تازہ ترین

مائو نوازوں کی قید سے آزادکمانڈو کا جموں میں شاندار استقبال

تاریخ    17 اپریل 2021 (00 : 01 AM)   


یو این آئی
جموں// چھتیس گڑھ کے بیجا پور میں اغوا کے بعد 8 اپریل کو رہا کئے جانے والے سی آر پی ایف کی کوبرا بٹالین کے کمانڈو راکیشور سنگھ منہاس جمعہ کو اپنے آبائی شہر جموں پہنچے جہاں ان کا شاندار استقبال کیا گیا۔راکیشور سنگھ نے نامہ نگاروں سے گفتگو میں کہا کہ انہیں بھروسہ نہیں تھا کہ مائو نواز انہیں زندہ واپس جانے دیں گے ۔انہوں نے کہا’’میں بہت خوش ہوں کہ اپنے خاندان سے مل پایا ہوں۔ مجھے گھر والوں کی یاد آتی تھی لیکن یہ بھروسہ نہیں تھا کہ مجھے چھوڑ دیا جائے گا‘‘۔سی آر پی ایف کمانڈو نے کہا کہ مائو نوازوں نے انہیں اغوا کرنے کے بعد تشدد کا نشانہ نہیں بنایا۔ان کا کہنا تھا’’جن لوگوں نے مجھے اغوا کیا انہوں نے مجھے تشدد کا نشانہ نہیں بنایا، جتنے بھی سی آر پی ایف کے جوان شہید ہوئے ہیں وہ سب بہادر تھے ‘‘۔راکیشور سنگھ نے بتایا کہ جس 'عدالت' کے دوران مجھے رہا کیا گیا میں اس کے شرکاء عوام اور میڈیا اہلکاروں کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔انہوں نے کہا’میں عدالت میں موجود لوگوں اور میڈیا اہلکاروں کا شکریہ ادا کرنا چاہوں گا۔ انہوں نے مجھے آزاد کرانے کی بہت کوششیں کیں‘۔سی آر پی ایف کمانڈو کی بیوی نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ یہ ہمارے لئے انتہائی خوشی کا دن ہے ۔ان کا مزید کہنا تھا’’'میں بہت خوش ہوں، سب کی کوششوں کی وجہ سے ہمیں یہ خوشی کا دن دیکھنے کو ملا ہے ‘‘۔بتا دیں کہ راکیشور سنگھ منہاس کو مائو نوازوں نے 3 اپریل کو چھتیس گڑھ کے بیجاپور میں ایک تصادم کے دوران اغوا کیا تھا۔وہ چھتیس گڑھ کے نکسل متاثرہ سکما اور بیجاپور ضلع کے سرحدی علاقہ میں ایک تصادم کے بعد لاپتہ ہو گئے تھے ۔ اس تصادم میں کم از کم 22 سکیورٹی اہلکار ہلاک ہوئے تھے ۔
 

تازہ ترین