تازہ ترین

پرنسپل سیکریٹری سائنس وٹیکنالوجی کا اننت ناگ و گاندربل کادورہ

۔ 111میگاواٹ صلاحیت کے 39بجلی پروجیکٹوں کو منظوری

تاریخ    15 جون 2021 (00 : 01 AM)   


 جموں//انجینئروں کی ایک ٹیم نے پرنسپل سیکرٹری سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ آلوک کمار اور چیف ایگزیکٹیو آفیسر جموںوکشمیر اَنرجی ڈیولپمنٹ ایجنسی ( جے اے کے اِی ڈی اے ) ببیلا رکوال کی سربراہی میں چھوٹے ہائیڈروپروجیکٹوں( ایس ایچ پی ) کا دورہ کر کے ان کا معائینہ کیا ۔جے اے کے اِی ڈی اے نے 39 پاور ہائی سائٹس کو 111 میگاواٹ کی مجموعی صلاحیت کے ساتھ آزادانہ بجلی پروڈیوسرس( آئی پی پی موڈ ) کے ذریعے ترقی کے لئے الاٹ کیا ہے اور اَب تک 4 ایس ایچ پی سائٹس کو 15.75 میگاواٹ کا کمیشن جاری کیا ہے۔ٹیم نے میسرزغوثیہ روڈ کنسٹرکشن کمپنی کے ذریعے تیار کردہ 2میگاواٹ صلاحیت رائل ایس ایچ پی، میسرز ماس این ارگی پرائیویٹ لمٹیڈ کے ذریعے تیار کردہ 5 میگاواٹ کے ایس ایچ پی بالٹکولن،گاندربل میں میسرز ایس پاور یوٹیلی ٹیس پرائیویٹ لمٹیڈ کے ذریعے 6 میگاواٹ کا ایس ایچ پی بالٹکولن تیار کیا جارہا ہے اور اننت ناگ میں میسرز او 2 زیڈ ٹریڈنگ پرائیویٹ لمٹیڈ کے ذریعے تیار کردہ 5 میگاواٹ صلاحیت کا ایس ایس پی اِچھو کوکر ناگ کا دورہ کیا۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ گزشتہ برس کے دوران اچھو اور بالٹکولن میں دو ایس ایچ پی سائٹس ،مئی 2021ء میں 2میگاواٹ کے ایس ایچ پی رائیل اور گاندربل ضلع کے بالٹکولن میں 6 میگاواٹ کے ایس ایچ پی کو رواں مالی سال کے اختتام تک شروع کرنے کی تجویز پیش کی گئی ہے۔اِن تینوں کمیشنڈ ایس ایچ پیز کی مجموعی گنجائش 12 میگاواٹ ہے اور اس کی مجموعی سالانہ اَنرجی پیداوار تقریباً  63 ملین یونٹ ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ ایس ایچ پیز کے کمیشن نے روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے سلسلے میں نہ صرف مقامی لوگوں کو فائدہ پہنچایا بلکہ جموںوکشمیر کے دُور دراز علاقوں میں چھوٹے پن بجلی کی صلاحیتوں کو اِستعمال کرنے میں بھی اَپنا رول اَدا کیا ہے۔دورے کے دوران پرنسپل سیکرٹری نے سائٹوں پر تعینات ورکروں اور اِنجینئروں سے بات چیت کی۔اُنہوں نے پرنسپل سیکرٹری کو جانکاری دی کہ اِن ہائیڈرو پاور پلانٹس کی ترقی کے دوران بڑے چیلنجوں کا سامنا تھا لیکن جے اے کے اِی ڈی اے کی اِنجینئرنگ ٹیم کی کاوشوں اور تعاون سے کامیابی سے کام شروع کیا گیا۔بعد میں پرنسپل سیکرٹری نے ڈولپروں کے ساتھ جموںوکشمیر میں سمال ہائیڈرو پاور سیکٹر کی ترقی میں آئی پی پیز کو درپیش مسائل اور رُکاوٹوں کے سلسلے میں ایک میٹنگ طلب کی ۔اُنہوں نے آئی پی پیز کو اِس ضمن میں حکومت کی طرف سے ہر ممکن تعاون کو یقینی دہانی کرائی۔
 

تازہ ترین