نڈال کو شکست دے کر جوکووچ فائنل میں، خطابی مقابلہ ستسپاس سے

تاریخ    13 جون 2021 (38 : 12 AM)   


یو این آئی
پیرس/ دنیا کے نمبر ایک کھلاڑی سربیا کے نوواک جوکووچ نے 13 مرتبہ کے چیمپئن اسپین کے رافیل نڈال کو چار گھنٹے 22 منٹ تک کھیلے گئے مقابلے میں تین۔چھ، چھ۔تین، سات۔ چھ(چار)، چھ ۔تین سے شکست دے کر سال کے دوسرے گرینڈ سلیم فرنچ اوپن کے خطابی مقابلے میں داخلہ حاصل کرلیا جہاں ان کا سامنا پانچویں سیڈ یونان کے ستیفانوس ستسپاس سے اتوار کے روز ہوگا۔ جوکووچ نے اس جیت کے بعد کورٹ پر کہا ، یہ یقینی طور پر پیرس میں کھیلے گئے میرے بہترین میچوں میں سے ایک ہے ۔ جوکووچ نے میچ میں50 ونرس لگائے اور 37 غیرضروری غلطیاں کیں جبکہ نڈال نے 48 ونرس لگائے اور 55 غلطیاں کیں۔اس شکست کے بعد نڈال کا ریکارڈ 21 ویں گرینڈ سلیم جیتنے کا خواب ٹوٹ گیا جبکہ جوکووچ کیریر کا دوسرا گرینڈ سلیم جیتنے اور 19 ویں میجر خطاب سے ایک جیت دور ہیں۔ سوئزرلینڈ کے راجر فیڈرر اور نڈال کے نام 20,20 گرینڈ سلیم خطاب کا عالمی ریکارڈ ہے ۔ جوکووچ نے نڈال کے خلاف گذشتہ سال کے فائنل میں صرف سات گیم میں کامیابی حاصل کی تھی لیکن اس سال نڈال کے پاس جوکووچ کی آل راؤنڈ کارکردگی کا کوئی جواب نہیں تھا۔یہ میچ کورٹ فلپ چیٹریر میں کھیلا گیا جس میں شائقین کو پورے میچ کے لئے رکنے کی اجازت دی گئی جبکہ فرانس میں رات کا کرفیو لگا ہوا ہے ۔ جوکووچ نے میچ کے بعد کہا ، "آپ خود سے کہتے ہیں کہ کوئی دباؤ نہیں ہے لیکن یقین کریں کہ بہت دباؤ تھا۔ان دونوں عظیم کھلاڑیوں کے بیچ کھیلے گئے 57 میچوں میں سے 50 میچ پہلا سیٹ جیتنے والے کھلاڑی نے جیتے ہیں ، لیکن جوکووچ نے اس بار اس کہانی کو الٹ دیا اور چھٹی بار اس کلے کورٹ سلیم کے فائنل میں جگہ بنالی۔جوکووچ نے میچ کے بعد کہا ، "میچ شروع میں پچھلے سال کے فائنل کی طرح لگ رہا تھا لیکن میں پہلے ہی سیٹ میں خود پر اعتماد پیدا کرنے میں کامیاب رہا۔ اگرچہ میں سیٹ تین ۔چھ سے ہار گیا لیکن مجھے اپنا کھیل مل گیا تھا۔تیسرا سیٹ میچ میں بہت اہم ثابت ہوا اور دونوں سپر اسٹار نے اپنی پوری طاقت اس میچ میں لگا دی ۔ دونوں نے زبردست شاٹس کھیلے ، چار سروس بریک اور 14 بریک پوائنٹس دیکھنے کو ملے ۔ یہ پچھلے کچھ سالوں میں ایک بہترین سیٹ تھا۔جوکووچ نے پانچ۔چار ، 30/0 کے اسکور پر میچ کے لئے سروس کرنے کا موقع گنوایا جب وہ اپنا فارہینڈ نیٹ میں مار بیٹھے ۔ لیکن سربیائی کھلاڑی نے بہترین ڈراپ شاٹ سے پانچ۔چھ کے اسکور پر سیٹ پوائنٹ بچایا ۔نڈال نے چوتھے سیٹ میں شروعاتی بریک حاصل کیا لیکن جوکووچ نے آخری چھ گیم جیت کر فائنل میں داخلہ حاصل کرلیا۔ جوکووچ نے کہا کہ حالانکہ اس مرتبہ میری شروعات اچھی نہیں رہی لیکن میں زیادہ گھبرایا ہوا نہیں تھا کیونکہ مجھے محسوس ہورہا تھا کہ میں گیند پر اچھی طرح سے حملے کررہا ہوں۔ دونوں کھلاڑی زبردست کھیل رہے تھے ۔ سابق نمبر ایک برطانیہ کے اینڈی مرے نے ٹویٹ کیا، ‘‘ آپ اس سے بہترین کلے کورٹ ٹینس نہیں کھیل سکتے ۔ یہ بہترین ہے ۔ ایک دیگر سابق نمبر ایک کھلاڑہی اینڈی روڈک نے کہا کہ ، اس وقت تک یہ میرا دیکھا ہوا سب سے بہترین میچ ہے ۔ جوکووچ نے نڈال کے خلاف اپنے کیریئر کا ریکارڈ28-30پہنچا دیا ہے ۔ جوکووچ کے فائنل میں ستسپاس نے پہلے سیمی فائنل میں چھٹی سیڈ الیگزنڈر زیوریو کو 37 منٹ تک کھیلے گئے مقابلے میں -3--3 ، -6-، ، -6--6 ، -3--3 سے شکست دی۔ سربیا کے کھلاڑی کے پاس 22 سالہ سسیپاس کے خلاف پانچ۔دو کا کیریئر ریکارڈ ہے ۔ جوکووچ نے گذشتہ سال سیمی فائنل میں ستسپاس کو پانچ سیٹوں میں شکست دی تھی۔یواین آئی۔ 
 

تازہ ترین