیان میں پولیس نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کووِڈ رہنماخطوط کی پاسداری کرکے ماسک پہنے ،سماجی دوریوں پرقائم رہتے ہوئے اپنی صحت صفائی کا خاص رکھیں،تاکہ کورونا وائرس بیماری کو مزیدپھیلنے سے روکا جائے۔
 

 

تازہ ترین