اولمپک تمغہ یافتہ سشیل کمارقتل کے معاملے میں فرار

تاریخ    10 مئی 2021 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
نئی دہلی//چھترسال اسٹیڈیم میں جونیئر نیشنل چیمپئن ساگر پہلوان کے قتل کے معاملے میں اولمپک تمغہ فاتح سشیل کمار کا ابھی تک کچھ پتہ نہیں چل سکاہے ۔ دہلی پولیس کی درجن بھر سے زیادہ ٹیمیں پہلوان کو پانچ ریاستوں میں تلاش کررہی ہیں۔ دہلی پولیس کا کہنا ہے کہ ان کی ایک ٹیم نے جمعہ کے روز سشیل کے گرو اور سسر ستپال مہاراج سے بات چیت لیکن ستپال مہاراج نے سشیل کے بارے میں کوئی بھی معلومات فراہم کرنے سے انکار کردیا ہے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ یا دو روز میں سشیل کمار پولیس کے سامنے پیش ہوسکتے ہیں ۔ معاملے کی جانچ کررہے پولیس افسر نے بتایا کہ دہلی کی 12 سے زائد ٹیمیں دہلی، این سی آر، ہریانہ، راجستھان، یو پی اور اتراکھنڈ میں چھاپہ ماری کررہی ہے ۔ سشیل کی آخری لوکیشن ہریدوار سے ملی تھی۔ اس کے بعد سے لگاتار ان کا فون بند آرہا ہے ۔ دوسری طرف پولیس نے گرفتار ملزم پرنس دلال سے پوچھ گچھ کے بعد ان دن واقعہ میں موجود 17 نوجوانوں کی ایک لسٹ تیار کی ہے ۔ اس کی بنیاد پر پولیس سبھی کو تلاش کررہی ہے ۔ پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ سبھی کے موبائل فون بند آرہے ہیں۔ ابھی تک کی جانچ میں زمین کے پیچھے تنازعہ کی بات سامنے آرہی ہے ۔ واضح رہے کہ منگل دیر رات چھترسال اسٹیڈیم کی پارکنگ میں پہلوانوں کے دو گروپوں میں جھگڑا ہوا تھا جس میں تین پہلوان ساگر، سونو اور امت زخمی ہوگئے تھے ۔ علاج کے دوران ساگر کی موت ہوگئی تھی۔ اس معاملے میں سشیل کمار اور اس کے ساتھیوں کا نام سامنے آیا تھا۔ تبھی سے پولیس سشیل اور اس کے ساتھیوں کو تلاش کررہی ہے ۔
 

تازہ ترین