محکمہ ہینڈی کرافٹس وہینڈلوم کے اہتمام سے ویبنار

تاریخ    9 جون 2021 (00 : 01 AM)   


سرینگر//پشمینہ تجارت کودرپیش مسائل پرتبادلہ خیال کرنے کیلئے محکمہ ہینڈی کرافٹس وہینڈلوم نے ایک ویبنار کااہتمام کیا۔ڈائریکٹر ہینڈی کرافٹس وہینڈلوم نے افتتاحی تقریب پر پشمینہ صنعت کو درپیش مسائل خاص طور سے ڈیزائنگ کے پیمانوں سے متعلق امور کو اُجاگر کیااورکہا کہ ڈائزننگ نے موجودہ عالمی تناظر میں خاص اہمیت حاصل کی ہے ۔ڈائریکٹر ہینڈی کرافٹس وہینڈلوم نے شرکاء کو حکومت کے اُس حکم کے متعلق جانکاری دی جس کے تحت جی آئی ٹیگنگ اشیاء کی کم سے کم قیمت طے کرنے کیلئے ایک کمیٹی قائم کی گئی ہے اور کارخانہ دار اسکیم جو جلد ہی شروع کی جائے گی۔ اس موقعہ پروجاہت حسین راتھرایسوسیٹ پروفیسر پرل اکاڈمی آف فیشن نئی دہلی،نے ڈیزائنگ کی تاریخی پس منظر سے متعلق تفصیلی جانکاری دی اورپشمینہ سیکٹر میں موجودہ قومی اور بین الاقوامی رجحانات پر تبادلہ خیال کیااورنئے اور پرانے ڈیزائینوں پرزوردیا۔اس موقعہ پر ایکسپورٹراور ’می اینڈ کشمیر‘کے بانی مجتبیٰ قادری نے پشمینہ مصنوعات کی پیکنگ خاص طور سے انہیں ماحول دوست بنانے سے متعلق بات کی ۔انہوں نے مزید کہا کہ کووِڈ کے بعد ، رجحان فاسٹ فیشن سے سلو فیشن میں تبدیل ہورہا ہے اور اس منظر نامے میں ہاتھ سے بنے اور تیار کئے گئے مصنوعات کو بازارمیں ہاتھوں ہاتھ شرفاء اوراعلیٰ طبقے میں فروخت کیا جاسکتا ہے۔اس ویبنار میں اسکول آف ڈیزائن سرینگر کی چیف ڈیزائنرامینہ اسد نے ڈیزائن ڈیولپمنٹ بورڈ قائم کرنے کی تجویز پیش کی۔INTACHجموں کشمیرچپٹر کے کنوینر سلیم بیگ نے ویب نار کے دوران پشمینہ صنعت کی ترقی میں درپیش رکاوٹوں کو دور کرنے پرزوردیا۔
 

تازہ ترین